Chitral Times

May 19, 2024

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

وفاقی حکومت نے توشہ خانہ کیس میں لاہور ہائیکورٹ احکامات کے خلاف دائر اپیل واپس لے لی

شیئر کریں:

وفاقی حکومت نے توشہ خانہ کیس میں لاہور ہائیکورٹ احکامات کے خلاف دائر اپیل واپس لے لی

لاہور( چترال ٹایمزرپورٹ )وفاقی حکومت نے توشہ خانہ کیس میں لاہور ہائیکورٹ احکامات کے خلاف دائر اپیل واپس لے لی۔سپریم کورٹ میں توشہ خانہ تحائف کی نیلامی سے متعلق کیس کی سماعت پر ڈپٹی اٹارنی جنرل نے کہا کہ توشہ خانہ نئے رولز کی روشنی میں اپیل واپس لینا چاہتے ہیں، توشہ خانہ تحائف پر نیا قانون توثیق کے لیے صدرِ پاکستان کے پاس ہے۔عدالت میں جسٹس اطہر من اللّٰہ نے کہا کہ رولز پر نہ جائیں، توشہ خانہ پر پہلے ہی بہت شرمندگی ہو چکی ہے۔جسٹس اطہر من اللّٰہ نے کہا کہ رولز کی بات کریں گے تو سوال اٹھائیں گے کس قانون کے تحت قواعد بنائے ہیں، قواعد کی بات رہنے دیں اپیل واپس لے رہے ہیں تو ایسے ہی لیں۔جسٹس اطہر من اللّٰہ نے کہا کہ لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ آئین اور قانون کے مطابق درست ہے، سب سے زیادہ بولی دینے والا ہی تحفہ خریدنے کا حقدار ہوسکتا ہے۔جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ قانون بیشک نیا بن جائے لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ برقرار رہے گا، ہائیکورٹ نے قرار دیا کہ توشہ خانہ تحائف عوامی ملکیت ہیں۔جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ عوامی ملکیت والے تحائف کی نیلامی میں ہر شخص حصہ لے سکتا ہے، تحائف عوامی ملکیت ہیں تو ممکن نہیں صرف مخصوص افراد ہی خرید سکیں۔وفاقی حکومت نے لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف اپیل کی پیروی کرنے یا نہ کرنے پر وقت مانگ لیا۔ڈپٹی اٹارنی جنرل ملک جاوید نے حکومت سے ہدایات لینے کی استدعا بھی کی۔جسٹس اعجاز الاحسن کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی۔

 

چیئرمین پی ٹی آئی کے 25 دن قید کی تلافی کیا ہوگی، وکیل چیئرمین پی ٹی آئی

اسلام آباد(سی ایم لنکس)چیئرمین پی ٹی آئی کے وکیل شعیب شاہین نے سوال اٹھایا ہے کہ چیئرمین پی ٹی آئی کی جیل میں قید کے دنوں کی تلافی کون کرے گا؟ چیئرمین پی ٹی آی کے 25 دن قید کی تلافی کیا ہوگی۔شعیب شاہین نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ افسوس ہے کہ انصاف کا قتل ہوا جو سب نے دیکھا، آج حق سچ اور آئین قانون کی فتح ہوئی ہے، پی ڈی ایم کی جماعتوں نے ملک کے ساتھ کھلواڑ کیا۔شعیب شاہین ایڈووکیٹ نے کہا ہیحق سچ کی فتح ہوئی ہے، سیاسی جمہوری طاقتوں کو دوبارہ سوچنا ہوگا۔انہوں نے مزید کہا ہے کہ، آج اسلام آباد ہائیکورٹ نے ہمایوں دلاور کا فیصلہ معطل کیا ہے، ہمایوں دلاور نے جلد بازی میں غلط فیصلہ دیا تھا، چیئرمین پی ٹی آئی کو غیر قانونی طور پر گرفتار کیا گیا۔شعیب شاہین کا کہنا تھا کہ چیئرمین پی ٹی آئی کی رہائی کے لیے اٹک جیل جا رہے ہیں۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شعیب شاہین کا کہنا تھا کہ آج غریب عوام بجلی کے بل جمع نہیں کر پا رہے ہیں۔

 

توشہ خانہ تحائف نیلامی کیس: بشریٰ بی بی کی ضمانت قبل از گرفتاری منظور

اسلام آباد( چترال ٹایمزرپورٹ)بشریٰ بی بی کے وکلا انتظار پنجوتھا اور لطیف کھوسہ توشہ خانہ تحائف نیلامی کیس میں احتساب عدالت اسلام آباد میں پیش ہوگئے۔اس موقع پر بشریٰ بی بی نے کمرہ عدالت میں حاضری لگادی جس پر ڈیوٹی جج ابوالحسنات ذوالقرنین نے کہا کہ بشریٰ بی بی نے دستخط کردیے ہوں تو انہیں کمرہ عدالت سے روانہ کردیں۔عدالت نے بشریٰ بی بی کی 5 لاکھ روپے ضمانتی مچلکوں کے عوض 12 ستمبر تک ضمانت قبل از گرفتاری منظور کرلی۔وکیل صفائی لطیف کھوسہ نے کہا کہ آج بشریٰ بی بی کو نیب نے شامل تفتیش کرنے کے لیے بلایا تھا۔لطیف کھوسہ نے کہا کہ چیئرمین پی ٹی آئی سے ملنے بھی بشریٰ بی بی نے اٹک جیل جانا ہے، بشریٰ بی بی کو نیب کو بلانا ہی نہیں چاہیے، خاتون ہیں، سوالات مہیا کردیں، وہ بطورخاتون اول بھی کسی پروگرام میں کبھی نہیں گئیں۔اس موقع پر ڈیوٹی جج ابوالحسنات ذوالقرنین نے تفتیشی افسر یا پراسیکیوٹر کو کمرہ عدالت میں بھی بلایا۔جج ابوالحسنات ذوالقرنین نے کہا کہ آج بشریٰ بی بی دستیاب نہیں، کل نیب چلی جائیں تو مسئلہ تو نہیں؟نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ ابھی معاملہ میری ڈومین میں نہیں، نیب بتائے گی۔عدالت میں وکیل صفائی لطیف کھوسہ نے کہا کہ بشریٰ بی بی چیئرمین پی ٹی آئی سے ملنے جیل گئیں، جیل افسر نے کہا جیل میں کھانا دینا ہے تو 10 ہزار روپے دیں، جیل افسر نے بشریٰ بی بی کو کہا آپ کی مرضی کا کھانا دے دیں گے۔انہوں نے کہا کہ بعد میں الزام لگادیا کہ بشریٰ بی بی نے رشوت دینے کی کوشش کی، بشریٰ بی بی تب سے ڈری ہوئی ہیں۔


شیئر کریں:
Posted in تازہ ترین, جنرل خبریںTagged
78406