Chitral Times

Oct 4, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

ایس ایچ اوتھانہ شغوردلشادپری کی ڈیوٹی سے ہم مطمعین ہیں، ان کے خلاف سوشل میڈیا پروپیگنڈہ کی ہم پرزور مذمت کرتے ہیں۔ سابق ضلعی نائب ناظم سلطان شاہ

شیئر کریں:

ایس ایچ اوتھانہ شغوردلشادپری کی ڈیوٹی سے ہم مطمعین ہیں، ان کے خلاف سوشل میڈیا پروپیگنڈہ کی ہم پرزور مذمت کرتے ہیں۔ سابق ضلعی نائب ناظم سلطان شاہ

چترال (نمائندہ چترال ٹائمز) چترال سے سابق ضلعی نائب ناظم سلطان شاہ نے کہا ہے کہ ایس ایچ او تھانہ شعور مس دلشاد پری انتہائی مستعدی سے ڈیوٹی سرانجام دے رہی ہیں، اورہم انکی ڈیوٹی سے مطمعین ہیں جبکہ چند شر پسند عناصر انکی ڈیوٹی سے خائف ہیں اور سوشل میڈیا پر ان کے خلاف فضول پروپیگنڈہ کررہے ہیں جنکی ہم شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔کریم آباد سے چترال ٹائمز ڈاٹ کام سے ٹیلی فونک گفتگو کرتے ہوئے سلطان شاہ نے کہا کہ جب سے دلشاد پری نے بطور ایس ایچ اوشغور چارچ سنبھالا ہے تب سے علاقے کے شریف لوگ سکون کا سانس لے رہے ہیں جبکہ چند شرپسند عناصر کو یہ ہضم نہیں ہورہا اور وہ اوچھے ہتکھنڈے پر اُتر ائیے ہیں اور بے لگام سوشل میڈیا کا سہار ا لینے پر مجبور ہیں۔

سلطان شاہ نے کہا کہ شغور پولیس اور ایس ایچ او کے خلاف وہ افراد بول رہے ہیں جو کسی نہ کسی طرح پولیس کو مطلوب ہوتے ہیں یا ا ُن چند افراد کی پشت پناہی پر مجبور ہیں جو کسی نہ کسی طرح پولیس کو مطلوب ہوتے ہیں۔ جبکہ شریف اور عام شہریوں کا پولیس یا ایس ایچ او سے کوئی شکایت نہیں۔ انھوں نے کہا کہ ایس ایچ او انتہائی شریف النفس ہونے کے ساتھ علاقے کی رسم ورواج سے بھی بخوبی واقف ہے۔ اور یہ شغوراور کریم آباد ویلی کیلے اعزاز کی بات ہے کہ چترال کی تاریخ میں پہلی دفعہ کسی خاتون سب انسپکٹر نے شغور تھانے کا بطور اسٹیشن ہاوس آفیسر چارچ سنبھالا ہے۔ اور انکی تعیناتی سے ابتک کسی شریف شہری نے شکایت نہیں کی ہے اور نہ ایس ایچ او نے کسی شریف شہری کو بے جا تنگ کیاہے۔ تاہم یہ انکی ڈیوٹی میں شامل ہے کہ وہ شراب کے آڈوں، منشیات فروشوں اور غیر قانونی کاموں میں ملوث افراد کی خبر گیری کرے۔یہی وجہ ہے کہ انھوں نے چارچ سنبھالتے ہی منشیات فروشوں اور شراب و چرس کے عادی افراد کے خلاف بلا امتیاز کاروائی کررہی ہے  اور ان کا گھیرا تنگ کیا ہوا ہے۔ جس پر گنتی کے چند شرپسند افراد ان کے خلاف آواز اُٹھارہے ہیں اوربعض فیس بکی دانشوروں کے زریعے ان کے خلاف پروپیگنڈہ کرنے پر مجبور ہیں۔ جس کی علاقے کے شریف شہری سب مذمت کرتے ہیں۔

سابق ضلعی نائب ناظم نے ڈی پی او چترال سونیہ شمروز سے مطالبہ کیا ہے کہ ایس ایچ او کے خلاف فضول پروپیگنڈہ کا نوٹس لیں اور شرپسند افراد کے خلاف قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے۔ انھوں نے ایف آئی اے کے سائبر کرایم برانچ کے ذمہ داروں سے بھی اپیل کی ہے کہ ایسے افراد کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے جو سوشل میڈیا میں بے لگام ہوگئے ہیں اور شریف شہریوں کی عزت سے کھیلنے کی کوشش کرتے ہیں۔


شیئر کریں: