Chitral Times

Apr 14, 2024

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

پولیو کا خاتمہ پاکستان اور بالخصوص خیبر پختونخوا کے لئے ایک چیلنج ہے۔ وزیراعلیِ محمد اعظم خان

Posted on
شیئر کریں:

پولیو کا خاتمہ پاکستان اور بالخصوص خیبر پختونخوا کے لئے ایک چیلنج ہے۔ وزیراعلیِ محمد اعظم خان

پشاور ( چترال ٹایمز رپورٹ ) نگران وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمد اعظم خان نے پولیو کے خاتمے کو پاکستان اور بالخصوص خیبر پختونخوا کے لئے ایک چیلنج قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت شراکت دار اداروں کے تعاون سے اس سلسلے میں سنجیدہ اقدامات اٹھا رہی ہے، حکومتی کوششوں کو بارآور بنانے کے لئے ضروری ہے کہ والدین اور اساتذہ سمیت معاشرے کے تمام طبقوں کو اپنا انفرادی اور اجتماعی کردار ادا کرنا ہوگا تاکہ ہم اپنے آنے والی نسلوں کو ایک محفوظ مستقبل دے سکیں۔

وہ گذشتہ روز ایک نجی فلاحی تنظیم روٹری انٹرنیشنل کے زیر اہتمام منعقدہ ڈسٹرکٹ کانفرنس 2023 کی افتتاحی تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کر رہے تھے۔ پولیو وائرس کے خاتمے کے لئے روٹری کے کردار کو سراہتے ہوئے وزیر اعلی نے کہا کہ یہ فلاحی تنظیم پولیو وائرس کے خاتمے کے علاوہ دیگر فلاحی کاموں میں بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہی ہے، سیلاب، زلزلے اور دیگر قدرتی آفات کی صورت میں متاثرین کی مدد کے سلسلے میں بھی روٹری کا کردار قابل ستائش ہے اور امید ہے کہ روٹری آنے والے وقتوں میں بھی اپنی یہ فلاحی سرگرمیاں مزید منظم انداز میں جاری رکھے گی۔

 

اعظم خان نے کہا کہ روٹری گزشتہ 110 سالوں سے تعلیم اور صحت کے ساتھ دیگر سماجی شعبوں میں لوگوں کے مسائل حل کرنے کے لئے ایک مشنری جذبے کے تحت کام کر رہی ہے جس کے لئے اس تنظیم کے تمام ممبران خراج تحسین کے مستحق ہیں۔ وزیر اعلی کا کہنا تھا کہ یہ امر انتہائی خوش آئند ہے کہ روٹری سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں سمارٹ ویلیجز کے قیام پر بھی کام کررہی ہے۔ انہوں نے یقین دلایا کہ نگران صوبائی حکومت اس سلسلے میں تنظیم کو ہر ممکن تعاون فراہم کرے گی۔

تقریب سے روٹری انٹرنیشنل کی صدر جوہیریٹا سولہری ، ڈسٹرکٹ گورنر بیرسٹر عدنان صبور روہلیہ اور ڈائریکٹر روٹری انٹرنیشنل فیض قدوائی کے علاوہ دیگر مقررین نے بھی خطاب کرتے ہوئے کانفرنس کے اعراض و مقاصد پر روشنی ڈالی۔ ملک بھر سے روٹری کلب کے ممبران اور تنظیم کے عالمی عہدیداروں کی ایک کثیر تعداد نے تقریب میں شرکت کی۔


شیئر کریں:
Posted in تازہ ترین, جنرل خبریںTagged
72682