Chitral Times

روز چترال کی طرف سے ایک اور ہونہار طالب کو سکالر شپ کا چیک دیدیاگیا

روز چترال کی طرف سے ایک اور ہونہار طالب کو سکالر شپ کا چیک دیدیاگیا

چترال ( چترال ٹائمز رپورٹ ) چترال میں اعلیٰ تعلیم کے لیے کوشان ادارہ” روز چترال” کی طرف سے ایک اور ہونہار طالب علم کو سکالر شپ کا چیک دیدیا گیا ۔ وسیم سجاد کا تعلق شیشی کوہ سے ہے جو چترال یونیورسٹی میں بی ایس کمپیوٹر سائنس میں سیکنڈ سمسٹر کے طالب علم ہیں۔ والد صاحب کی اچانک رحلت کے بعد ان کے خاندان مالی مشکلات کاشکار ہوا جس کی وجہ ا نھیں تعلیم جاری رکھنا تقریباً ناممکن ہوگیا تھا۔ ان حالات میں انہوں نے روز چترال کو درخواست کی جس پر ادارے کے مہربان ڈونر صغرا نذیر سہیل احمد (مرحومین) ٹرسٹ نے ان کے دوسرے سمسٹر سمیت ٹرانسپورٹ کی فیس مبلغ انہتر ہزار ادا کی۔ جو ڈاکٹر منصور اللہ بیگ ہیڈ آف منیجمنٹ سائنسز ڈیپارٹمنٹ یونیورسٹی آف چترال کے ہاتھوں ان کو دی گئی۔

یہ اپنی نوعیت کا منفرد اسکالرشپ ہے جو روز کے پلیٹ فارم سے دیا گیا کیونکہ عموماً اسکالرشپ تعلیمی سال کے شروع میں دئے جاتے ہیں لیکن روز چترال کو اپنی پالیسی سے ہٹ کر بھی بعض دفعہ کسی ضرورت مند طالب علم کی پکار پر لبیک کہتے ہوئے آگے آنا پڑتا ہے کیونکہ روز کا موٹو ہے کہ کوئی بھی طالب علم محض مالی مشکلات کی وجہ سے تعلیم سے محروم نہ رہ جائے۔

ان حالات کے پیش نظر چترال چیئرمین روز نے مخیر خواتین و حضرات سے پرزور اپیل کی ہے کہ اس قسم کے فوری سکالر شپ کے لئے چونکہ نقد رقم کی اچانک ضرورت پڑ جاتی ہے اور روز کے وسائل کا واحد ذریعہ آپ جیسے مخیر خواتین وحضرات کی مالی معانت ہے اس لئے آگے آکر ہمارا دست و بازو بنیں تاکہ کوئی بھی طالب علم مالی وسائل کی وجہ سے اعلی تعلیم سے محروم نہ رہ جائے۔

Posted in تازہ ترین, چترال خبریںTagged
79442

روز چترال کی طرف سے پشاور یونیورسٹی کے ایک اور طالبہ کو سکالرشپ کا چیک دیا گیا، مزار قائد کے خطیب مولانا شمس الدین مہمان خصوصی تھے

Posted on

روز چترال کی طرف سے پشاور یونیورسٹی کے ایک اور طالبہ کو سکالرشپ کا چیک دیا گیا، مزار قائد کے خطیب مولانا شمس الدین مہمان خصوصی تھے

چترال ( نمایندہ چترال ٹایمز ) پیر کے دن روز چترال ( ROSE, Chitral) کے آفس میں ایک پر وقار تقریب میں روز چترال کی طرف سے چترال ٹاون سے تعلق رکھنے والی پشاور یونیورسٹی میں میتھیمیٹکس ڈیپارٹمنٹ کی ہونہار طالبہ آمینہ حسن کو پچاس ہزار روپے اسکالر شپ کا چیک بدست مہمان خصوصی مولانا شمس الدین ، خطیب مزار قائد آعظم دیا گیا ۔ اس خصوصی تقریب میں پروفیسر اسرارالدین ، نامور قانون دان عبدالولی خان ، آغا خان ریجنل کونسل چترال کے سابق صدر محمد افضل ، خطیب شاہی مسجد چترال مولانا خلیق الزمان ، معروف صحافی اور سوشل ورکر محمد علی مجاہد، چترال ٹائمز کے چیف ایڈیٹر سیف الرحمن عزیز اور اپر چترال تورکہو سے تعلق رکھنے والے چترال کے ایک اور فرزند ڈاکٹر جاوید محمود جو کوریا سے کیمسٹری میں پی۔ ایچ۔ڈی کی سند لینے کے بعد آج کل مدینہ یونیورسٹی سعودی عربیہ میں بطور پروفیسر خدمات انجام دے رہے ہیں موجود تھے۔ اس تقریب میں چرمین ہدایت اللہ کے علاوہ روز کے ایگزیکٹیو کمیٹی کے ممبران نے بھی شرکت کی۔
چیرمین روز کا کہنا تھا کہ اس قسم کی تقریبات کو میڈیا کے ذریعے مشتہر کرنے کا مطلب کسی قسم کی پبلیسٹی ہرگز نہیں بلکہ لوگوں میں اس بات کی آگاہی پیدا کرنا ہے کہ روز اس طرح کے سکالرشپ دینے کے لئے مقامی خواتین و حضرات کی دی ہوئی عطیات پر انحصار کرتا ہے اور جو لوگ روز کو عطیات دیتے ہیں انھیں مطلع کرنا بھی مقصود ہے کہ ان کی دی ہوئی عطیات ان نامور شخصیات کی موجودگی میں حقدار طلبہ تک پہچادیا جاتا ہے تاکہ دیگر مخیر خواتین و حضرات بھی اعتماد کے ساتھ روز کے ساتھ مدد کرنے میں پیش پیش ہو۔

Posted in تازہ ترین, چترال خبریںTagged
77093

روز چترال کی طرف سے نرسنگ کی طالبہ کو سکالر شپ کا چیک دیا گیا

روز چترال کی طرف سے نرسنگ کی طالبہ کو سکالر شپ کا چیک دیا گیا

چترال ( چترال ٹایمز رپورٹ ) ROSE,Chitral کے دفتر میں گزشتہ دن منعقدہ ایک تقریب میں چترال کے علاقے سیوحت شغورگرم چشمہ سے تعلق رکھنے والی نرسنگ کی طالبہ انیلا شہزادی بنت محمد پناہ کو سکالر شپ چیک دینے کی تقریب منعقد ہوئی ۔
اس تقریب کے خاص مہمان بنک آف پنجاب کے منیجر امتیاز حسین شاہ تھے ۔ امتیاز روز کو سپورٹ کرنے میں پیش پیش رہے ہیں اور انکا تعاون اور محبت ہمیشہ سے ادارے کے ساتھ شامل رہی ہے تقریب میں طالبہ کے والد محترم نے طالبہ کیطرف سے چالیس ہزار روپے کا چیک وصول کیا۔ اس موقع پر ROSE, Chitral کے ایکزیگٹیو کے ممبران بھی موجود تھے۔
مس انیلا کراچی میں نرسنگ کے آخری سمسٹر میں تعلیم مکمل کررہی ہے خاندان میں اچانک بیماری کی وجہ سے انکا خاندان انکی فیس ادا کرنے سے قاصر تھا اس لئے انھوں نے روز سے رجو ع کیا جس کے نیتجے میں اسکی فیس روز کی طرف سے ادا کردی گئی اور یوں اس ہونہار طالبہ کا مستقبل متاثر ہونے سے محفوظ رہا ۔
کوئی بھی ادارہ اس طرح کی ہنگامی مالی مدد کرنے سے قاصر رہتے ہیں مگر روز اس لحاظ سے منفر د ہے کہ یہ طلباء طالبات کو اچانک ضرورت پڑنے پر بھی مایوس نہیں کرتا ۔ حالانکہ اس طرح کی ہنگامی امداد کے لئے کیش رقم کی ضرورت پڑتی ہے جو کہ موجودہ حالات میں روز کے لئے انتہائی مشکل صورتحال ہے کیونکہ حالیہ معاشی مشکلات اور مالی بحران کی وجہ سے ہمارے مستقل ڈونر دوسرے سالوں کی طرح ہمارے ساتھ تعاون کرنے سے قاصر ہیں جس کی وجہ روز شدید مالی مشکلات کا شکار ہیں اس لئے مقامی مخیر خواتین و حضرات سے درد مندانہ اپیل کی جاتی ہے کہ خدارا آگے آئیے اور انیلا جیسے کئی طلباو طالبات اپنی مالی مشکلات کی وجہ سے آپ کی راہ تک رہے ہیں انکی مدد کیجئے اور انکا مستقبل تباہ ہونے سے بچانے کے لئے اپنا کردار ادا کیجئے۔

Posted in تازہ ترین, چترال خبریںTagged
72988

روز چترال کی طرف سے خیبرمیڈیکل یونیورسٹی پشاور کے ایک اور ہونہار طالبہ کو سکالر شپ کا چیک دیا گیا

روز چترال کی طرف سے خیبرمیڈیکل یونیورسٹی پشاور کے ایک اور ہونہار طالبہ کو سکالر شپ کا چیک دیا گیا

چترال ( چترال ٹایمز رپورٹ ) آج” روز چترال “کے دفتر میں منعقدہ ایک تقریب میں چترال کے علاقے ریشن گول سے تعلق رکھنے والی ایک ہونہارطالبہ لایئبہ گل بنت شہر ی بیگ جو کہ حال ہی میں خیبر میڈیکل یونیورسٹی پشاور میں ایم بی بی ایس میں داخلہ لینے میں کامیاب ہوئی کو سکالر شپ چیک دینے کی تقریب منعقد ہوئی ۔
اس تقریب کے خاص مہمان گرم چشمہ سے تعلق رکھنے والے چترال کے نامور سپوت رحمت ولی خان ڈپٹی ڈائریکٹر سول اکیڈمی لاہور تھے ۔ تقریب میں طالبہ کے والد نے طالبہ کیطرف سے پچاس ہزار کا چیک وصول کیا۔ اس موقع پر ROSE, Chitral کے ایکزیگٹیو کے ممبران بھی موجود تھے۔

