Chitral Times

May 21, 2024

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے زیرصدارت آل پارٹیز کانفرنس، وفاق کے ذمے 180 ارب روپے واجب الادا ہے، وزیراعظم کے ساتھ ملاقات کرکے واجب الادا بقایاجات کی ادائیگی کا معاملہ اٹھانے کا فیصلہ

شیئر کریں:

وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے زیرصدارت آل پارٹیز کانفرنس، وفاق کے ذمے 180 ارب روپے واجب الادا ہے، وزیراعظم کے ساتھ ملاقات کرکے واجب الادا بقایاجات کی ادائیگی کا معاملہ اٹھانے کا فیصلہ

 

پشاور ( چترال ٹایمزرپورٹ ) خیبرپختونخوا کو درپیش مالی مسائل کے حل کے لئے نگران وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمد اعظم خان کی میزبانی میں بدھ کے روزوزیراعلیٰ ہاوس پشاور میں آل پارٹیز کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس میں صوبے کے سرگردہ سیاسی قائدین نے شرکت کی جنہیں محکمہ خزانہ کی حکام کی جانب سے صوبے کو درپیش مالی مسائل اور وفاق سے جڑے مالی امور پر بریفنگ دی گئی ۔ ان قائدین میں سراج الحق، اکرم خان درانی، آفتاب شیرپاو، ایمل ولی خان، ارباب عالمگیر، امیر مقام ، الحاج شاہ جی گل آفریدی اور دیگر شامل تھے۔ کانفرنس کے شرکاءکو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ رواں مالی سال اب تک مختلف فیڈرل ٹرانسفر کی مد میں وفاق کے ذمے 180 ارب روپے واجب الادا ہے۔ انضمام کے وقت ضم اضلاع کے لئے جو وعدے کئے گئے تھے وہ ابھی تک پورے نہیں ہوئے۔کانفرنس میں صوبے کی آئینی حقوق کے حصول کے لئے تمام سیاسی جماعتوں کے قائدین پر مشتمل جرگہ تشکیل دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ جرگہ اگلے ہفتے اس سلسلے میں وزیراعظم کے ساتھ ملاقات کرکے وفاقی حکومت کے ذمے واجب الادا بقایاجات کی ادائیگی کا معاملہ اٹھائیگا۔

chitraltimes caretaker cm azam khan chairing all parties meeting

کانفرنس کے شرکاءنے سابق فاٹا کے انضمام کو کامیاب بنانے کے لئے ضم اضلاع کے عوام کے ساتھ کئے گئے وعدوں کی تکمیل کوانتہائی اہم قرار دیتے ہوئے اس سلسلے میں اپنی انفرادی و اجتماعی کوششوں کو بروئے کار لانے کا عزم دہرایا۔ سیاسی قائدین نے صوبے کے حقوق کے حصول کے لئے آل پارٹیز کانفرنس بھلانے پر وزیراعلیٰ کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ اس موقع پر آل پارٹیز کانفرنس کا انعقاد وزیراعلیٰ محمد اعظم خان کا ایک احسن اقدام ہے۔ سیاسی قائدین نے صوبے کے آئینی حقوق کے حصول کے لئے سیاسی وابستگیوں سے بالاتر ہوکر اجتماعی کوششوں پر اتفاق کیا اور کہا کہ صوبہ اس وقت مالی مشکلات کا شکار ہے جسے ہم سب نے ملکر مالی بحرانوں سے نکالنا ہے ۔ کانفرنس میں صوبے کو مالی مسائل سے نکالنے کے لئے فوری اقدام کے طورپر صوبے کے مختلف جنگلات میں کئی سالوں سے پڑی ونڈ فال ٹمبر کو فروخت کرنے کی تجویز پیش کی گئی جسے اتفاق کرتے ہوئے معاملہ منظوری کے لئے صوبائی کابینہ کے سامنے رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ۔ تاہم اس بات پر زور دیا گیا کہ اس سلسلے میں مروجہ قواعد و ضوابط پر سختی سے عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے۔

 

کانفرنس کے شرکاءکو بتایا گیا کہ سالہا سال سے جنگلات میں پڑی یہ لکڑی خراب ہورہی ہے۔ جنگلات میں پڑی ونڈ فال ٹمبر کو فروخت کرنے سے صوبائی حکومت کو 100 سے 150 ارب روپے کی آمدنی متوقع ہے اور اس ٹمبر کو فروخت کرنے سے صوبائی حکومت کو خاطر خواہ آمدنی ملنے کے علاوہ مقامی آبادی کو بھی فائدہ پہنچے گا۔ وزیراعلیٰ نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ صوبے کو مالی مشکلات سے نکالنے کے لئے تمام سیاسی قائدین کی تعاون کی اشد ضرورت ہے ۔ امید ہے کہ ان سیاسی قائدین کے تعاون سے صوبے کو مالی مسائل سے نکال لیں گے۔ وزیراعلیٰ نے صوبے کے مفادات کے لئے آل پارٹیز کانفرنس میں شرکت پر سیاسی قائدین کا شکریہ ادا کیا اور امید ظاہر کی کہ وہ صوبے کو موجودہ مالی بحران سے نکالنے کے لئے اپنا اہم کردار ادا کریں گے۔

chitraltimes cm chairing all parties meeting


شیئر کریں:
Posted in تازہ ترین, جنرل خبریںTagged
74861