Chitral Times

May 19, 2024

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

اسلام آباد، پرتشدد کارروائیوں سے کروڑوں کا نقصان، 26 مقدمات درج، 564 افراد زیر حراست

Posted on
شیئر کریں:

اسلام آباد، پرتشدد کارروائیوں سے کروڑوں کا نقصان، 26 مقدمات درج، 564 افراد زیر حراست

اسلام آباد(چترال ٹایمز رپورٹ) وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ہونے والے پرتشدد مظاہروں، توڑ پھوڑ، جلاؤ گھیراؤ اور ہنگامہ آرائی سے 25 کروڑ روپے کی سرکاری املاک کو نقصان پہنچا ہے۔یہ بات آئی جی اسلام آباد کو اسلام آباد میں ہونے والے پرتشدد مظاہروں، توڑ پھوڑ، جلاؤ گھیراؤ اور ہنگامہ آرائی کی بابت پیش کی جانے والے ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ میں کہی گئی ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مظاہرین نے ہنگامہ آرائی، جلاؤ گھیراؤ اور توڑ پھوڑ کر کے 12 گاڑیاں اور 34 موٹر سائیکلیں نذر آتش کیں، ترنول، سنگنای اور رمنا تھانوں پر حملے کیے۔آئی جی اسلام آباد کو پیش کی جانے والی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ہونے والی ہنگامہ آرائی اور پرتشدد مظاہروں سے پولیس کے 71 اور ایف سی کے 11 اہلکا ر زخمی ہوئے ہیں۔وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی پولیس نے اپنے سربراہ کو پیش کردہ رپورٹ میں بتایا ہے کہ احتجاج اورتوڑ پھوڑ پر شر پسند عناصر کے خلاف 26 مقدمات درج کیے گئے ہیں اور پر تشدد کارروائیوں میں ملوث 564 افراد کو حراست میں لیا گیا ہے۔

 

جی ایچ کیو گیٹ پر حملہ؛ 26شرپسندوں کی تصاویر میڈیا کے سامنے پیش

راولپنڈی(سی ایم لنکس)سی سی پی او راولپنڈی نے جی ایچ کیو گیٹ پر حملہ کرنے والے 26 شر پسندوں کی تصاویر میڈیا کے سامنے پیش کر دیں۔پریس کانفرنس کرتے ہوئے سی پی اوسید خالد محمود ہمدانی نے بتایا کہ راولپنڈی پولیس اب تک 17مقدمات میں 264 افراد کو گرفتار کرچکی ہے جبکہ مقدمہ نمبر 708 تھانہ آراے بازار (جی ایچ کیو کیس) میں کل گرفتار شرپسندوں کی تعداد 76ہوگئی ہے۔انہوں نے بتایا کہ گزشتہ روز گرفتار ہونے والے شرپسندوں میں احسان، عبداللہ، ادریس، وقاص، ایاز، قمر الزمان، عمر، علی حسین، فرہاد اللہ، عصمت، ابوبکر، قمر زمان، سجاد منیر، نبیل، صداقت، نعمان، عامر شاہد، فرہاد، شہریار، لعل شاہ، اکمل، عدیل، پیرزادہ شہباز، ارشد، منور اور سید قمر شامل ہیں۔سی پی او راولپنڈی خالد ہمدانی نے کہا کہ ویڈیوز کے ذریعے شناخت کرکے گرفتاریاں کی جا رہی ہیں، ویڈیو میں پیڑول چھڑکتا ہوا نظر آنے والا شخص بھی گرفتار ہے جبکہ ہجوم کو جی ایچ کیو گیٹ کی جانب جانے کے لیے اکسانے والا شخص بھی گرفتار کرلیا گیا۔ گیٹ کو توڑنے والوں کو بھی گرفتار کیا ہے۔پولیس افسر نے بتایا کہ ہنگاموں کے دوران شاہراہیں چلتی رہیں اور اہم تنصیبات کی سیکیورٹی بھی محفوظ رہی، میٹرو بس کا 80 کروڑ روپے کا نقصان ہوا۔ 20کے قریب پولیس گاڑیوں کو نقصان پہنچا۔ پر تشدد کاروائیوں میں ایس ڈی پی او وارث خان اور ایس ایچ او رتہ امرال سمیت 29افراد و جوان زخمی ہوئے۔انہوں نے کہا کہ راولپنڈی میں انٹیلیجنس کا فقدان نہیں تھا، انھوں نے بھرپور تعاون کیا جس کی وجہ سے راولپنڈی میں حالات زیادہ خراب نہیں ہوئے، نقصانات کا تخمینہ حکومت لگا رہی ہے۔ جو جو گھناؤنے جرم میں ملوث ہے انکی تفتیش نہایت جامع ہوگی۔سی پی او کا کہنا تھا کہ ایس ایس پی انوسٹی گیشن زنیرہ اظفر کی سربراہی میں خصوصی کمیٹی حساس اداروں سے متعلق مقدمات کی تحقیقات کر رہی ہے جبکہ پہلے سے جیل بھجوائے گئے 90کے قریب ملزمان کو بھی شواہد کی بنیاد پر ان مقدمات میں قانون کے مطابق طلب کیا جا رہا ہے۔پولیس افسر نے بتایا کہ شرپسندوں کی لیڈر شپ کی گرفتاریوں کے لیے بھی چھاپے مارے جا رہے ہیں، شرپسند ملزمان کو قرار واقعی سزا دلوانے کے لیے تمام قانونی تقاضے پورے کیے جائیں گے۔

 

پنجاب پولیس کو شرپسندوں سے نمٹنے کیلئے مکمل اختیار مل گیا

لاہور(چترال ٹایمزرپورٹ)پنجاب حکومت نے شرپسندوں سے نمٹنے کے لیے پنجاب پولیس کو مکمل اختیار دے دیا۔پولیس کو ہدایت کی گئی ہے کہ امن و امان خراب کرنے والوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے، پولیس پر پتھراؤ کرنے والوں کے خلاف بھی سخت کارروائی کی جائے۔اس حوالے سے نگراں وزیرِ اعلیٰ پنجاب محسن نقوی نے کہا ہے کہ شرپسندوں کے خلاف کارروائی کے لیے پولیس کو مکمل اختیار دے دیا ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ کوئی سیاسی کیس نہیں بلکہ دہشت گردی کا کیس ہے، حملے کے وقت 400 بندے جناح ہاؤس کے اندر اور 3400 باہر تھے۔محسن نقوی کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن کو ہر واقعے کی تفصیل فراہم کریں گے، فیصلہ انہوں نے کرنا ہے، ہم نے الیکشن کمیشن کو خط لکھ دیا ہے کہ وہ آ کر صورتِ حال کا جائزہ لے۔نگراں وزیرِ اعلیٰ پنجاب نے کہا کہ یاسمین راشد بھی اس سارے واقعے کا مرکزی کردار ہیں، کچھ دن لگیں گے لیکن ہم ہر اس دہشت گرد تک پہنچیں گے جو اس میں ملوث ہے۔


شیئر کریں:
Posted in تازہ ترین, جنرل خبریںTagged
74450