اس موقع پر چیرمین روز ہدایت اللہ نے بتایا کہ ان تقاریب کو میڈیا میں دینے کا مقصد کوئی ذاتی تشیہر بالکل نہیں ہے بلکہ صرف یہ آگاہی پھیلانا ہے کہ چترال کےکئی ایسے پسماندہ علاقوں کے بچے اور بچیاں پروفیشنل ادروں میں داخلہ لینے کی اہلیت تو رکھتے ہیں مگر زیادہ تر باصلاحیت طلبہ محض مالی مشکلات کی وجہ سے داخلہ لینے سے محروم رہ جاتے ہیں۔ اس لئے چترال کے تمام صاحب ثروت خوایتن و حضرات خاصکر چترال کے ڈاکٹرز، انجینئرز ، وکلاء اور دوسرے پروفیشنلز سے درخواست ہے کہ وہ آگے اکر ہمارا ساتھ دیں تاکہ ہم مستقبل میں بھی ایسے کئی باصلاحیت طلبہ کو مالی سپورٹ کرکے ان ادروں میں بھیج سکے۔

chitraltimes rose chairman is giving a soviner to dd rahmat wali civil academy lhr

Posted in تازہ ترین, چترال خبریںTagged
71703

روز چترال کےایک ہونہار طالب علم نے بی ایس کمپیوٹر سائنس میں ٹاپ کرکے گولڈ میڈل حاصل کر لیا

Posted on

روز چترال کےایک ہونہار طالب علم نے بی ایس کمپیوٹر سائنس میں ٹاپ کرکے گولڈ میڈل حاصل کر لیا

چترال ( نمایندہ چترال ٹایمز ) چترال میں کم وسایل والے ہونہار طالب علموں کی اعلیِ تعلیم کیلے کوشان ادارہ “روز چترال ” کے ایک طالب علم نے اچھی پوزیشن سے سنگ میل عبور کرلیا ہے اس کی زندہ مثال ارشاد فراز ہے جس نے حال ہی میں سیکاز یونیورسٹی پشاور سے بی ایس کمپیوٹر سائنس میں گولڈ میڈل حاصل کر لیا ہے۔ موصوف کا تعلق دروش کے نواحی علاقے لاوی سے ہے۔

“روز چترال ” اپر اور لوئر چترال کے دور دراز علاقوں میں موجود قابل بچوں اور بچیوں کو تلاش کرکے اعلیٰ تعلیم کی تکمیل تک مالی معاونت فراہم کرکے ان کو معاشرے کا ایک ذمہ دار شہری بنا کر چترال سے جہالت کے خاتمے کی کوششوں میں مگن ہے۔ ROSE-Chitralچترال کے اندر مخیر خواتین و حضرات اور معاشرے کے صاحب ثروت افراد کی مالی معاونت سے اپنی سرگرمیاں جاری رکھی ہوئی ہے۔ اور اب تک خاطر خواہ کامیابی حاصل کی ہے۔ لیکن آج بھی پورے چترال کو اعلی تعلیم کے زیور سے آراستہ کرنے کے لیے چترال کے صاحب ثروت اور مخیر خواتین و حضرات کی بھر پور حمایت اور معاونت کی ضرورت ہے تاکہ چترال کے اندر موجود ہیروں کو تلاش کرکے اور تراش کر معاشرے کا ایک ذمہ دار رکن بنایا جاسکے۔

ROSE-Chitralچند دن پہلے بھی ایوب میڈیکل کالج ایبٹ آباد میں زیر تعلیم چترال مستوج کی ایک اور ہونہار طالبہ کو ایک لاکھ روپے کی سکالرشپ نقد کی صورت میں دی ہے۔

ROSE-Chitralایک بار پھر اہالیان چترال سے ROSE-Chitralکے ساتھ دینے اور چترال کو ملک کے دوسرے علاقوں کے برابر لانے کی کوشش میں بھر پور معاونت کی درخواست کرتی ہے اور توقع کرتی ہے کہ ہر ایک چترالی ROSE-Chitralکے ساتھ دل کھول کر امداد دے گا تاکہ اس کار خیر میں سب شامل ہوں اور روزچترال کے ہم رکاب بنیں

chitraltimes cecos student faraz receive gold medal 2

Posted in تازہ ترین, چترال خبریںTagged
70296

روز چترال کی طرف سے ایم بی بی ایس کے طالب علم کامران حسین کو سکالرشپ کا چیک دیا گیا 

Posted on

روز چترال کی طرف سے ایم بی بی ایس کے طالب علم کامران حسین کو سکالرشپ کا چیک دیا گیا

چترال ( نمائندہ چترال ٹائمز )  ROSE, Chitral کے آفس میں ایک سادہ مگر پر وقار تقریب میں چترال کے ایک اور ہونہار طالب علم کامران حسین ساکن میرا گرام اپر چترال کی حوصلہ افزائی کے لئے ستر ہزار روپے اسکالر شپ کا چیک بدست ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر چترال  عرفان الدین دیا گیا ۔ اس موقع پر چترال کے نامور سیاسی و سماجی شخصیت جناب سجاد احمد بھی موجود تھے۔ یاد رہے کہ کامران حسین نے حال ہی میں ملک کے نامور ادارے آغا خان یونیورسٹی سے ایم ۔بی۔بی ۔ایس نمایاں نمبروں سے پاس کرنے کے بعد امریکہ میں اسپشیلائزیشن کے لئے منتخب ہوگئے ہیں جوکہ ایک اعزاز کی بات ہے۔

اس موقع پر چیئرمین روز ہدایت اللہ نے کہا کہ ROSE, Chitralکی کوشش ہے کہ اس طرح کے طالب علموں کی حوصلہ افزائی کے لئے تمام ذرائع بروئے کار لاکر ڈونیشن اکٹھی کی جائے تاکہ دوسرے طالب علم بھی محنت کرکے آگے آئیے اور اسکالر شپ کے حق دار ہو۔

انھوں نے کہا کہ ROSE, Chitralچترال اس طرح کے اسکالر شپ کے لئے مقامی مخیر خواتین و حضرات خصوصاً بیرون ملک مقیم چترال کمیونٹی کے افراد کے عطیات اور زکواۃ پر انحصار کرتا ہے تاکہ چترال کا کوئی طالب علم محض مالی پریشانیوں کی وجہ سے اعلی تعلیم سے محروم نہ رہے۔

چیئرمین نے تمام خواتین و حضرات سے درخواست کی ہے کہ وہ اپنے عطیات اور صدقات میں ان مستحق طالب علموں کا ضرور حصہ رکھے تاکہ دیے سے دیے جلانے کا یہ عمل رکنے نہ پائے۔

Posted in تازہ ترین, چترال خبریںTagged
68669

روز چترال کے پلیٹ فارم سے دو ہونہار طالب علموں نے نمایاں نمبروں سے اعلیٰ تعلیم مکمل کی

روز چترال کے پلیٹ فارم سے دو ہونہار طالب علموں نے نمایاں نمبروں سے اعلیٰ تعلیم مکمل  کی۔

چترال ( نمائندہ چترال ٹائمز ) چترال میں کم وسائل والے ہونہار طالب علموں کی اعلیٰ تعلیم کیلئے کوشان ادارہ ‘روزچترال ‘ کی طرف سے جاری ایک پریس ریلیزمیں کہا گیا ہے کہ آج ROSE, Chitral کی تاریخ میں ایک یاد گار دن ہے اور ہم یہ اعلان کرتے ہوئے فخر محسوس کرتے ہیں کہ ROSE, Chitral کے بوئے ہوئے پودوں نے اب پھل دینا شرو ع کردیا ہے۔ ROSE, Chitral نے آ ج سے لگ بھگ بارہ سال قبل جس یک نکاتی ایجنڈے کہ چترال کا کوئی طالب علم محض مالی مشکلات کی وجہ سے اعلی تعلیم سے محروم نہ رہ جائے کو لیکر ایک مشکل سفر کا آغاز کیا تھااب اسکے ثمرات ملنا شروع ہوگئے ہیں۔
چترال کے دو نامور طالب علموں نے ROSE, Chitral کے پلیٹ فارم سے اپنے تعلیمی سفر کا آغاز کرتے ہوئے حال ہی میں کامیابی سے اسے اختتام کو پہنچایا ہیں۔

ان میں سے ایک چترال کے ایک پسماندہ علاقے اورغوچ سے تعلق رکھنے والا باپ کے سایہ سے محروم طالب علم نصیر آحمد انتہائی نا مساعد حالات میں اپنی تعلیم کا سسلسلہ جاری رکھتے ہوئے جب انکا پورا گھر سیلاب میں بہہ گیا تھا میٹرک کے امتحان میں ریکارڈ کامیابی حاصل کی تھی اور پھر ROSE, Chitral کی زیر سایہ UET Peshawarمیں داخلہ لیکر الیکٹریکل انجئیرنگ میں نمایاں نمبرو ں کے ساتھ ڈگری حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔
اورغوچ ہی سے تعلق رکھنے والے اور طالب علم آصف کلان نے CECOS University پشاور سے نمایاں نمبروں سے BBA کا امتحان پاس کرکے اب ایک ملٹی نشنل کمپنی میں ملازمت حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔

پریس ریلیز میں مذید کہا گیا ہے کہ چترال بھر میں ایسے کئی ہونہار طلبہ موجود ہیں جو مالی مشکلات کی وجہ سے اعلی تعلیم حاصل کرنے میں دقت محسوس کرتے ہیں اور ہماری مالی مدد کے منتظر ہیں ہم اس پلیٹ فارم سے چترال کے تمام صاحب ثروت خواتین و حضرات سے درخواست کرتے ہیں کہ وہ آگے آئیں اور ہمارے ساتھ تعاون کریں تاکہ چترال کا کوئی طالب علم محض مالی مشکلات کی وجہ سے تعلیم سے پیچھے نہ رہ جائے بلکہ اعلی تعلیم حاصل کرکے ایک باعزت شہری بن کر ملک وقوم کی خدمت کرنے کے قابل ہوسکے۔پریس ریلیز میں مذید کہا گیا ہے کہ ROSE, Chitral چترال اپنے قیام سے اب تک 500طالب علموں کو زیور تعلیم سے آراستہ کرنے میں بھرپور معاونت کی ہے اور یہ سلسلہ بلا تعطل اب تک جاری و ساری ہے۔

یہ تنظیم تمام چترالیوں سے توقع رکھتی ہے کہ وہ اس تنظیم کو own کرے اور آگے اکر اسکا دست وبازوں بنے تاکہ مزید کئی طلبہ جو مالی امداد کے منتطر ہیں ان تک آپ کے تعاون سے مالی مدد پہنچائی جاسکے اور انکی تعلیم کے سلسلے کو آگے بڑھانے میں مدد کی جاسکے۔

ROSE, Chitral تمام مخیر خواتین و حضرات خصوصاً انور آمان صاحب، نگہت کائی اور روزی منشاہ صاحب اور دیگر صاحب ثروت اور درد دل رکھنے والے باشندوں سے التماس کرتا ہے کہ آگے آکر اس کارِ خیر میں اپنا حصہ ڈالیں تاکہ چترال کا کوئی طالب علم مالی مشکلات کی وجہ سے تعلیم سے محروم نہ رہ جائے۔ اللہ تعالی آپ سب کو اس نیک کام میں شامل ہونے کی توفیق دے اور سب کا حامی وناصر ہو!

Posted in تازہ ترین, چترال خبریںTagged
67041

روز چترال کی طرف سے انجینئرنگ کی ایک اور طالب علم کو سکالر شپ کا چیک دیا گیا

Posted on

روز چترال کی طرف سے انجینئرنگ کی ایک اور طالب علم کو سکالر شپ کا چیک دیا گیا

چترال ( چترال ٹایمز رپورٹ ) چترال میں اعلیِ تعلیم کیلیے کوشان ادارہ “روز چترال “کے دفتر میں منعقدہ ایک تقریب میں چترال کے ایک پسماندہ علاقے موری پائین سے تعلق رکھنے والے ایک ہونہارطالب علم خواجہ جواد اللہ ولد خواجہ عطاء اللہ جو کہ حال ہی میں یونیورسٹی آف انجیںئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی پشاور میں اوپن میرٹ پر مائنیگ انجینئرنگ میں داخلہ لینے میں کامیاب ہوئےہیں کو سکالر شپ چیک دینے کی تقریب منعقد ہوئی ۔ جواد اپنے پورے تعلیمی کیرئیر میں ایک ہونہار طالب علم رہے ہیں اور وہ موری پائین جیسے تعلیمی لحاظ سے پسماندہ علاقے سے انجینئرنگ میں اوپن میرٹ پر داخلہ لینے والے پہلے طالب علم ہیں۔

اس تقریب کے خاص مہمان سینٹینئل ماڈل سکول کے وائس پرنسپل شاہد جلال تھے ۔ پرنسپل ROSE کے ایک مستقل ڈونر اورمحسن ہیں ۔ اس تقریب میں طالب علم جواد کے والد محترم نے طالب علم کیطرف سے پچاس ہزار کا چیک وصول کیا۔ اس موقع پر ROSE, Chitral کے ایکزیگٹیو کمیٹی کے ممبران بھی موجود تھے۔
اس موقع پر گفتگو کرتے ہویے چیرمین ہدایت اللہ نے کہا کہ ان تقاریب کو میڈیا میں دینے کا مقصد کوئی ذاتی تشیہر بالکل نہیں ہے بلکہ صرف یہ آگاہی پھیلانا ہے کہ چترال کےکئی ایسے پسماندہ علاقوں کے بچے اور بچیاں پروفیشنل ادروں میں داخلہ لینے کی اہلیت تو رکھتے ہیں مگر زیادہ تر باصلاحیت طلبہ محض مالی مشکلات کی وجہ سے داخلہ لینے سے محروم رہ جاتے ہیں۔ اس لئے چترال کے تمام صاحب ثروت خوایتن و حضرات خاصکر چترال کے ڈاکٹرز، انجینئرز ، وکلاء اور دوسرے پروفیشنلز سے درخواست ہے کہ وہ آگے اکر ہمارا ساتھ دے تاکہ ہم مستقبل میں بھی ایسے کئی باصلاحیت طلبہ کو مالی سپورٹ کرکے ان ادروں میں بھیج سکے۔

 

Posted in تازہ ترین, چترال خبریںTagged
66723

پروازوں کی منسوخی کے سبب ”روز چترال” نے ایجوکیشن سمٹ کو موخر کردیا 

پروازوں کی منسوخی کے سبب ”روز چترال” نے ایجوکیشن سمٹ کو موخر کردیا

چترال ( نمائندہ چترال ٹایمز ) غیر سرکاری ادارہ روز چترال کے آفس میں ROSE, Chitral کے ایگزیکٹیو باڈی کا ایک اہم اجلاس چیرمین ہدایت اللہ کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں انے والے چترال ایجوکیشن سمٹ کے سلسلے میں امور پر تبادلہ خیا ل کیا گیا۔ اس اجلاس میں پورے ملک میں حالیہ سیلاب کی تباہ کاریوں اور نقصانات پر افسوس کا اظہار کیا گیا اور ہلاک شداگان کی مغفرت کی دعا کی گئی۔

اس اجلاس میں فیصلہ کیاگیا کہ ملک بھر میں تباہ کن سیلاب کے بعد کی صورتحال اور اسلام آباد اور چترال کے درمیان چلنے والی پی۔آئی۔ اے کی فلائیٹ فنی خرابی کی وجہ سے پندرہ اکتوبر تک موخر ہونے کی وجہ سے انے والے سمٹ کو بھی فی الحال موخر کرنے کا فیصلہ کیا گیا تاکہ آے والے ہمارے معزز اور خاص مہمانوں کو کسی دشواری کا سامنا نہ ہو۔ چونک اس سمٹ میں ملک بھر سے وی۔آئی۔ پیز، تعلیمی اداروں کے سربراہان، میڈیا ہاوسز کے سربراہان اور صحافییوں کی شرکت متوقع تھی اس لئے فلائیٹ کی صورتحال اور سیلاب کی وجہ سے مشکلات کی وجہ سے یہ فیصلہ کیا گیا ہے۔ یہ فیصلہ بھی کیا گیا کہ جوں ہی فلائٹ بحال ہونگی اور سیلاب کی وجہ سے سفری سہولیات میں حائل رکاویٹیں دور ہونگی تو سمٹ کو منعقد کرنے کے لئے مشاورت کے بعد اور مہمان گرامی کی شرکت کنفرم کرنے کے بعد ائندہ تاریخ سے میڈیا کے ذریعے آگاہ کیا جائے گا۔

دریں اثنا روز کے دفتر میں منعقدہ ایک تقریب میں پیرا بیگ گرم چشمہ چترال سے تعلق رکھنے والی ایک ہونہار بیٹی ہیرہ ناز دختر گل عجب جو کہ ایوب میڈیکل کالج ایبٹ آباد میں بی۔ڈی۔ایس کی طالبہ ہے کو اسکالر شپ کا چیک دیا گیا۔ ہیرہ ناز ناز اپنے پورے تعلیمی کٰیرئر میں شاندارکارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے اور ایف ایس سی میں آغا خان ایکزامینیشن بورڈ سے پورے پاکستان میں ٹاپ کرنے کا اعزاز حاصل کیا تھا۔انکی اس شاندار کارکردگی کے لئے ROSE, Chitral کی گزشتہ میٹنگ میں انکی حوصلہ افزاٰئی کے لئے انھیں یہ سکالر شپ دینے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

اس تقریب کے خاص مہمان چترال نیشنل بنک کے منیجر امجد اے ثانی تھے۔ امجد نہ صرف چترال کے ایک قابل فخر فرزند ہیں بلکہ ROSE,Chitral کے ایک مستقل ڈونر اورمحسن ہیں۔ آنے والے چترال ایجوکیشن سمٹ میں امجد کا ایک خاص کردار ہے ۔ اس تقریب میں طالب ہیرہ ناز کے والد گل عجبنے شرکت کی اور طالبہ کیطرف سے پچاس ہزار کا چیک وصول کیا۔ اس موقع پر روز چترROSE,Chitral کے ایکزیگٹیو کے ممبران بھی موجود تھے۔

chitraltimes Rose schlorship for another student hira naz

Posted in تازہ ترین, چترال خبریںTagged ,
65379

 روز چترال کی طرف سے سکول کے دوبچوں کو سکالر شپ کے چیک جاری، یونیورسٹی تک تعلیم دینے کا عزم 

 روز چترال کی طرف سے سکول کے دوبچوں کو سکالر شپ کے چیک جاری، یونیورسٹی لیول تک تعلیم دینے کا عزم

چترال ( نمایندہ چترال ٹایمز ) روز چترال کے ایکزیگٹیو باڈی اجلاس میں فیصل آباد سے تعلق رکھنے والے تریچمیرماڈل سکول کے دو بچوں آیان محمود اور شایان محمود کے یونیورسٹی لیول تک تعلیمی اخراجات چترال کی نامور بیٹی شہناز گل کے نام پر جاری کردہ شہنازگل میموریل سکالر شپ کے تحت برداشت کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

یاد رہے کہ مذکورہ طالب علم بچوں کی والدہ جنکا تعلق اپر چترال موڑ کہو سے ہیں اور انکی شادی تقریباً بیس سال پہلے فیصل آباد میں ہوئی تھی اور شادی کے کچھ عرصے بعد شوہر لاپتہ ہوگئے تھے جس کے بعد وہ بچوں سمیت چترال موڑکہو منتقل ہوگئی تھی۔ بچے اپنی والدہ کے زیر کفالت ہیں اور آمدنی کا کوئی ذریعہ نہ ہونے کی وجہ بچوں کی والدہ نے ROSE, Chitralسے اپیل کی تھی کہ بچوں کی تعلیم میں مالی مشکلات کی وجہ سے وہ بچوں کے اگے تعلیم دلوانے سے قاصر ہیں۔
سکالر شپ چیک دینے کی تقریب میں دونو ں بچے اپنے سکول کے پرنسپل کے ساتھ شریک ہوئے اس موقع پر ROSE, Chitral کے چیرمین ہدایت اللہ نے بچوں کو یقین دلایا کہ وہ جس لیول تک تعلیم حاصل کرنا چاہے ان کوتعلیمی اخراجات کے لئے فکر مند ہونے کی ضرورت نہیں وہ صرف اپنی تعلیم پر توجہ مرکوز رکھے اور دل لگا کر پڑھے تاکہ انکی والدہ نے اپنے بچوں کے لئے جو خواب دیکھے ہیں وہ شرمندہ تعمیر ہو سکیں۔

اس موقع پر چیر مینROSE, Chitral نے تمام مخیر خواتین و حضرات سے دردمندانہ اپیل کی کہ چترال کے طول و عرض میں ایسے کئی بچے ہیں جو اس قسم کی مشکلات کا شکار ہیں اور مالی مسائل کی وجہ سے تعلیم کا سلسلہ جاری رکھنے سے قاصر ہیں ہمیں ان بچوں تک پہونچنا ہے اور تعلیم کے حصول میں ان کی مدد کرکے انھیں ایک ذمہ دار شہری بنانا ہے ۔ اس لئے یہ تمام صاحب ثروت خواتین و حضرات کی ذمہ داری ہے کہ وہ آگےآکر ROSE, Chitral کی مدد کرے تاکہ کوئی بھی طالب علم محض مالی مشکلات کی وجہ سے تعلیم سے محروم نہ رہے۔

Posted in تازہ ترین, چترال خبریںTagged
62306

روز چترال کی طرف سے چترال کے دو نامور بیٹیوں کے نام پر سکالرشپ دینے کا اعلان

روز چترال کی طرف سے چترال کے دو نامور بیٹیوں کے نام پر سکالرشپ دینے کا اعلان

چترال ( چترال ٹایمز رپورٹ ) ایکزیگٹیوباڈیROSEکا اجلاس منگل کے روز ROSE کے دفتر میں منعقد ہوا۔ تلاوت کلام مجید سے اس اجلاس کا آغاز ہوا اور طویل بحث و مباحثے کے بعد ذیل فیصلے کئیگئے۔

صمد شائنینگ سٹار کے نام سے ایک نئے سکالر شپ کی منظوری دی گئی جس میں صرف ایم۔ ایس سطح پر کسی باصلاحیت طالب علم کو نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی اسلام آباد میں 100فیصد سکالر شپ کی بنیاد پر داخلہ دیا جائے گا۔ یہ سکالر شپ چترال کی ایک ہونہار بیٹی بنظیر صمد کی خدمات کے اعتراف کے طور پر انکے نام پر دیا جائے گا۔ چترال کی یہ بیٹی تعلیمی میدان میں چترال کو آگے لانے کے سلسلے میں شاندار خدمات انجام دئے رہی ہیں اور ROSE کے ساتھ بے مثال تعاون کا سلسلہ انکی خدمات کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

اس میٹنگ میں چترال کی ایک اور نامور بیٹی شہناز کائی کے نام پرایک اور اسکالر شپ کی منظوری بھی دی گئی۔یہ اسکالر شپ انتہائی ضرورت مند بچوں کو سکول لیول پر دیا جائیگا۔

شہایز کائی مرحومہ نے اپنی پوری زندگی ابتدائی بچپن کی تعلیم و تربیت یعنی Early Childhood Education Development (ECED)کی ایک ماہر اور کارکن کے طور پر وقف کررکھی تھی انہوں نے اس شعبے میں مختلف نامور اداروں میں کام کیا اور اس شعبے میں بہت نام کمایا۔ شہناز کائی جنکا تعلق چترال کے ایک خوبصورت علاقے موردیر سے تھا گزشتہ سال کرونا کی عالمی وبا کے نتیجے میں امریکہ کے ایک ہسپتال میں اس موذی مرض سے جانبر نہ ہوسکی۔
ROSE چترال کی ان نامور بیٹیوں کی خدمات کا اعتراف کرتے ان کے نام پر ان اسکالر شپ کی اجراء پر فخر محسوس کرتا ہے اور اس موقع پر دوسرے مخیر خواتین و حضرات سے درخواست کرتا ہے کہ وہ بھی آگے آکرROSEکے کاس نیک کام میں اپنا حصہ ڈالیں تاکہ چترال کا کوئی طالب علم محض مالی مشکلات کی وجہ سے تعلیم سے محروم نہ رہے۔

Posted in UncategorizedTagged
62049

روز چترال کی طرف سے تین اور ہونہار طالبات میں سکالرشپ کے چیکس تقسیم

روز چترال کی طرف سے تین اور ہونہار طالبات میں سکالرشپ کے چیکس تقسیم

پشاور ( نمایندہ چترال ٹایمز ) گزشتہ روز پشاور میں منعقدہ مختلف تقاریب میں چترال سے تعلق رکھنے والی تین با صلاحیت طالبات کو ROSE کی طرف سے ان کی حوصلہ اٖفزائی اور ابتدائی داخلہ فیس کے لئے پچاس پچاس ہزار روپے سکالرشپ کے چیک تقسیم کئے گئے۔ اس سلسلے کی پہلی تقریب میں چترال کوغذی سے تعلق رکھنے والی باصلاحیت طالبہ لائبہ نور دختر نورالبشر جو کہ حافظہ قران بھی ہیں کو چیک دیا گیا ۔ لائبہ حال ہی میں اوپن میرٹ پر خبیر میڈیکل یونیورسٹی پشاور میں ایم ۔بی ۔بی ۔ایس میں داخلہ لینے میں کامیاب ہوئی ہے۔ اس تقریب کے مہمان خصوصی پروینشل پبلک سروس کمیشن کے آفیسر مہربان الہی تھے۔

chitraltimes rose scholorship by inayat jalil


دوسری تقریب میں چترال کوراغ سے تعلق رکھنے والی طالبہ مرورید آفسر بنت علی آفسر کو چیک دیا گیا ہے۔ مرورید بھی ایک باصلاحیت طالبہ ہے جو کہ خیبر میڈیکل یونیورسٹی پشاور میں ایم ۔ بی۔بی۔ ایس میں اوپن میرٹ میں داخلہ لینے میں کامیابی حاصل کی ہے۔ اس تقریب کے خاص مہما ن ہلا ل احمر پاکستان کے ڈپٹی ڈائریکٹر اور نامور شاعر اور ادیب قاضی عنایت جلیل تھے اس موقع پر طالبہ کے والد گرامی علی آفسر بھی موجود تھے۔

تیسری تقریب میں چترال ٹاون مغلاندہ سے تعلق رکھنے والی ایم ۔ ایس ۔ سی مھتمیٹس کی قابل طالبہ آمنہ حسن دختر گل محمد کو بھی مہمانان خصوصی پرائڈ آف چترال کے ایڈمن خلیل احمد اور سٹنڈرڈ ٹیریڈرز کے سی ۔ ای۔او محمد سمیع کے ہاتھوں چیک دیا گیا۔
ان تقاریب میں چیرمین ROSE ہدایت اللہ بھی موجود تھے ۔ انھوں نے مہمانان گرامی سے درخواست کی ہے وہ ROSE کے پیغام کواپنے حلقہ احباب میں پھیلائیں تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگ اس کار خیر میں حصہ ڈال کر چترال میں اعلی تعلیم کو عام کرنے میں اپنا کردار ادا کرے۔ اس موقع پر مہمانان گرامی نے اعلی تعلیم کے میدان میں چترال کے مستحق اور باصلاحیت طلبہ کو معاونت فراہم کرنے پر ROSEکی خدمات کو سراہا اور یقین دلایا کہ وہ بھی اس سلسلے میں اپنا کردار کرینگے تاکہ چترال کاکوئی طالب علم محض مالی مشکلات کی وجہ سے اعلی تعلیم سے محروم نہ رہ جائے۔

chitraltimes rose scholorship by khalil
Posted in تازہ ترین, چترال خبریںTagged
58878

چترال میں اعلی تعلیم کے فروغ کیلئے “روز چترال”کے ساتھ ہرممکن تعاون کرینگے۔ڈاکٹر محمد اظہر

چترال(نمائندہ چترال ٹائمز) چترال میں اعلی تعلیم کے لیے کام کرنے والا ادارہ ”روز چترال” کے چئیرمین ہدایت اللہ کی دعوت پر رجسٹرار نیشنل یونیورسٹی آف میڈیکل سائنسز بریگیڈیر (ریٹائرڈ) ڈاکٹر محمد اظہر شمس نے چترال کا تین روزہ دورہ کیا جس کے دوران انہوں نے بونی، گرم چشمہ اور کیلاش ویلی بمبوریت/ رمبور کا دورہ کیا۔


بمبوریت اور رمبور کے دورے کے دوران ان کے لیے انجنئیر نے ظہرانے کا اہتمام کیا جہاں پر مہمان کو علاقے کے تہذیب وثقافت کے بارے میں بریفنگ دی گئی جبکہ دورہ گرم چشمہ میں مہمان کے ضیافت کا انتظام محمد کرم (سابق آر پی ایم- آغا خان پلاننگ اینڈ ڈیویلپمنٹ پروگرام) اور لوکل کونسل کے پریذیڈنٹ جمیل احمد نے کی اور علاقے کے بارے میں بریفنگ دی۔


بونی کے دورے کے دوران الخدمت فاونڈیشن اپر چترال کے وائس پریذڈنٹ مجتبیٰ لال نے بونی، مستوج اور اپر چترال کے دوسرے علاقوں کے بارے میں مہمان کوتفصیلات سے آگاہ کیا۔ واپسی پر برنس کے عنایت الرحمن ایڈوکیٹ نے مہمان کے اعزاز میں ضیافت کا اہتمام کیا۔
تین روزہ دورے کے احتتام پر مہمان گرامی چترالی قوم کا شکریہ ادا کی اور کہا کہ” چترالی قوم انتہائی تہذیب یافتہ اور مہمان نواز قوم ہے۔ اور اس کے بارے میں نے جو سنا تھا چترال اور چترالیوں کو ویسا ہی پایا۔ اور میری کوشش ہوگی کہ چترال میں اعلی تعلیم کے فروغ کے لیے روز چترال کے جتنی ممکن ہو سکے تعاون کیا جاسکے۔ ”


چونکہ روز چترال ضلع چترال (لوئر اور اپر) میں اعلی تعلیم کے فروغ کے لیے ہمہ وقت کمر بستہ اور کوشاں ہے اور اس سلسلے میں ہونے والے ہر ہر کوشش کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے۔ اس لیے تعلیمی دورے پر آئیے ہوئے مہمانان گرامی کی چترالی کمیونٹی اور خصوصا مذکورہ بالا شخصیات نے جو آو? بھگت کی اس کے لیے روز چترال آپ کا شکر گزار ہے۔ روز چترال کو اس مقام تک پہنچانے میں ہر اس چترالی کا ہاتھ جو چترال اور پاکستان کو تعلیم یافتہ دیکھنا چاہتے ہیں۔

Posted in تازہ ترین, چترال خبریںTagged , ,
51598