Chitral Times

Sep 22, 2023

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

عید الاضحی کے موقع پرنگران وزیر اعلیٰ محمد اعظم خان کا پیغام

Posted on
شیئر کریں:

عید الاضحی کے موقع پرنگران وزیر اعلیٰ محمد اعظم خان کا پیغام

پشاور ( چترال ٹائمز رپورٹ ) نگران وزیراعلی خیبرپختونخوامحمد اعظم خان نے عیدالاضحی کے پرمسرت موقع پر پوری قوم خصوصا ًخیبرپختونخوا کے عوام کو مبارکباد دی ہے۔ عید الاضحی کے موقع پر یہاں سے جاری اپنے ایک پیغام میں وزیراعلی نے کہا ہے کہ عید الاضحی عالم اسلام کے لئے خوشی کا سب سے بڑا تہوار ہے جو ہمیں ایثار ، قربانی، اتفاق اور ایک دوسرے کے لئے جینے کا درس دیتا ہے۔ اس دن سنت ابراہیمی کی ادائیگی ہمیں اللہ تعالی کی رضاجوئی اور دوسروں کے دکھ درد کو بانٹنے کے لئے اپنا سب کچھ قربان کرنے کا درس دیتی ہے۔ انہوں نے عوام خصوصا ًمعاشرے کے صاحب ثروت لوگوں پر زور دیا ہے کہ وہ عیدکے اس پر مسرت موقع پر اپنے ارد گرد نادار اور مستحق لوگوں کو اپنی خوشیوں میں شریک کریں اور یہی اس عظیم اسلامی تہوار کا اصل فلسفہ ہے۔ وزیراعلی نے کہا کہ عیدالاضحی کا یہ اہم دن ہمیں اللہ تعالی کی رضا اور خوشنودی حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ اتحاد، اتفاق ، یگانگت، امن اور سلامتی کا درس دیتا ہے جو دین اسلام کا آفاقی پیغام ہے۔وزیراعلی نے عوام سے خصوصی اپیل کی ہے کہ وہ سنت ابراہیمی کی ادائیگی کے بعد صفائی ستھرائی کا خاص خیال رکھیں اور اس سلسلے میں صفائی عملے کے ساتھ بھر پور تعاون کریں۔ وزیراعلی نے اس موقع پر ملکی سرحدوں کی حفاظت پر مامور سیکیورٹی فورسز کے جوانوں کوبھی عید کی خصوصی مبارکباد دی ہے۔

 

 

دریں آثنا  نگران وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمد اعظم خان نے ضلع ملاکنڈ کی تحصیل بٹ خیلہ میں گھر کے اندر نو افراد کے قتل کا نوٹس لیتے ہوئے پولیس کے اعلی حکام کو واقعے کی تحقیقات کرنے اور قاتلوں کی فوری گرفتاری کے لئے ضروری کاروائی عمل میں لانے کی ہدایت کی ہے۔ یہاں سے جاری اپنے ایک بیان میں وزیر اعلی نے اس واقعے کو انتہائی اندوہناک، سفاکانہ اور قابل مذمت عمل قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ واقعے میں ملوث عناصر قانون کی گرفت سے کسی صورت بچ نہیں سکتے، انہیں جلد گرفتار کر کے قانون کے کٹہرے میں لایا جائے گا اور متاثرہ خاندان کو مکمل انصاف فراہم کرنے کی پوری کوشش کی جائے گی۔ وزیر اعلی نے متاثرہ خاندان سے تعزیت اور دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے جان بحق افراد کی معفرت اور پسماندگان کے لئے صبر جمیل کی دعا کی ہے۔
َِ<><><><><><>


شیئر کریں: