Chitral Times

Oct 1, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

وزیراعلیِ خیبرپختونخوا نے مختلف علاقوں میں بارشوں اور سیلاب سے ہونے والی نقصانات پر افسوس کااظہار، فوری امدادی کارروائیاں شروع کرنے کی ہدایت

Posted on
شیئر کریں:

وزیراعلیِ خیبرپختونخوا نے مختلف علاقوں میں بارشوں اور سیلاب سے ہونے والی نقصانات پر افسوس کااظہار، فوری امدادی کارروائیاں شروع کرنے کی ہدایت

پشاور ( چترال ٹایمز رپورٹ )وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے ڈی آئی خان کے مختلف علاقوں میں بارشوں کے نتیجے میں سیلاب سے ہونے والی نقصانات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ضلعی انتظامیہ اور ریسکیو اداروں کو متاثرہ علاقوں میں فوری امدادی کارروائیاں شروع کرنے کی ہدایت کی ہے اور کہا ہے کہ متاثرہ علاقوں میں ریسکیو اور ریلیف سرگرمیاں فوری طور پر شروع کئے جائیں۔ انہوں نے انتظامیہ کو مزید ہدایت کی ہے کہ متاثرہ علاقوں میں رابطہ سڑکوں کی فوری بحالی کے لئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات اٹھائے جائیں اور متاثرہ آبادیوں کو درکار امداد کی فراہمی کے لئے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائے جائیں، صوبائی حکومت اس مقصد کے لئے تمام درکار وسائل فراہم کرے گی۔ حالیہ بارشوں کے پیش نظر وزیر اعلیٰ نے صوبے کے دیگر تمام اضلاع کی انتظامیہ کو بھی الرٹ رہنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بارشوں کی وجہ سے کسی بھی ممکنہ ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لئے انتظامیہ اور ریسکیو ادارے الرٹ رہیں ، سیلاب یا کسی بھی ناگہانی صورتحال کی صورت میں بروقت اور فوری امدادی کاروائیوں کو یقینی بنایاجائے اور کسی بھی ہنگامی صورتحال میں ممکنہ جانی و مالی نقصانات کو کم سے کم کرنے کے لئے انتظامات کئے جائیں۔
دریں اثناءوزیر اعلیٰ نے صوبے کے مختلف اضلاع میں بارشوں کی وجہ سے مختلف واقعات کے نتیجے میں تین قیمتی انسانی جانوں کے ساتھ ساتھ مال و املاک کو پہنچنے والی نقصانات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے جاں بحق افراد کے لواحقین سے تعزیت کی ہے۔ انہوں نے متاثرہ خاندانوں سے دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے مرحومین کی مغفرت اور پسماندگان کے لئے صبر جمیل کی دعا کی ہے جبکہ ان واقعات میں زخمی ہونے والوں کی جلد صحت یابی کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے یقین دلایا ہے کہ صوبائی حکومت متاثرین کو تنہا نہیں چھوڑے گی اور ان کی ہر ممکن معاونت کی جائے گی۔

 

 

وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان نے صوبے کے تمام تعلیمی بورڈز کے تحت امتحانات کے موجودہ نظام میں اصلاحات کرنے اور اسے دور جدید کے تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کے لئے احسن اقدام کے طور پر ایک کمیٹی تشکیل دیدی

پشاور ( چترال ٹایمز رپورٹ ) وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان نے صوبے کے تمام تعلیمی بورڈز کے تحت امتحانات کے موجودہ نظام میں اصلاحات کرنے اور اسے دور جدید کے تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کے لئے احسن اقدام طور پر ایک کمیٹی تشکیل دی ہے جو 90 دنوں میں اس حوالے سے حتمی سفارشات پر مشتمل رپورٹ پیش کرے گی۔ کمیٹی کی رپورٹ کی روشنی میں صوبے کے تمام تعلیمی بورڈز کے تحت امتحانات کے جملہ امور میں یکسانیت پیدا کرنے کے لئے اقدامات اٹھائے جائیں گے۔کمیٹی بورڈز کے لیگل فریم ورکس، مالیاتی امور، امتحانات لینے کے مجموعی طریقہ کار اور دیگر معاملات کا تفصیلی جائزہ لے گی۔ کمیٹی پورے صوبے کے لئے ایک مرکزی بورڈ اور اس کے تحت ریجنل فیسیلیٹیشن سنٹرز کے قیام سے متعلق ممکنات پر بھی غور کرے گی۔ صوبائی وزیر برائے ابتدائی و ثانوی تعلیم مذکورہ کمیٹی کے سربراہ ہونگے۔کمیٹی کے دیگر ممبران میں سیکرٹری تعلیم، اسپیشل سیکرٹری سی ایم سکریٹریٹ، چئیرمین فیڈرل بورڈ، ڈائریکٹر ایجوکیشن خیبر پختونخوا، پشاور، کوہاٹ، ایبٹ آباد اور مردان بورڈز کے چئیرمین اور دیگر حکام شامل ہیں۔

 


شیئر کریں: