Chitral Times

Jul 6, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

خیبرپختونخوامیں شمسی توانائی منصوبوں سے عوام کوبروقت ریلیف مل رہاہے،سید امتیازحسین شاہ

Posted on
شیئر کریں:

خیبرپختونخوامیں شمسی توانائی منصوبوں سے عوام کوبروقت ریلیف مل رہاہے،سید امتیازحسین شاہ
پیڈوکے منصوبوں سے10لاکھ طلبہ،12لاکھ مریض اور8لاکھ نمازی مستفید ہونگے،بجلی بلوں کی بچت ہوگی
ایشیائی ترقیاتی بینک سے ایکسیلنس ایوارڈ ملنامحکمے کے لئے اعزازسے کم نہیں ہے،،سیکرٹری توانائی اورپیڈوچیف کا تقریب سے خطاب

پشاور (چترال ٹایمز رپورٹ) سیکرٹری توانائی وبرقیات سیدامتیازحسین شاہ نے کہا ہے کہ خیبرپختونخوامیں جاری شمسی توانائی کے منصوبوں سے عوام کوبروقت ریلیف ملنے کے بہترین نتائج سامنے آرہے ہیں جس سے نہ صرف لوڈشیڈنگ کی لعنت سے پاک ماحول دوست سستی بجلی مہیاہورہی ہے تودوسری جانب صوبے کو بجلی کے بلوں کی مدمیں کروڑوں روپے کی بچت بھی ہورہی ہے۔شمسی توانائی منصوبوں پر کام کرنے والے فیلڈ سٹاف کی کارکردگی قابل ستائش ہے گزشتہ دنوں ایشیائی ترقیاتی بینک کی طرف سے محکمہ توانائی کے ذیلی ادارے پیڈوکوشمسی توانائی منصوبوں میں بہترین ایمپلی مینٹیشن انجام دہی پر ایکسیلنس ایوارڈسے نوازا گیاجوکہ ہمارے لئے اعزاز سے کم نہیں ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیڈوکے زیرنگرانی جاری شمسی توانائی کے منصوبوں کے فیلڈافسران وسٹاف کو بہترین کارکردگی پر ایوارڈ دینے کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں چیف ایگزیکٹوپیڈوانجینئرنعیم خان نے بتایا کہ پیڈواس وقت ایشیائی ترقیاتی بینک کے مالی تعاون سے 8000سکولوں اور187بنیادی مراکزصحت کوشمسی توانائی پر منتقلی کے منصوبوں پرتیزی سے کام کررہاہے جن سے لوڈشیڈنگ سے پاک12میگاواٹ بجلی پیداکی جائے گی جس سے 10لاکھ طلبہ اور12لاکھ مریض مستفید ہونگے اسی طرح4400مساجدکی بھی سولرائزیشن کاعمل بھی جاری ہے جس سے 8لاکھ نمازی مستفیدہونگے اسکے علاوہ ضم شدہ قبائلی اضلاع میں بھی مساجد،بازاروں اوردیگرمذہبی مقامات پرسولرائزیشن کے منصوبے تیزی سے جاری ہیں۔ان منصوبوں کی تکمیل سے صوبے کوبجلی کے بلوں کی مد میں سالانہ اربوں روپے کی بچت متوقع ہے۔سیکرٹری توانائی سید امتیازحسین شاہ نے شمسی توانائی کے منصوبوں میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے فیلڈ سٹاف،پراجیکٹ ڈائریکٹرآصف کمال اورچیف ایگزیکٹو پیڈوانجینئرنعیم خان کو تعریفی اسناد اورشیلڈ دیتے ہوئے اس عزم کا اظہارکیا کہ پیڈوکے جاری منصوبے آنے والے دنوں میں مکمل ہونے کے بعد صوبے میں معیشت کے استحکام اورروزگارکے نئے مواقع پیداکرنے میں معاون ثابت ہونگے۔


شیئر کریں: