Chitral Times

Feb 29, 2024

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

ملکی پائیدار معاشی ترقی کیلئے تمام اسٹیک ہولڈرز کو متحد ہوکر آگے بڑھناہوگا، حاجی غلام علی

شیئر کریں:

ملکی پائیدار معاشی ترقی کیلئے تمام اسٹیک ہولڈرز کو متحد ہوکر آگے بڑھناہوگا، حاجی غلام علی
گورنر سے ہزارہ ڈویژن چیمبرآف کامرس اینڈانڈسٹری کے صدرخورشید اعظم خان جدون کی سربراہی میں ہزارہ ڈویژن سے تاجربرادری کے30 رکنی نمائندہ وفد کی گورنرہاوس میں ملاقات

پشاور ( چترال ٹایمز رپورٹ ) گورنرخیبرپختونخواحاجی غلام علی نے کہاہے کہ پاکستان کو دنیا کی مضبوط معیشت بنانے کیلئے ضروری ہے کہ کاروبار اورسرمایہ کاری کیلئے زیادہ سے زیادہ آسانیاں پیدا کی جائیں، بلاشبہ بزنس کمیونٹی معیشت کی ترقی میں کلیدی کردارادا کرتی ہے تاہم موجودہ ملکی معاشی صورتحال میں خیبرپختونخوا سمیت ملک بھر کی بزنس کمیونٹی،کاروباری طبقہ کوبھی اپنا مثبت کردار ادا کرناہوگا۔ اس وقت ملک کی پائیدارمعاشی ترقی کیلئے تمام اسٹیک ہولڈرز کو متفق ہوکر اتحاد سے آگے بڑھنے کی ضرورت ہے، حکومت کی پوری کوشش ہے کہ کاروباری طبقہ کو تمام ترسہولیات کی فراہمی یقینی بنائے۔

ان خیالات کااظہار انہوں نے منگل کے روز گورنرہاوس پشاور میں ہزارہ ڈویژن چیمبرآف کامرس اینڈانڈسٹری کے صدراورسابق رکن صوبائی اسمبلی خورشید اعظم خان جدون کی سربراہی میں ہزارہ ڈویژن سے تاجربرادری کے30 رکنی نمائندہ وفد سے گورنرہاوس میں ملاقات کے دوران کیا۔ وفد میں، سردار شاہ نواز صدر آل ٹریڈرزایبٹ آباد، راجہ حنیف صدر آل ٹریڈرز تحصیل خانپور،منیرخان جدون، محمدطارق تنولی تحصیل ممبر، بٹگرام سے دلدار محمد،تحصیل در بند سے روزی جان،محمدیوسف، حویلیاں سے انجمن تاجران کے صدر افتخارعلی فضل، جنرل سیکرٹری ملک صفدر، محمدزاہد، سجادخان جدون، محمدحنیف اعوان، انجمن تاجران تھاکوٹ سے محمدفلک، سردار ناصرمحمود، ملک عمران اعوان، سید عابدحسین شاہ، ملک صفدر، محمدعامرسمیت حویلیاں، ہری پور، ایبٹ آباد، بٹگرام، بالاکوٹ، مانسہرہ، دربند،ہزارہ ڈویژن کے دیگر علاقوں سے تاجربرادری کے نمائندے شامل تھے۔ وفد نے گورنر کوہزارہ ڈویژن کی تاجربرادری کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا۔ خورشید اعظم خان جدون نے گورنر کو بتایاکہ ہزارہ ڈویژن میں سیاحتی مقامات باالخصوص پوناآبشار اورامبریلا آبشار پر سیاحوں کی سہولیات کی فراہمی کیلئے اقدامات اٹھائے جائیں۔ زمین کے انتقالات کے فیس میں کمی اور بالخصوص خانہ کاشت کے انتقالات بحال کئے جائیں تاکہ عام لوگوں کو فائدہ ہوں۔ انہوں نے بتایاکہ ہزارہ ڈویژن کے اندر آل پاکستان تاجرکنونشن کے انعقادکے خواہاں ہیں جس کے لئے تعاون کی درخواست کی۔گورنرنے اس موقع پر تاجربرادری کی جانب سے پیش کئے گئے مطالبات اور مسائل کے حل کیلئے اپنی جانب سے یقین دلایا اور کہاکہ وہ تاجرکنونشن کیلئے تاریخ تجویز کریں، کنونشن کے انعقاد میں بھرپورتعاون کیاجائیگا۔

وفد سے گفتگو کرتے ہوئے گورنرنے کہاکہ ہمیشہ تاجربرادری کے مسائل کے خاتمے کیلئے اپناکردار ادا کیا ہے۔ عوام اورتاجربرادری کے مسائل ترجیحی بنیادوں پرحل کرنا اپنا فرض سمجھتاہوں۔ اللہ تعالی پر بھروسہ ہے جس کام کا بھی ارادہ کیا ہے اللہ تعالی کی مدد سے کامیابی حاصل کی ہے اور انشاء اللہ تاجربرادری کے مسائل بھی حل ہوجائیں گے۔ فیڈریشن کیلئے اسلام آباد میں زمین، سارک چیمبرکیلئے 50 کروڑ روپے جبکہ تاجربرادری کیلئے صوبے میں ریجنل آفس کے قیام کیلئے 6 کنال زمین کاحصول ممکن بنایا اور اب 10 کروڑ روپے سے اس پر تعمیراتی کام بھی شروع ہے۔ انہوں نے کہاکہ اس وقت مشکل دور سے گزررہاہے۔ ہمیں ریاست اور ریاستی اداروں کے خلاف ہونیوالی سازشوں کے خلاف متحد ہوکراس کاخاتمہ کرناہوگا۔ ریاستی اداروں کو خلاف سازش کرنا ملک کوکمزور کرناہے۔ ہم سب کو متحد ہوکرپاکستان کا دفاع کرناہوگا۔ ریاست کوکمزورکرنے اور انتشار پھیلانے کی سوچ رکھنے والے ملک کے خیرخواہ نہیں ہوسکتے، نوجوانوں میں شائستگی، اقدار اور روایات کا فقدان دیکھ کرافسوس ہوتاہے،بالخصوص نوجوانوں کو متحد ہوکرملک میں منفی سوچ کی بیخ کنی کرنی ہوگی اورشائستگی، روایات اوراقدار کوفروغ دیناہوگا۔آخرمیں وفد میں شامل ہزارہ ڈویژن کے حویلیاں،ایبٹ آباد،بٹگرام اوردیگر تحصیلوں سے تاجرتنظیموں کے سربراہان نے گورنر کو الگ الگ تحائف پیش کئے جبکہ گورنرنے بھی ہزارہ ڈویژن کی چیمبرآف کامرس اینڈانڈسٹری کے صدراورسابق رکن صوبائی اسمبلی خورشید اعظم خان جدون کو گورنرہاؤس کاسوینئرپیش کیا۔

 

علاوہ ازیں گورنر سے لکی مروت سے سابق رکن صوبائی اسمبلی ظفراللہ خان کی سربراہی میں 10 رکنی وفد نے بھی ملاقات کی۔ وفد میں انجینئر احسان اللہ خان،صدر تحریک حقوق لکی مروت محمد برہان خان،سابق وائس چانسلر بہادر خان، پروفیسر اکرام اللہ خان،پروفیسر ڈاکٹر نور محمد اور انجینئر انعام اللہ شامل تھے۔ملاقات میں لکی مروت یونیورسٹی سمیت ضلع میں تعلیمی اور طبی سہولیات سمیت مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا۔ دریں اثناء گورنر سے سابق معاون خصوصی برائے وزیراعلیٰ ملک مہرالہی کی قیادت میں بھی نمائندہ وفد نے ملاقات کی۔ وفد نے گورنر کو تاجربرادری کودرپیش مسائل سے آگاہ کیاجس پر گورنر نے موقع پر ہی متعلقہ حکام کو مسائل کے حل کیلئے احکامات جاری کئے۔ اس کے علاوہ سابق رکن صوبائی اسمبلی سردار اورنگزیب نلوٹھا کی سربراہی میں بھی ایک نمائندہ وفد نے گورنر سے ملاقات کی اور علاقے کے عوام کو درپیش مسائل پرتبادلہ خیال کیا۔ بعدازاں صدیق الرحمن پراچہ کی قیادت میں بھی نمائندہ وفد نے گورنر ہاؤس پشاور میں گورنر سے ملاقات کی اور مختلف عوامی مسائل سے گورنر کو آگاہ کیا جس پر گورنرنے مسائل کے حل کیلئے اپنی جانب سے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔


شیئر کریں: