Chitral Times

Dec 6, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

اپر چترال؛ بریب گاوں کے سیلاب متاثرین تاحال امداد کے منتظر ، بریب ڈوک کے مکین گزشتہ تین مہینوں سے محصور، رابطہ سڑک کی بحالی کا مطالبہ

شیئر کریں:

اپر چترال؛ بریپ گاوں کے سیلاب متاثرین تاحال امداد کے منتظر ، بریب ڈوک کے مکین گزشتہ تین مہینوں سے محصور، رابطہ سڑک کی بحالی کا مطالبہ

اپر چترال ( نمایندہ چترال ٹایمز ) اپر چترال کے خوبصورت اور سیب کیلیے مشہور گاوں بریپ کے سیلاب متاثرین تاحال کسی مسیحا کے انتظار میں ہیں ، ایک طرف سیلاب برد مکانات کے مکین کھلے اسمان تلے بے یارومددگار زندگی گزارنے پر مجبور ہیں تو دوسری طر ف وہ خاندان جن کے مکانات تو سیلاب سے بچ گیے ہیں مگر رابطہ سڑک سیلاب برد ہونے کی وجہ سے گزشتہ تین مہینوں سے محصور ہوکر رہ گیے ہیں۔بریب ڈوک کو باقی حصوں سے ملانے والی واحد سڑک جو ۱۹۸۸میں ایک غیر سرکاری ادارے کے زیرانتظام تعمیر ہویی تھی ۲۳اگست کو شیکان گول نالہ میں شدید سیلاب آنے سے مکمل طور پر تباہ ہوچکی ہے اور اب تک علاقے کے درجنوں رہایشی انتہایی مصایب کا شکا رہیں ۔

 

علاقے کے متاثرین نے چترال ٹایمز ڈاٹ کام کو تبایا کہ گزشتہ تین مہینوں سے وہ نہ اپنے مریضوں کو ہسپتال پہنچاسکتے ہیں اور نہ اشیا ضروریہ گھروں تک پہنچانے کا کویی انتظام ہے ، جبکہ سردی ، بارش اور برفباری کا سیزن شروع ہوچکا ہے ۔ انھوں نے مذید بتایا کہ علاقے کے عوام بہت سے کام اپنی مدد آپ کے تحت کرتے رہے ہیں مگر حالیہ تباہ کن سیلاب نے تقریبا دو ہزار فٹ لمبایی پر محیط سڑک کی نام ونشان ختم کرکے رکھ دی ہے جہاں مشینری کے بے غیر بحالی کا کام ناممکن ہے۔ انھوں نے تحصیل چیرمین مستوج، ویلج ناظمین ، منتخب نمایندگان ، غیر سرکاری اداروں اور ضلعی انتظامیہ اپر چترال سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ بریپ راتھینی ڈوک روڈ کیلیے ایکسویٹر مہیا کرکے سڑک کی مرمت اور بحالی برفباری سے پہلے ممکن بنا یا جایے۔

brep flood affected road

brep flood affected road4

brep flood affected road5


شیئر کریں: