Chitral Times

May 29, 2024

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

حکومت صوبے کی یونیورسٹیوں میں سائبر سکیورٹی اور آرٹیفیشل انٹیلی جنس متعارف کروا رہی ہے.صوبائی وزیر برائے اعلیٰ تعلیم مینا خان آفریدی

شیئر کریں:

حکومت صوبے کی یونیورسٹیوں میں سائبر سکیورٹی اور آرٹیفیشل انٹیلی جنس متعارف کروا رہی ہے.صوبائی وزیر برائے اعلیٰ تعلیم مینا خان آفریدی

چترال (چترال ٹائمزرپورٹ) صوبائی وزیر برائے اعلیٰ تعلیم مینا خان آفریدی نے کہا ہے کہ اعلیٰ تعلیم کا فروغ حکومت خیبر پختونخواکی اولین ترجیح ہے، حکومت صوبے کی یونیورسٹیوں میں سائبر سکیورٹی اور آرٹیفیشل انٹیلی جنس متعارف کروا رہی ہے جس کا مقصد طلبہ کو اعلیٰ تعلیم دینے کے ساتھ ساتھ معاشرے کا اہم فرد بنانا ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہری پور یونیورسٹی کے تیسرے کانوکیشن کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا۔کانوکیشن میں پبلک ہیلتھ،’ سوشیالوجی، اکنامکس،فزکس، کیمسٹری، بائیولوجی اور لائیو سٹاک سمیت مختلف شعبہ جات کے طلباء و طالبات کوایسوسی ایٹ ڈگری، بی ایس، ایم فیل اور پی ایچ ڈی کے پروگرام کے حوالے سے تعلیمی اسناد دی گئیں۔اس موقع پر یونیورسٹی کے وائس چانسلر شفیق الرحمن، ایم پی اے ملک عدیل اقبال،یونیورسٹی سٹاف، طلباء و طالبات اور علاقے کے معززین نے شرکت کی۔صوبائی وزیر نے طلبہ کو تلقین کرتے ہوئے کہا کہ آپ کے والدین نے آپ کو تعلیم فراہم کر کے اپنی ذمہ داری پوری کی ہے اب آپ نے اپنی صلاحیتوں کو بروئے کار لا کر پاکستان کے استحکام اور ترقی میں اپنا بھرپور کردار ادا کرنا ہے اور ملک کا نام روشن کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا کے ویژن کے مطابق صوبے میں ہائر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کو مزید بہتر بنایا جا رہا ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ صوبے کی بہت سی یونیورسٹیاں مالی بحران کا شکار ہیں ایسے میں ہری پور یونیورسٹی کا خود کفیل ہونا بہت خوش آئند بات ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ ہری پور یونیورسٹی کے تحقیقاتی مقاصد کے لیے زرعی زمین کے مسئلے کو صوبائی کابینہ کے سامنے لا کر جلدحل کیا جائے گا۔

11 05 2024 KP Photo Minister Higher Education


شیئر کریں:
Posted in تازہ ترین, جنرل خبریںTagged
88662