Chitral Times

Apr 18, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

چترال میں لینڈ سیٹلمنٹ کے نوٹیفکیشن کو دو سال کیلئے موخرکردیاجائے۔۔خدیجہ بی بی

شیئر کریں:

چترال (نمائندہ چترال ٹائمز) عوامی نیشنل پارٹی خیبر پختونخوا کے نائب صدر خدیجہ بی بی نے صوبائی حکومت پر زور دیاہے کہ چترال میں لینڈ سیٹلمنٹ کے نوٹیفکیشن کو دو سال کے لئے موخر کردیاجائے جس کا چترال کے عوام مطالبہ کررہے ہیں تاکہ علاقے میں لینڈ سیٹلمنٹ کے ریکارڈز درست طریقے سے مرتب ہوں اور بعد میں تنازعات کا باعث نہ بن سکیں۔ ایک اخباری بیان میں انہوں نے کہا کہ ایک ہی ملک میں دو قانون نہیں ہوسکتے اوربے بنیاد اور غلط مفروضے پر حکومت نے عوام کی زمینات کو سرکاری قرار دیا ہے جس سے عوام میں سراسیمگی اور پریشانی پھیل گئی ہے۔ انہوں نے لینڈ سیٹلمنٹ کے بار ے میں آل پارٹیز کے موقف کی مکمل حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ غریب طبقہ سب سے ذیادہ اس عمل سے متاثر ہوا ہے کیونکہ چارہ دست لوگوں نے اپنے دستاویزات قا نونی کرچکے ہیں۔انہوں نے مزید کہاکہ وقت کی نزاکت کو سمجھتے ہوئے ارندو سے لے کر بروغل تک عوام آپس میں یکجہتی کا مظاہر ہ کرتے ہوئے اپنے حقوق اور اراضی کے چھینے جانے کے خلاف جدوجہد کریں کیونکہ ملاکنڈ ڈویژن میں ایک انچ زمین بھی پہاڑ، چراگاہ یا ریوربیڈ کے نام پر حکومت کے قبضے میں نہیں ہے اور سکائی لائن تک عوامی ملکیت ہے جبکہ چترال میں ہی ایک متنازعہ نوٹیفیکیشن کی بناپر سب کچھ چھینا جارہا ہے۔ خدیجہ بی بی نے چترال کے عوام پرزور دیاکہ وہ اس نازک موقع پر اپنے صفوں میں مکمل اتحادواتفاق کا فضا نہ صرف قائم رکھیں بلکہ اسے مزید مستحکم کریں۔


شیئر کریں: