Chitral Times

Feb 7, 2023

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

 چترال کے فلور ملز مالکان کواگر گندم دینا ہے تو گندم کا کوٹہ بڑھایا جائے۔ پاکستان پیپلز پارٹی 

Posted on
شیئر کریں:

 چترال کے فلور ملز مالکان کواگر گندم دینا ہے تو گندم کا کوٹہ بڑھایا جائے۔ پاکستان پیپلز پارٹی

چترال ( نمائندہ چترال ٹائمز)پاکستان پیپلز پارٹی لویر چترال کا ایک اہم اجلاس ضلعی صدر لوئرچترال انجنیئر فضل ربی جان کی زیرصدرات مقامی ہوٹل میں منعقد ہوا۔ اجلاس سے ضلعی صدر، تحصیل چیئرمین دروش شہزادہ خالد پرویز،سینئرنائب صدرشریف حسین،نائب صدرمیردولہ جان،نائب صدررحمان،جنرل سیکرٹری پی پی پی لویر چترال قاضی فیصل احمد سعید،انفارمیشن سیکرٹری نظارولی شاہ،سینئررہنمااپرچترال ابوللیث رامداسی دیگرعہدہداروں نے خطاب کرتے ہوکہاکہ پاکستان پیپلز پارٹی نے ہمیشہ عوامی مسائل کے حل پر توجہ دی ہے،اپنے دور حکومت میں بلا تفریق چترال میں سینکڑوں نوجوانوں کو روز گار فراہم کیا ہے پیپلز پارٹی کی حکومت ہمیشہ عام آدمی کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑی ہوتی ہے۔

 

اجلاس میں ممکنہ طور پر ملاکنڈ ڈویژن اور خاص کر چترال میں ٹیکس کے نفاذ اور اشیائے خورد و نوش پر سبسڈی کوختم کرنے کے فیصلے کوشدیدالفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہاکہ شہید ذوالفقارعلی بھٹو نے چترال کی پسماندگی کو مد نظر رکھتے ہوئے چترال کو پچاس سال تک ٹیکس فری زون قرار دیا تھا۔
سابق وفاقی اورموجودہ صوبائی حکومت نے شہیدبھٹوکوچترالی عوام کودیے گئے یادگارتحفے کو2023میں ختم کرنے کی کوشش کی ہے جو شہید بھٹو کا ویژن تھا کہ پچاس سال بعد یہ علاقہ پاکستان کے دوسرے علاقوں کے برابر ترقی کرے گا لیکن بد قسمتی سے بھٹو شہید کی شہادت کے بعد چترال کو وہ اہمیت نہیں ملی جو بھٹو شہید چاہتے تھے۔انہوں نے مطالبہ کیاہے کہ چترال پاکستان کے دوسرے شہروں کے برابرترقی کرنے تک شہیدذوالفقارعلی بھٹوکادیاہوایہ تحفہ برقراررکھاجائے۔ اگرصوبائی حکومت ہمارے مطالبات پرغورنہیں کیاتوسڑکوں پرآجائیں گے جس کی تمام ترذمہ داری موجودصوبائی حکومت پرعائد ہوگی۔

 

انہوں نے مذیدکہاکہ موجود ہ صوبائی حکومت سرکاری گوداموں سے عوام کوگندم کی فروخت بندکرکے فلورمیل مالکان کوغیراخلاقی این اوسی جاری کرکے گندم فلورمیلوں کوفروخت کررہی ہے جوکہ سراسرزیادتی ہے اگرفلورمیلوں کوگندم کاکوٹہ دیناہے توگندم کی کوٹہ بڑھاکردیاجائے۔پی پی پی اس غیراخلاقی ناجائزطریقہ کی بھرپورمذمت کرتی ہے۔ چترال کے زیادہ ترغریب لوگ سرکاری گوداموں سے گندم خریدکراپنی روزمرہ کی زندگی گزارتے ہیں۔میل کی آٹاکم آمدنی والے حضرات نہیں خریدسکتے ہیں۔

chitraltimes ppp chitral lower meeting2 chitraltimes ppp chitral lower meeting


شیئر کریں: