Chitral Times

Feb 28, 2024

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

مویشیوں میں لمپی سکن کے کیسز سامنے آنے کے بعد انتظامیہ نے و یٹرنری ٹیموں کی مدد سے ابتک 1 لاکھ جانوروں کو ویکسین لگائی جا چکی ہے۔ بیرسٹرسیف 

Posted on
شیئر کریں:

مویشیوں میں لمپی سکن کے کیسز سامنے آنے کے بعد انتظامیہ نے ویٹرنری ٹیموں کی مدد سے ابتک 1 لاکھ جانوروں کو ویکسین لگائی جا چکی ہے۔ بیرسٹرسیف

لمپی سکن ڈیزیز ویکسینیشن کے لئے 150 فیلڈ سٹاف کو تربیت دی گئی جو موقع پر پہنچ کر مویشیوں کی ویکسینیشن کریں گے۔بیر سٹر محمد علی سیف
ابتک 1 لاکھ جانوروں کو ویکسین لگائی جا چکی ہے۔صوبائی معاون خصوصی برائے اطلاعات وتعلقات عامہ

پشاور (چترال ٹائمز رپورٹ) وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے اطلاعات وتعلقات عامہ بیر سٹر محمد علی سیف نے مویشیوں میں لمپی سکن کی روک تھام کے حوالے سے اقدامات کی تفصیلات جاری کی ہیں اس سلسلے میں جاری کردہ رپورٹ کے مطابق لمپی سکن کے کیسز سامنے آنے کے بعد انتظامیہ نے و یٹرنری ٹیموں کی مدد سے ابتک 1 لاکھ جانوروں کو ویکسین لگائی جا چکی ہے۔ خیبرپختونخوا میں لمپی سکن کا پہلا کیس 22 اپریل 2022 کو ڈی آئی خان میں سامنے آیا تھا۔ لمپی سکن کی روک تھام کے لیے (LSD) لمپی سکن ڈیزیز موبائل ایپ بھی متعارف کرائی گئی ہے۔ موبائل ایپ کے ذریعے عوام مویشیوں میں لمپی سکن ڈیزیز کی شکایت درج کر ا سکتے ہیں جس پر فیلڈ سٹاف کی ٹیمیں موقع پر پہنچ کر مویشیوں کو ویکسین لگائیں گے۔ لمپی سکن ڈیزیز ویکسینیشن کے لئے 150 فیلڈ سٹاف کو تربیت دی گئی جو موقع پر پہنچ کر مویشیوں کی ویکسینیشن کریں گے۔فیلڈ سٹاف کو 50 موبائل ویٹنری کلینک بھی مہیا کئے گئے ہیں اس کے علاوہ محکمہ لائیو سٹاک نے مویشیوں میں لمپی سکن کی روک تھام کے لیے پروانشل ٹاسک فورس بھی قائم کی ہے۔ مزید برآں بین الاضلاعی اور بین الصوبائی سرحدوں پر 56 چیک پوسٹیں قائم کی گئی ہیں جہاں پر جانوروں کی ویکسینیشن جاری ہے۔اس ضمن میں بین الاضلاعی 30 اور بین الصوبائی 26 ویکسین چیک پوسٹیں قائم کی گئی ہیں۔


شیئر کریں: