Chitral Times

Nov 26, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

ایشیائی ترقیاتی بینک اورترقیاتی شراکت داروں کی حالیہ سیلاب کے بعدامداد، تعمیرنو اوربحالی کی سرگرمیوں میں پاکستان کے ساتھ مکمل معاونت کی یقین دہانی

شیئر کریں:

ایشیائی ترقیاتی بینک اورترقیاتی شراکت داروں کی حالیہ سیلاب کے بعدامداد، تعمیرنو اوربحالی کی سرگرمیوں میں پاکستان کے ساتھ مکمل معاونت کی یقین دہانی

اسلام آباد( چترال ٹایمز رپورٹ )ایشیائی ترقیاتی بینک اورترقیاتی شراکت داروں نے حالیہ سیلاب کے بعدامداد، تعمیرنو اوربحالی کی سرگرمیوں میں پاکستان کے ساتھ مکمل معاونت کی یقین دہانی کرائی ہے جبکہ وفاقی وزیربرائے اقتصادی امورسردارایازصادق نے کہاہے کہ حکومت معیشت اوراسلوب حکمرانی میں بہتری کیلئے اصلاحات کے عمل کوآگے بڑھانے میں پرعزم ہے۔انہوں نے یہ بات ایشیائی ترقیاتی بینک کے کثیرالجہتی شراکت داروں کے 55 ویں سالانہ اجلاس کے موقع پربینک کے سینئرانتظامیہ کے ساتھ بات چیت اورملاقاتوں میں کہی۔سردارایازصادق پاکستانی وفد کی قیادت کررہے ہیں جبکہ وفدمیں سیکرٹری اقتصادی امورکاظم نیاز، ایشیائی ترقیاتی بینک میں پاکستان کے نمائندہ اورایگزیکٹوڈائریکٹرنوراحمد اوروزارت اقتصادی امورکے سینئیرافسران شامل ہیں۔ایشیائی ترقیاتی بینک گروپ کے صدرماساتوگوآساکاوا کے ساتھ ملاقات میں گروپ کے صدرنے پاکستان میں حالیہ شدیدبارشوں اورسیلاب سے ہونے والے نقصان پرگہرے رنج وغم کااظہارکیا۔انہوں نے وفاقی وزیراورپاکستانی وفدکوامداد، ریسکیو اورتعمیرنووبحالی کی سرگرمیوں میں بینک کی مکمل معاونت کایقین دلایا۔

 

انہوں نے پاکستان میں بالخصوص بجلی، گورننس اورمالیاتی شعبہ جات میں اصلاحات کیلئے کوششوں کوبھی سراہا اورکہا کہ اس سے پاکستان کواپنی نموکی استعدادسے بھرپوراستفادہ کرنے اورسیلاب کے بعدجلدبحالی کاموقع ملیگا۔وفاقی وزیرنے پاکستان کیلئے مسلسل امداد اورمعاونت پرایشیائی ترقیاتی بینک کاشکریہ اداکیا اور یقین دلایا کہ موجودہ حکومت معیشت اور گورننس کے کلیدی شعبوں میں اصلاحات کے نفاذ کے لیے پرعزم ہے۔انہوں نے وزیراعظم پاکستان کی طرف سے گروپ کے صدر کو حالیہ سیلاب کے تباہ کن اثرات کو دیکھنے کے لیے پاکستان کا دورہ کرنے کی دعوت بھی دی۔پاکستانی وفدنے بینک کے نائب صدرآپریشنز ون شاکسین چن اوربینک کے وسطی اورمغربی ایشیا کیلئے ڈائریکٹرجنرل ایوجین زوکوف سے بھی ملاقات کی۔اجلاس میں پاکستان میں ایشیائی ترقیاتی بینک کے جاری اورمستقبل کے منصوبوں کاجائزہ لیاگیا۔وفاقی وزیرنے پاکستان کی معیشت پردباؤ کوکم کرنے کیلئے ایشیائی ترقیاتی بینک کے کاونٹرسائکلیکل سپورٹ فیسلیٹی (سی ایس ایف) کی سہولت کیلئے برق رفتاراقدامات پر بینک کی انتظامیہ کی کاوشوں کوسراہا۔بینک کے نائب صدرآپریشنز ون شاکسین چن نے اس بارے میں وفاقی وزیرکومکمل معاونت کی یقین دہانی کرائی اورانہیں بتایاکہ ایشئین انفراسٹرکچر ڈولپمنٹ بینک اس سہولت کے تحت اضافی 50 کروڑ ڈالر کی فراہمی میں پرعزم ہے۔

 

شاکسین چن نے ایشیائی ترقیاتی بینک، عالمی بینک اوراقوام متحدہ کے اداروں کی مشترکہ تجزیاتی رپورٹ کے بعد تعمیرنو اوربحالی کیلئے پاکستان کی معاونت میں اضافہ پراپنی رضامندی کااظہارکیا۔ پاکستانی وفد نے اے ڈی بی کے ایگزیکٹو بورڈ کے اراکین کے ساتھ گول میز اجلاس کا اہتمام بھی کیا، جس میں 40 سے زائد ممالک کی نمائندگی کرنے والے 9 ایگزیکٹو ڈائریکٹرز نے شرکت کی۔اس موقع پر سیکرٹری اقتصادی امورنے پاکستان میں حالیہ شدید سیلاب، حکومت کے فوری ردعمل، امدادی سرگرمیوں اورمستقبل کے چیلنجوں کے بارے میں ایک جامع پریزنٹیشن دی۔ انہوں نے اس ضمن میں نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی، نیشنل فلڈ ریسپانس اینڈ کوآرڈینیشن سینٹر، مسلح افواج، صوبائی حکومتوں، بین الاقوامی ترقیاتی شراکت داروں اور غیر سرکاری اور سول سوسائٹی کی تنظیموں کے کردار پر بھی روشنی ڈالی۔انہوں نے بورڈ کے ممبران پر سیلاب کے بعد تعمیر نو اور بحالی پر توجہ دینے اورپاکستان کی معاونت پرزوردیا۔ سیکرٹری اقتصادی امورنے بجلی، مواصلات، ہاوسنگ، تعلیم اور صحت کے شعبوں میں موسمیاتی لحاظ سے موزوں بنیادی ڈھانچہ کو ترقی دینے پر بھی زور دیا۔وفاقی وزیرنے بورڈ کے ممبران کو موجودہ حکومت کی طرف سے ٹیکسوں اورتوانائی کے شعبوں میں اصلاحات اوراس ضمن میں کئے گئے مشکل فیصلوں سے آگاہ کی۔انہوں نے کہاکہ حکومت معاشی طورپرکمزورطبقات کی معاونت کررہی ہے، بے نظیرانکم سپورٹ پروگرام اوردیگراقدامات کے زریعہ معاشی طورپرکمزورطبقات کو مسلسل معاونت فراہم کی جارہی ہے۔ بورڈ کے ممبران نے پاکستانی عوام کے ساتھ ہمدردی اوریکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے تعمیر نو کی کوششوں اور پاکستان میں ایشیائی ترقیاتی بینک کے اقدامات میں اضافہ کا یقین دلایا۔

 

حکومت کا آئی ایم ایف کی رضامندی کے بعد پیٹرول کی قیمت میں کمی کا فیصلہ

اسلام آباد(سی ایم لنکس) پٹرولیم مصنوعات پر عائد لیوی ٹیکس تین ماہ کیلئے منجمد کرنے پر اصولی رضامندی ظاہر کی ہے، پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ردوبدل کا اعلان کل ہوگا۔ذرائع کا کہنا ہے کہ ابھی ا?ئی ایم ایف کے ساتھ کوئی حتمی معاہدہ نہیں۔ آئی ایم ایف معاہدے کے تحت جنوری 2023 تک پٹرول پر پٹرولیم لیوی 50روپے فی لیٹر تک بڑھانا ہے۔واضح رہے کہ پیٹرول پر اس وقت 37.42 روپے فی لیٹر کے لگ بھگ پیٹرولیم لیوی عائد ہے جب کہ ہائی اسپیڈ ڈیزل پر 7.35 روپے فی لیٹر کے لگ بھگ ہے، اس کے علاؤہ مٹی کے تیل اور لائٹ ڈیزل آئل پر دس دس روپے فی لیٹر پٹرولیم لیوی عائد ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ مٹی کے تیل اور لائٹ ڈیزل آئل فی لیٹر پٹرولیم لیوی بتدریج بڑھا کر پچاس روپے کی جائے گی۔


شیئر کریں: