Chitral Times

Apr 21, 2024

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

ترکیہ اورشام کے زلزلہ زدگان کیلئے دل کھول کرعطیات دیں،وزیراعظم

شیئر کریں:

ترکیہ اورشام کے زلزلہ زدگان کیلئے دل کھول کرعطیات دیں،وزیراعظم کی صنعتکاروں،مخیر اور کاروباری افراد سے اپیل

اسلام آباد(سی ایم لنکس)وزیراعظم محمد شہباز شریف نے صنعتکاروں، مخیر اور کاروباری افراد سے ترکیہ اور شام کے زلزلہ زدگان کے لئے دل کھول کر عطیات دینے کی اپیل کی ہے۔جمعرات کو وزیراعظم آفس کے میڈیاونگ سے جاری بیان کے مطابق وزیرِ اعظم محمد شہباز شریف کی زیرِ صدارت ترکیہ اور شام میں زلزلہ زدگان کیلئے امدادی سرگرمیوں کے حوالے سے اجلاس ہوا جس میں زلزلہ متاثرین کے لئے امدادی سرگرمیوں کا جائزہ لیاگیا۔ وزیراعظم نے ہدایت کی کہ سکولوں، کالجوں اور یونیورسٹیوں میں ترکیہ اور شام کے زلزلہ متاثرین کے لئے فنڈ ریزنگ کی جائے۔وزیراعظم نے پاکستان کے مخیر حضرات، صنعتکاروں اور کاروباری افراد سے وزیرِ اعظم فنڈ برائے زلزلہ زدگانِ ترکیہ اور شام میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینے کی اپیل کی۔ وزیر اعظم نے کہا کہ پاکستانی عوام زلزلہ زدگان کیلئے امدادی اشیاء این ڈی ایم اے کے کلیکشن سینٹرز پر جمع کروا سکتے ہیں۔ مصیبت کی اس گھڑی میں پاکستان ترکیہ جیسے اپنے دیرینہ دوست کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑا ہے۔وزیراعظم کی ہدایت پر ترکیہ اور شام کے زلزلہ زدگان کی امدادی کاروائیوں کو منظم کرنے کیلئے اعلی سطح کی کمیٹی تشکیل دی گئی۔ وزیرِ منصوبہ بندی احسن اقبال کی سربراہی میں وزیرِ ریلوے و ہوابازی خواجہ سعد رفیق، وزیرِ اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب کمیٹی کے رکن ہوں گے۔وزیرِ تعلیم رانا تنویر حسین، وزیرِ مذہبی امور مفتی عبدالشکور، چیئرمین این ڈی ایم اے، پاکستان کے ترکیہ اور شام میں سفیر اور معاونِ خصوصی طارق فاطمی بھی کمیٹی کے ممبر ہوں گے۔

 

وزیراعظم نے ہدایت کی کہ کمیٹی کا روزانہ کی بنیادوں پر اجلاس امدادی سامان کی ترکیہ اور شام ترجیحی بنیادون پر ترسیل یقینی بنائے۔پاکستان سے ترکیہ اور شام کے زلزلہ زدگان کیلئے زمینی، فضائی اور سمندری راستوں سے امدادی سامان بھیجا جائے۔ این ڈی ایم اے ہنگامی بنیادوں پر پاکستان کے ہر ضلع میں ترکیہ اور شام کے زلزلہ زدگان کیلئے امداد اکٹھی کرنے کیلئے کلیکشن سینٹر بنائے۔ این ڈی ایم اے تمام صوبائی حکومتوں سے امدادی سرگرمیوں میں تیزی لانے کیلئے رابطے بڑھائے۔ یقینی بنایا جائے کہ ترکیہ اور شام کے زلزلہ زدگان کیلئے بھیجا جانے والا سامان معیاری ہو۔ کمبل، گرم کپڑے، بچوں کی خوراک اور خیموں کا فوری بندوبست کیا جائے۔ترکیہ نے 2010 اور 2022 کے سیلاب میں پاکستانیوں کی ہر طرح سے مدد کی۔محدود وسائل کے باوجود پاکستان اپنے ترک بہن بھائیوں کی امداد میں کوئی کسر نہیں اٹھا رکھے گا۔پاکستان نے امدادی سامان بھجوانے کیلئے ایئر کوریڈور قائم کر دیا ہے۔بہت جلد پاکستان سے امدادی سامان کے ٹرکوں کا قافلہ بھی ترکیہ اور شام روانہ ہو گا۔پاکستان کی طرف سے تیس بستروں پر مشتمل موبائل ہسپتال کیلئے ٹیم اور سامان بھی ترکیہ پہنچ کر کام کر رہا ہے۔ اجلاس کو بریفنگ دی گئی کہ دوسرا موبائل ہسپتال بھی عملے و سامان سمیت روانہ کیا جا رہا ہے۔ وزیراعظم نے کہاکہ ترکیہ کے زلزلہ زدگان کی آواز پاکستانیوں تک پہنچانے کیلئے وزیرِ اطلاعت مریم اونگزیب، ان کی ٹیم اور پاکستانی میڈیا کی کوششیں قابلِ ستائش ہیں۔

 

 

پاکستان ایئرفورس، پی آئی اے اور این ڈی ایم اے کی اس آپریشن میں بھرپور شمولیت بھی لائقِ تحسین ہے۔پاکستان کی ریسکیو ٹیمیں اور پاک فوج کی ٹیمیں بھی ترکیہ میں بہترین طریقے سے امدادی کاروائیوں میں حصہ لے رہی ہیں۔ پوری پاکستانی قوم سے اپیل ہے کہ ترکیہ اور شام میں جس قدر ہو سکے اپنے مسلمان بہن بھائیوں کی مدد کریں۔اجلاس کو ترکیہ میں پاکستان کے سفیر نے زلزلے سے تباہی کے اعدادو شمار کے حوالے سے آگاہ کیا۔ وزیرِ اعظم نیان کی امدادی کوششوں میں بہتر کردار کو سراہتے ہوئے انہیں ہدایت کی کہ وہ ترک حکومت اور پاکستانی اداروں کے درمیاں روابط کو مزید مضبوط کریں۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ پاکستان کی طرف سے نہ صرف امدادی سامان اور ریسکیو ٹیمیں اس وقت ترکیہ اور شام پہنچ چکی ہیں اور امدادی کاروائیوں میں ہاتھ بٹا رہی ہیں جبکہ پی آئی اے مسلسل پروازوں سے لاہور اور اسلام آباد سے ترکیہ اور شام سامان کی ترسیل یقینی بنا رہا ہے۔ مزید برآں آئندہ چند دن میں ٹرکوں کے قافلے بذریعہ ایران امدادی سامان لے کر ترکیہ اور شام روانہ ہوں گے۔اجلاس کو مزید بتایا گیا کہ زلزلہ زدگان کی امداد کیلئے ملک گیر آگاہی مہم جاری ہے۔

 

وزیرِ اعظم کے زلزلہ زدگان کیلئے قائم کردہ فنڈ کے اکاؤنٹ نمبر G-12166 میں امدادی رقوم جمع کروائی جاسکتی ہیں جبکہ دیگر امدادی سامان کا عطیہ این ڈی ایم اے کے کسی بھی کلیکشن سینٹر میں جمع کروایا جا سکتا ہے۔ اس سلسلے میں این ڈی ایم اے ملک بھر میں 13 کلیکشن سینٹرز بنا چکی ہے جبکہ وزیرِ اعظم کی ہدایت پر ان کلیکشن سینٹرز کو ہر ضلع میں توسیع دی جا رہی ہے۔ درکار امدادی سامان میں سرد موسم کی مناسبت سے خیمے، گرم کپڑے، کمبل، موزے، بچوں کی تیار خوارک وغیرہ شامل ہیں۔اجلاس کو پاکستان کی طرف سے بھیجی جانے والی ریسکیو ٹیموں، امدادی سامان اور 30 بستروں پر مشتمل ہسپتال کی موجودہ کارکردگی سے بھی آگاہ کیا گیا۔ زخمیوں کے علاج کیلئے پاکستان کی طرف سے مزید ایک ایک موبائل ہسپتال ترکیہ اور شام روانہ کیا جا رہا ہے۔اجلاس میں وفاقی وزرا اسحاق ڈار، احسن اقبال، مریم اورنگزیب، خواجہ سعد رفیق، معاونِ خصوصی طارق فاطمی، چیئرمین این ڈی ایم اے، اور ترکیہ میں پاکستان کے سفیر کے علاوہ متعلقہ اعلی حکام نے شرکت کی

 


شیئر کریں:
Posted in تازہ ترین, جنرل خبریںTagged
71320