Chitral Times

May 27, 2024

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

پی ٹی آئی کے سینیٹرز کی جانب سے نو مئی پر مذمتی قرارداد سینیٹ میں جمع۔ 9 مئی کے واقعات کی بھرپورمذمت کرتے ہیں۔ سینٹیرفلک ناز چترالی

شیئر کریں:

پی ٹی آئی کے سینیٹرز کی جانب سے نو مئی پر مذمتی قرارداد سینیٹ میں جمع۔ 9 مئی کے واقعات کی بھرپورمذمت کرتے ہیں۔ سینٹیرفلک ناز چترالی

اسلام آباد(چترال ٹائمز رپورٹ) پی ٹی آئی کے سینیٹرز کی جانب سے نو مئی کے واقعات سے متعلق مذمتی قرارداد سینیٹ میں جمع کروادی گئی۔ تحریک انصاف سے تعلق رکھنے والے سینیٹرز نے نو مئی کے واقعات کی مذمت کرتے ہوئے اس حوالے مذمتی قرارداد سینیٹ میں جمع کرادی۔ ان سینیٹرز میں فیصل سلیم، سیمی ایزدی، فلک ناز چترالی، زرقا سہروردی اور دیگر شامل ہیں۔قرارداد جمع کرانے کے بعد سینیٹرز نے پارلیمنٹ ہاؤس میں پریس کانفرنس بھی کی۔ اس موقع پر سینیٹر فیصل سلیم نے کہا کہ 9 مئی کے واقعات کی بھرپور مذمت کرتے ہیں، ہم نے ایوان بالا میں ایک قرار داد جمع کرائی ہے، دفاعی تنصیبات کو نشانہ بنایا گیا، ہم اس پر شرمندہ ہیں۔سیمی ایزدی نے کہا کہ میرا خاندان آرمی سے تعلق رکھتا ہے، ہم تصور بھی نہیں کرسکتے کہ کوئی آرمی تنصیبات پر حملہ کرے، جو لوگ اس واقعے میں ملوث ہیں انہیں واقعی سزا ملنی چاہیے۔

 

سینیٹر فلک ناز نے کہا کہ 9 مئی کا دن میری زندگی کا سب سے منحوس دن ہے، 9 مئی کو پاکستان کے شہدا کی یادگار اور املاک کو نقصان پہنچانے کی کوششوں کو مسترد کرتے ہیں، میرا بھائی فوج میں حاضر سروس ہیں۔ اور اور بھتیجا شہید ہوگیا ہے۔ ڈاکٹر زرقا سہروردی نے کہا کہ 9 مئی کو جو ہوا ہم اس کی شدید مذمت کرتے ہیں، ہم سب سے پہلے پاکستانی ہیں اور اس کے بعد باقی چیزیں ہیں۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ رانا ثنا اللہ نے اس دن پریس کانفرنس کی، جیل میں خواتین کے ساتھ جو ہوا اس کی مذمت کرتے ہیں، اس پر ہم نے ایک قرار دار تیار کر لی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ جو لوگ 9 مئی کے واقعے میں ملوث ہیں انہیں قرار واقعی سزا ہونی چاہیے، بے گناہ لوگوں کو رہا کیا جانا چاہیے اور سول عدالتوں میں مقدمے ہونے چاہیے۔۔۔قرارداد کا متن۔۔۔قرارداد میں کہا گیا ہے کہ عسکری اور تاریخی عمارتوں پر حملوں کی شدید مذمت کرتے ہیں، یہ ایوان 9 مئی کو جی ایچ کیو، جناح ہاؤس پر ہونے والے پْرتشدد حملوں کی شدید مذمت کرتا ہے، جناح ہاؤس لاہور میں کور کمانڈر رہائش پذیر ہیں اسے بھی آگ لگا دی گئی تھی، بانیء پاکستان قائداعظم محمد علی جناح کے قیمتی سامان کو بھی نذر آتش کیا گیا جب کہ شہداء کی یادگاریں بھی جلادی گئیں۔قرارداد میں مزید کہا گیا کہ تاریخی عمارتوں، مساجد اور اسکولوں کو آگ لگائی گئی اور نقصان پہنچایا گیا، یہ ایوان اپنے اداروں کے ساتھ اظہار یک جہتی اورغیر متزلزل حمایت کرتا ہے، مسلح افواج،سیکیورٹی ایجنسیوں اور بڑے پیمانے پر ان واقعات سے متاثر ہونے والے عوام کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے ہیں۔

 

آئی ایم ایف معاہدے پر حکومتی ناکامی کا سوال، وزیر خزانہ طیش میں آ گئے

اسلام آباد(سی ایم لنکس)وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار صحافی کی جانب سے آئی ایم ایف معاہدے کے حوالے سے حکومتی ناکامی کے سوال پر طیش میں آ گئے۔صحافی نے وزیر خزانہ سے سوال کیا کہ کیا آئی ایم ایف سے معاہدہ نہ ہونا آپ کی ناکامی ہے، جس پر انہوں نے جواب دیا کہ کیا پاکستان ڈیفالٹ ہوگیا ہے۔ پاکستان نے ہر انٹرنیشنل پیمنٹ کی ہے۔صحافی نے پوچھا کہ آپ کو پہلی بار مشکل معاشی حالات ملے اور آپ معیشت سنبھال نہیں پارہے، جس پر اسحاق ڈار نے جواب دیا کہ آپ نے جو فیصلہ دینا ہے دے دیں۔ میں بعد میں دیکھ لوں گا۔ بعد ازاں وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے نئے بجٹ، آئی ایم ایف سے متعلق اور مفتاح اسماعیل کے بیان کے حوالے سے سوالوں کا جواب دینے سے گریز کیا اور گاڑی میں روانہ ہو گئے۔قبل ازیں اسلامک کیپٹل مارکیٹ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ کیپٹل مارکیٹ کے فروغ کے لیے اہم اقدامات کیے جا رہے ہیں۔ دنیا میں اسلامک فنانسنگ تیزی سے بڑھ رہی ہے۔ نان مسلم ممالک میں اسلامک فنانسنگ کا رجحان بڑھ رہا ہے۔ اسلامک فنانسنگ کے ذریعے حکومتی مالیاتی ضروریات کو پورا کیا جا سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ رپورٹ کے مطابق 16 ہزار سے زائد ادارے اسلامک فنانسنگ کے لیے ہیں۔ مجموعی طور پر 570 اسلامک بینک اور اسلامک فنانسنگ کی گروتھ 17 فیصد ہے۔ 2026ء تک اسلامک فنانسنگ کا حجم 5 ٹریلین ڈالر تک پہنچ جائے گا۔ پاکستان میں اسلامک فناننس کا حجم 42 ارب ڈالر ہے۔وزیر خزانہ ن ے کہا کہ پاکستان میں 2022ء میں اسلامک فنانسنگ کی گروتھ 29 فیصد ریکارڈ ہوئی۔ پاکستان میں 6 اسلامک بینک اور 16 بینکوں میں اسلامک بینکنگ کی فرنچائزز ہیں۔ پاکستان میں اسلامک بینکنگ اثاثوں کا حجم 7.2 ٹریلین روپے ہے۔ پاکستان میں اسلامک بینکنگ میں ڈپازٹ کا حجم 5.2 ٹریلین روپے ہے۔

 


شیئر کریں:
Posted in تازہ ترین, جنرل خبریںTagged
75077