Chitral Times

Nov 19, 2019

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

  • گزشتہ دن گرم چشمہ روڈ پرقتل ہونے والے نوجوان کے بیوی کی لاش بھی برآمد

    October 30, 2019 at 10:21 pm

    چترال ( نمائندہ چترال ٹائمز) گذشتہ رات شالی کے مقام پر قتل ہونے والے گرم چشمہ ایژ کے رہائشی نوجوان وقار احمد عرف شہنشاہ کی بیوی کی لاش بھی بر آمد ہو گئی ہے ۔ جس کی تلاش گذشتہ دو دنوں سے جاری تھی ۔ چترال پولیس نے خاتون کی لاش کو بازیاب کرنے کے بعد پوسٹ مارٹم کیلئے ڈی ایچ کیو ہسپتال چترال پہنچا دیا ہے ۔ جہان پوسٹ مارٹم کے بعد اسے سپرد خاک کیا جائے گا ۔ جبکہ ان کے مقتول شوہر شہنشاہ کو گذشتہ روز سپرد خاک کیا گیا تھا ۔

    واضح رہے۔ کہ ایک سال پہلے گرم چشمہ کے مقام ایژ سے تعلق رکھنے والے نوجوان وقار احمد عرف شہنشاہ نے دیر کوہستان کی لڑکی سے پسند کی شادی کی تھی ۔ اور وہ اپنی بیوی کو لے کر اپنے گھر ایژ گرم چشمہ میں ہی زندگی گزار رہا تھا۔ کہ کچھ عرصہ پہلے سوات سے تعلق رکھنے والا ایک شخص اپنی فیملی کے ساتھ گرم چشمہ میں رہائش اختیار کی ۔ جس کے ساتھ شہنشاہ اور اُس کی فیملی کے تعلقات بڑھے ۔ اور دوستی کی صورت اختیار کی ۔ گذشتہ روز شہنشاہ کی حاملہ بیوی کو چترال شہر کے ہسپتال میں چیک اپ کی ضرورت پڑی ۔تو دونوں فیملی کار میں گرم چشمہ سے چترال آئے ۔ لیکن شام کو واپس گھر نہیں پہنچے۔ تو وقار احمد عرف شہنشاہ کے گھر والوں نے موبائل پر ان سے رابطہ کرنے کی کوشش کی ۔ مگر موبائل بند ہونے کی وجہ سے کسی سے بھی رابطہ نہیں ہو سکا ۔ اور اگلی صبح شہنشاہ کی لاش شالی گول کے احاطے میں سڑک کے قریب ملی تھی ۔ لیکن اس کی لاپتہ بیوی تسلیم بی بی کے بارے میں یہ شبہ ظاہر کیا جارہا تھا ۔ کہ شاید قاتل گینگ اسے ساتھ لے گئے ہوں ۔ تاہم ان کی تلاش جارہی تھی ۔ کہ بدھ کے روزانکی لاش گرم چشمہ روڈ پر کھانسغیر کے احاطے میں ملی ۔ جسے پولیس نے اپنی تحویل میں لے کر ڈی ایچ کیو ہسپتال چترال پہنچا دیا ہے ۔ جہاں صبح ان کو پوسٹ مارٹم کرنے کے بعد گرم چشمہ میں سپرد خاک کیا جائے گا ۔ چترال پولیس نے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش اورملزمان کی تلاش شروع کر دی ہے ۔
    .

    دریں اثنا سابق امیدوار صوبائی اسمبلی چترال امیراللہ نے وزیراعلیٰ‌خیبرپختونخوا، چیف جسٹس پشاورہائی کورٹ، آئی جی پی خیبرپختونخوا سے اپیل کی ہے کہ گرم چشمہ ایژ سے تعلق رکھنے والے نواجون کے قتل کا فوری نوٹس لیا جائے. اوراس دھرے قتل میں‌ملوث افراد کو کیفرکردار تک پہنچایا جائےتاکہ متاثرہ خاندان کو فوری انصاف مل سکے. ایک اخباری بیان میں انھوں‌نے بتایا کہ گزشتہ سال ایژ گرم چشمہ سے تعلق رکھنے والے نوجوان نے دیرکوہستان سے پسند کی شادی کی تھی جس میں‌ لڑکی کی رائے بھی سو فیصد شامل تھی تب جاکے لڑکی ایک نوجوان کے ساتھ بھاگ کرکورٹ میرج کرتی ہے . اورپسند کی شادی کوئی نئی بات نہیں، یہ رواج ہمارے ملک اورعلاقے میں عام ہے . جس کی سزا میاں‌بیوی کو قتل کرکے نہیں‌دیا جاسکتا. انھوں نے حکام بالا سے فوری نوٹس لینے اورمتاثرہ خاندان کو انصاف دلوانے کا مطالنبہ کیاہے .

  • error: Content is protected !!