Chitral Times

Jul 6, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

 سائل اینڈ واٹر کنزرویشن خیبر پختونخوا کے زیراہتمام گمبس بروز میں  پراجیکٹ کا افتتاح

Posted on
شیئر کریں:

 سائل اینڈ واٹر کنزرویشن خیبر پختونخوا کے زیراہتمام گمبس بروز میں  پراجیکٹ کا افتتاح

 

چترال (نمایندہ چترال ٹایمز  ) ڈائریکٹر جنرل سائل اینڈ واٹر کنزرویشن خیبر پختونخوا محمد یاسین خان وزیر نے کہا ہے ۔ کہ ہم چترال کو گرین بیلٹ میں تبدیل کرنے کی بھر پور کوشش کر رہے ہیں ۔ لیکن یہ تب ہی ممکن ہے۔ کہ عوام ادارے کے ساتھ بھر پور تعاون کریں ۔ جہان بھی ادارے اور عوام مل کر کام کرتےہیں۔ وہاں اہداف حاصل کرنے مشکل نہیں ہوتے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز گمبس قلعہ بروز میں شہزادہ میجر ریٹائرڈ شمس الدین کی رہائش گاہ پر سائل اینڈ واٹر کنزرویشن کے زیر اہتمام منعقدہ ایک غیر معمولی تقریب سے خطاب کرتے ہوئےکیا ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ چترال زرخیز علاقہ ہے ۔ اور قدرت نے جہان اس کے پھلوں میں خاص مٹھاس رکھ دی ہے ۔ وہاں لوگوں میں محبت و احترام کوٹ کوٹ کر بھرا ہوا ہے ۔ یہی وجہ ہے ۔ کہ صوبے کے 34 اضلاع کا ڈی جی ہونے کے باوجود ہماری بھر پور توجہ چترال کی طرف ہے ۔ اور میں ذاتی طور پر چترال کی وزٹ کرتا رہتا ہوں ۔ ڈائریکٹر جنرل نے کہا۔ کہ پہلے چترال کا بہت تھوڑا بجٹ ہوا کرتا تھا ۔ جسےاب کروڑوں تک بڑھا دیا گیاہے ۔ اور یہ ڈائریکٹر سائل اینڈ واٹرکنزرویشن چترال امین الحق اور انجینئر مجیب کی چترال میں بہترین کارکردگی اور پر خلوص کوششوں کا نتیجہ ہے۔

 

ڈی جی نے کہا ۔ کہ ہمارا ادارہ کثیر المقاصد کام کرتا ہے ۔ جس میں زمین کی ،ٹیریسنگ ، مائیکرو واٹر شیڈ ، حفاظتی پشتوں اور چیک ڈیمز کی تعمیر ، پھلدار و فارسٹ پلانٹس ، گراس اگاکر زمین کو سرسبز اور کار آمد بنانا شامل ہیں ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ ہم موجودہ پراجیکٹ کے تحت چترال میں ڈھائی ہزار ایکڑ زمین ہموار کر سکتے ہیں۔ اور اسی طرح کا ورلڈ بینک پراجیکٹ بھی چترال میں لانچ ہو رہا ہے۔ جس سے چترال کو بہت زیادہ فوائد ملیں گے ۔ ڈائریکٹر سائل اینڈ واٹر کنزرویشن چترال امین الحق نے اپنے خطاب میں ڈی جی کی چترال پر خصوصی توجہ پر ان کا شکریہ ادا کیا ۔ اور کہا ۔ کہ پراجیکٹ کے تحت چترال کو بہت زیادہ فوائد ملے ہیں۔ اور فوائد ملنے کا یہ سلسلہ بدستور جاری ہے ۔ چترال میں زمین کی کمی ہے ۔ اور جہاں زمین دستیاب ہے ۔ وہاں بارشوں کی کمی کے باعث پانی کے مسائل ہیں ۔ اس لئے ہماری کوشش ہے ۔ کہ دستیاب کم پانی کو سٹور کرکے زرعی کے مقاصد کیلئے استعمال کریں ۔

 

انہوں نے کہا ۔ کہ کسی بھی پراجیکٹ پر اسی فیصد اخراجات ادارہ برداشت کرتا ہے ۔ اور بیس فیصد اخراجات مالک کو برداشت کرنے پڑتےہیں۔ اور گمبس کے موجودہ پراجیکٹ پر مجموعی طور پر 60 لاکھ روپے خرچ کئے جائیں گے ۔ جن میں سے 10 لاکھ مالک زمین برداشت کرے گا ۔ ہم ڈھلوان زمین کو زیرو پر لے آئیں گے ۔ اور ٹیرسنگ کےساتھ واٹر پانڈ ، چیک ڈیم ، پروٹیکشن وال تعمیر کریں گے ۔ اور مختلف قسم کے پھلدار اور جنگلی پودے لگانےکے ساتھ گھاس اگائیں گے ۔ اور تین سال تک اس کی نگرانی کے بعدمالک زمین کے حوالے کریں گے ۔ مالک زمین شہزادہ سلمان شمس نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ڈائریکٹر جنرل سائل اینڈ واٹر کنزرویشن خیبر پختونخوا محمد یا سین خان وزیر اور ڈائریکٹر چترال آفس امین الحق کا شکریہ ادا کیا ۔ کہ انہوں نے ذاتی دلچسپی سے اس پراجیکٹ کو منظور کیا ۔ اور اب اس پر کام شروع ہو چکا ہے ۔ انہوں نے ڈی جی کی اس پراجیکٹ کے افتتاح کیلئے پشاور سے تشریف لانے پر ان کا شکریہ ادا کیا ۔ تقریب سے پروفیسر حفیظ ، ڈائریکٹر ایگریکلچر ڈاکٹر نصیر ، انجینئر منظور نے بھی خطاب کیا ۔ڈائریکٹر جنرل نے بعد آزان منصوبے کی نقاب کشائی کرکے کام کا افتتاح کیا ۔

chitraltimes soil and water conservation project inaguration gombas broze chitral2 chitraltimes soil and water conservation project inaguration gombas broze chitral1

chitraltimes soil and water conservation project inaguration gombas broze chitral3


شیئر کریں: