Chitral Times

Oct 1, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

جوغور گول روڈ کسی فرد واحد کے لئے نہیں رہا ہے بلکہ یہ 2600گھرانوں کا مشترکہ منصوبہ ہے۔عمائدین

Posted on
شیئر کریں:

جوغور گول روڈ کسی فرد واحد کے لئے نہیں رہا ہے بلکہ یہ 2600گھرانوں کا مشترکہ منصوبہ ہے۔عمائدین

چترال (نمائندہ  چترال ٹایمز) ویلج کونسل جوغور کے چیرمین سجاد احمدخان نے جوغور گول روڈ کے لئے فنڈز مختص کرنے پر ڈپٹی کمشنر لویر چترال انور الحق اور ایم پی اے مولانا ہدایت الرحمن کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہاہے کہ سڑک کا یہ منصوبہ 2600گھرانوں کے لئے موت وحیات کا درجہ رکھتا ہے اور احسان کو عمر بھر نہیں بھول سکیں گے۔

ہفتے کے روز علاقے کے عمائیدین عزن علی شاہ، فضل اکبر، محمد ولی، شربڑانگ، قاری فضل رازق، خورشید احمد، ولی الرحمن، فیض الرحمن، عبداللہ، عبیدالرحمن، عطاء الرحمن، حاجی محمد اور دوسروں کی معیت میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ جوغور گول روڈ کسی فرد واحد کے لئے نہیں رہا ہے بلکہ یہ 2600گھرانوں کا مشترکہ منصوبہ ہے جسے استعمال کرکے وہ ابپاشی اور ابنوشی کے پانی کے علاو ہ گرمائی چراگاہ سے استفادہ کرتے ہیں اور قبر کے لئے پتھر تک وہ اس سڑک سے لاتے ہیں جبکہ بعض عناصر کے کہنے اور اکسانے پر اس عظیم منصبوبے کو متنازعہ بنانے کی کوشش کررہے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ یہ چند گنے چنے افراد جوغور گول کے اندر رہائش پذیر 81گھرانوں کو فراموش کرتے ہیں جوکہ قدیم الایام سے یہاں آباد ہیں اور انہیں سڑک کی سہولت سے محروم کرنا انتہائی ذیادتی ہوگی جوکہ اس ترقی یافتہ دور میں بھی اپنے مریضوں کو کندھوں پر اٹھا کرمین روڈ پر لانے پر مجبور ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اس سڑک سے گزر کر ٹریکٹر اور ٹرالی اور مزدا گاڑیاں کئی سالوں تک پتھر اور دوسرے مواد لاتے رہے اور یہ بات بھی ان ریکارڈ ہے کہ عوام جوغور کے مطالبے پر جوغور گول روڈ کے لئے شہزادہ محی الدین نے 10لاکھ روپے مختص کئے تھے اور یہ بات بھی حقیقت ہے کہ بعض گھرانے اس سڑک کی زمین کے لئے حکومت سے زمین کا معاوضہ بھی لے چکے ہیں اور چند گھرانے اب بھی زمین کے معاوضے کے لئے عدالت میں ہیں۔ عمائیدین جوغور نے مزید کہاکہ اس روڈ کو فرد واحد کا منصوبہ قرار دے کر چند سازشی لوگ جوغور سے باہر عوام اور حکومتی حلقوں کو تاریکی میں رکھنے کی مذموم کوشش کررہے ہیں لیکن ان کی اصلیت بہت جلد ہی عوام کے سامنے آشکارا ہوگا۔

انہوں نے کہاکہ جوغور گول روڈ عوامی روڈ ہے جسے چند گھرانے بند نہیں کرواسکتے اور نہ ہی حکومت یا ایم پی اے کو اس سلسلے میں بلیک میل کرسکتے ہیں جوایک طرف تو زمین کی معاوضے کا مطالبہ کررہے ہیں تو دوسری طرف روڈ کی مخالفت کرکے اسے چادر اور چاردیواری کے لئے خطرہ قرار دے رہے ہیں اور ایم پی اے اور ڈی سی کے خلاف پریس کانفرنس کررہے ہیں۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیاکہ ان شرپسندوں کے خلاف قانونی کاروائی کیا جائے اور جوغور گول روڈ کو جلد از جلد پایہ تکمیل کو پہنچایا جائے۔

chitraltimes vc jughoor press confrence

chitraltimes vc jughoor press confrence2


شیئر کریں: