Chitral Times

Apr 16, 2024

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

سنو لیپرڈ فاؤنڈیشن کے زیراہتمام جانوروں کی صحت اور پیداوار کے حوالے سے چترال ، گلگت بلتستان اور کشمیر کےکمیونٹی ممبران  کے لئے سرٹیفکیٹ کورس کا انعقاد کیا گیا

شیئر کریں:

سنو لیپرڈ فاؤنڈیشن کے زیراہتمام جانوروں کی صحت اور پیداوار کے حوالے سے چترال ، گلگت بلتستان اور کشمیر کےکمیونٹی ممبران  کے لئے سرٹیفکیٹ کورس کا انعقاد کیا گیا

اسلام آباد (چترال ٹائمزرپورٹ ) سنو لیپرڈ فاؤنڈیشن نے پاکستان ایگریکلچرل ریسرچ کونسل اینیمل سائنسز ڈویژن کے تعاون سے گلگت بلتستان، آزاد جموں و کشمیر اور چترال کے تیس (٣٠) مقامی افراد کو جدید سائنسی بنیادوں پر تربیت فراہم کی. چودہ روزہ رہائشی تربیتی پروگرام میں جانوروں کی صحت اور پیداوار کے حوالے سرٹیفکیٹ کورس کا انعقاد کیا گیا جس میں برفانی چیتے کے تحفظ کے لئے کام کرنے والے دور دراز علاقوں سے کمیونٹی ممبران شریک ہوئے۔

ورکشاپ کا مقصد دیہی معیشت میں لائیو سٹاک کے اہم کردار پر توجہ دینا تھا جس میں زراعت میں ترقی کے لئے جدید سانسی طریقوں کا استعمال، مال مویشی کا بہتر دیکھ بھال، ویکسینیشن اور ملکی اور مقامی سطح پر برامدات کو بڑھانے کے طریقے سکھائے گئے۔ لائیو سٹاک کے ماہرین نے شرکاء کی استعداد کار کو بڑھاتے ہوئے کمیونٹی لائیوسٹاک ویکسینیٹر کے طور پر بھی تیار کیا جس کا مقصد مویشیوں کی اموات کو کم کرنا، سماجی اقتصادی حالات کو بہتر بنانا اور جنگلی حیات کی نسلوں میں بیماریوں کی منتقلی کو روکنا ہے۔

مہمان خصوصی ثمر حسین خان کنزرویٹر وائلڈ لائف وزارت موسمیاتی تبدیلی نے اپنے خطاب میں اس اقدام کو سراہتے ہوئے کہا کہ کمیونٹی لائیوسٹاک ویکسینیٹر کے طور پر کمیونٹی ممبران کو تربیت دینا قابل ستائش کام ہے جس سے ملک کے دور دراز پہاڑی علاقوں میں رہنے والے مقامی افراد کو مال مویشیوں کی اموات کو روکنے کے ساتھ ساتھ اس سے وہاں کے لوگوں کی زندگیوں میں بری حد تک بہتری آئے گی۔

ڈاکٹر جعفر الدین ڈپٹی ڈائریکٹر ایس ایل ایف نے شرکاء اور مہمانوں کا خیرمقدم کرتے ہوئے پائیدار معاشی اور حیاتیاتی تنوع کے تحفظ کے لیے برفانی چیتے کے تحفظ کے علاقوں میں مقامی کمیونٹیز کو بااختیار بنانے کی اہمیت کو اجاگر کیا۔ انھوں نے کہا کہ ایس ایل ایف گزشتہ سولہ سالوں سے گلگت بلتستان، آزاد جموں و کشمیر اور چترال کے پہاڑی علاقوں میں رہنے والے لوگوں کی مختلف خدمات فراہم کرنے میں سرگرم عمل ہے. انھوں نے ان علاقوں کے لوگوں کو بھی سراہا جو ہمیشہ جنگل اور جنگلی حیات کے تحفظ کے لئے سرکاری اور غیر سرکاری اداروں سے مکمل تعاون کر رہے ہیں.
chitraltimes snowleopard certification course on livestock for gb chitral and kashmir 2

ڈاکٹر سید محمود ناصر سینئر ماہر ماحولیات و بشریات اور سابق انسپکٹر جنرل آف فارسٹ نے دیہی ترقی اور ماحولیاتی نظام کے استحکام میں مویشیوں کی صحت اور پیداوار کے اہم کردار کا ذکر کیا۔ انھوں نے کہا کہ ملکی ترقی کے لئے جدید بنیادوں پر لائیو سٹاک کی پیداوار کو بڑھانا ہوگا۔ انھوں نے کامیابی سے ٹریننگ حاصل کرنے والے شرکاء کو مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ اب آپ کے کاندھوں پر ایک بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ جو کچھ آپ نے اس ٹریننگ میں سیکھا ہے اسے آپ اپنے علاقے تک منتقل کریں اور وہاں ضرورت مند مقامی افراد کی مدد کریں۔

 

ڈاکٹر محمد شفیق نے مویشیوں کو بیماریوں سے دور رکھنے اور صحت مند کمیونٹیز اور ماحولیاتی نظام کے لیے بہترین طریقوں کو فروغ دینے کی اہمیت سے آگاہ کیا۔ ڈاکٹر شفیق جو اس پروگرام کے کوآردنیٹر بھی تھے انھوں نے تمام شرکاء کے تعاون اور جذبے کو سراہا۔

 

اعلیٰ ترین قومی معیارات پر منعقد ہونے والی اس اہم سرٹیفکیٹ کورس میں تمام فیلڈز کا احاطہ کیا گیا جس میں مویشیوں میں بیماریوں کا روک تھام، ویکسین اور ادویات کا استعمال، بہتر دیکھ بھال، چھوٹے پیمانے کے آپریشن، بہتر افزائش نسل، مویشیوں کا خوراک، مرغ بانی، خرگوش فارمنگ، دیکھ بھال کے جدید طریقے اور مویشیوں میں ویلیو ایڈیشن جیسے موضوعات پر تربیت فراہم کی گئی۔

 

ایس ایل ایف جنگلی حیات کے تحفظ اور کمیونٹی کو بااختیار بنانے کے اپنے مشن پر کاربند ہے. موجودہ سرٹیفکیٹ کورس ان اینیمل ہیلتھ اینڈ پروڈکشن جیسے اقدامات ان مقاصد کے حصول میں اہم کردار ادا کر رہے ہیں۔ شرکاء میں اسناد تقسیم کی گئیں جبکہ مہمانوں اور ٹرینرز کو شیلڈز پیش کی گئیں۔

chitraltimes snowleopard certification course on livestock for gb chitral and kashmir 1


شیئر کریں:
Posted in تازہ ترین, جنرل خبریں, چترال خبریں, گلگت بلتستان
86072