Chitral Times

Sep 26, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

وزیر اعلیِ کا صوبے کے تمام اضلاع میں موسلادھار بارشوں کے تناظر میں تمام متعلقہ محکموں کو کسی بھی ہنگامی صورت حال سے نمٹنے کیلیے تیاررہنے کی ہدایت 

شیئر کریں:

وزیر اعلیِ کا صوبے کے تمام اضلاع میں موسلادھار بارشوں کے تناظر میں تمام متعلقہ محکموں کو کسی بھی ہنگامی صورت حال سے نمٹنے کیلیے تیاررہنے کی ہدایت

پشاور ( چترال ٹایمز رپورٹ ) وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے جمعرات کے روز صوبائی دارلحکومت پشاور اوردیگر اضلاع میں موسلادھار بارشوں کے تناظر میں تمام متعلقہ محکموں اور اداروں کو کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے ہمہ وقت تیار رہنے کی ہدایت کی ہے ۔ وزیراعلیٰ نے تمام ٹی ایم ایز ، پی ڈی اے ، ضلعی انتظامیہ اور ریسکیو کودن میں 24 گھنٹے الرٹ رہنے، صورتحال پر کڑی نظر ر کھنے اور کسی بھی ناخوشگوار واقعے کی صورت میں بروقت کاروائی یقینی بنانے کی ہدایت کی اور کہاکہ بارشوں کی وجہ سے ممکنہ جانی و مالی نقصانات کو کم سے کم کرنے کیلئے ضروری اقدامات اُٹھائے جائیں۔ اُنہوںنے ہدایت کی کہ سڑکوں اور گلی کوچوں میں کھڑے بارش کے پانی کی نکاسی کیلئے بھی بروقت کاروائی عمل میں لائی جائے۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ بارشوں کے دوران عوام کے جان و مال کا تحفظ اور بوقت ضرورت فوری ریلیف کی فراہمی ترجیح ہونی چاہیئے ۔ اس مقصد کیلئے پی ڈی ایم اے ، ضلعی انتظامیہ ، ٹی ایم ایز ، ریسکیوسروس اور دیگر تمام متعلقہ ادارے اپنی ذمہ داریاں بروقت نبھائیں۔

 

وزیراعلیِ خیبرپختونخوا محمود خان کے زیر صدارت محکمہ آبنوشی کا اجلاس

پشاور ( چترال ٹایمز رپورٹ ) وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے متعلقہ حکام کو صوبہ بھر میں سرکاری وسائل سے قائم شدہ تمام ٹیوب ویلز کا مکمل ڈیٹا اکھٹا کرنے اور غیر فعال ٹیوب ویلز کی تفصیلات فراہم کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ جن ٹیوب ویلز سے علاقے کے لوگوں کوپینے کے پانی کی فراہمی نہیں ہو رہی ہے اور جن ٹیوب ویلز کا غلط استعمال ہو رہا ہے ا ن کے خلاف کاروائی عمل میں لائی جائے اور غیر فعال ٹیوب ویلز کو فعال بنانے کیلئے فوری اقدامات ا ±ٹھائے جائیں۔وزیراعلیٰ نے بعض مقامات پر سرکاری وسائل سے لوگوں کی چاردیواریوں کے اندر قائم ٹیوب ویلز سے عوام کو پینے کے پانی کی عدم فراہمی کا نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ حکام کو ایسے تمام ٹیوب ویلز اور واٹر ٹینکس کی تفصیلات بھی فراہم کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے واضح کیا کہ یہ ٹیوب ویلز کسی فرد واحد کیلئے نہیں بلکہ عوام کیلئے قائم کئے گئے ہیں جن کا فائدہ عوام کو پہنچنا چاہیئے۔

یہ ہدایات ا نہوں نے جمعرات کے روز محکمہ آبنوشی کے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے جاری کیں۔ وزیراعلیٰ کے پرنسپل سیکرٹری امجد علی خان ، سیکرٹری پبلک ہیلتھ انجینئرنگ ادریس خان، ڈائریکٹر پرفارمنس مینجمنٹ اینڈ ریفارمز یونٹ، محکمہ بلدیات کے نمائندوں اور دیگر متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔ اجلاس میں صوبہ بھر میں پینے کے صاف پانی کی فراہمی سے متعلق ا مو ر اور مسائل کا جائزہ لیاگیااور اس سلسلے میں عوامی شکایات کے فوری ازالے کے لئے متعلقہ حکام کو ضروری احکامات جاری کئے گئے۔ ا ±نہوںنے صوبہ بھر میں غیر فعال ٹیوب ویلز کو فعال بنانے اور بعض سرکاری ٹیوب ویلز پر قبضے چھڑانے کیلئے ایک مہینے کے اندر ایکشن پلان ترتیب دینے اور ا ±س ایکشن پلان پر عمل درآمد کیلئے ٹائم لائنز مقرر کرکے ا ±س پر عملی پیشرفت یقینی بنانے کی ہدایت کی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ حکومت سرکاری وسائل خرچ کرکے ٹیوب ویلز اس لیے قائم کرتی ہے تاکہ لوگوں کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی ممکن ہو سکے لہٰذا اس مقصد کے تحت بنائے گئے ٹیوب ویلز کا فائدہ عوام تک پہنچنا چاہیئے۔محمود خان نے اس مقصد کیلئے اضلاع کی سطح پر کمیٹیاں تشکیل دینے کی بھی ہدایت کی۔ا ±نہوںنے مزید ہدایت کی کہ جن ٹیوب ویلز سے پانی کی فراہمی کیلئے ڈسٹری بیوشن نیٹ ورک موجود نہیںوہاں ڈسٹری بیوشن نیٹ ورک کیلئے ا سکیم تیار کی جائے اور اس بات کو کو یقینی بنایا جائے کہ بغیر ڈسٹری بیوشن نیٹ ورک کے ٹیوب ویلز قائم کرنے کا کوئی بھی منصوبہ منظور نہیں کیا جائے گا۔ مزید برآں وزیراعلیٰ نے صوبہ بھر میں محکمہ آبنوشی کے تمام انفراسٹرکچر کے بہتر انتظام و انصرا م کیلئے جی آئی ایس میپنگ پر کام کی رفتار تیز کرنے کی ہدایت کی ہے۔
<><><><><>

 

پشاور ( چترال ٹایمز رپورٹ ) وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے جمعرات کے روز صوبائی دارلحکومت پشاور اوردیگر اضلاع میں موسلادھار بارشوں کے تناظر میں تمام متعلقہ محکموں اور اداروں کو کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے ہمہ وقت تیار رہنے کی ہدایت کی ہے ۔ وزیراعلیٰ نے تمام ٹی ایم ایز ، پی ڈی اے ، ضلعی انتظامیہ اور ریسکیو کودن میں 24 گھنٹے الرٹ رہنے، صورتحال پر کڑی نظر ر کھنے اور کسی بھی ناخوشگوار واقعے کی صورت میں بروقت کاروائی یقینی بنانے کی ہدایت کی اور کہاکہ بارشوں کی وجہ سے ممکنہ جانی و مالی نقصانات کو کم سے کم کرنے کیلئے ضروری اقدامات اُٹھائے جائیں۔ اُنہوںنے ہدایت کی کہ سڑکوں اور گلی کوچوں میں کھڑے بارش کے پانی کی نکاسی کیلئے بھی بروقت کاروائی عمل میں لائی جائے۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ بارشوں کے دوران عوام کے جان و مال کا تحفظ اور بوقت ضرورت فوری ریلیف کی فراہمی ترجیح ہونی چاہیئے ۔ اس مقصد کیلئے پی ڈی ایم اے ، ضلعی انتظامیہ ، ٹی ایم ایز ، ریسکیوسروس اور دیگر تمام متعلقہ ادارے اپنی ذمہ داریاں بروقت نبھائیں۔


شیئر کریں: