Chitral Times

Jan 30, 2023

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

چترال میں ناروالوڈ شیڈنگ؛ جماعت اسلامی کے پارلیمانی لیڈرعنایت اللہ نے توجہ دلاو نوٹس اسمبلی سکریٹریٹ جمع کرادیا

شیئر کریں:

چترال میں 12گھنٹے ناروالوڈ شیڈنگ سے عوام کو درپیش مشکلات کامعاملہ صوباٸی اسمبلی سیکرٹریٹ پہنچ گیا۔

جماعت اسلامی کے پارلیمانی لیڈر عنایت اللہ خان اور سراج الدین خان نے توجہ دلاونوٹس اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کرادیا۔

پشاور ( چترال ٹایمز رپورٹ ) پیر کےروز خیبر پختونخوا اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کراٸے گٸے توجہ دلاونوٹس میں جماعت اسلامی کے اراکین صوباٸی اسمبلی عنایت اللہ خان اور حاجی سراج الدین خان نے موقف اپنایا کہ اپر اور لوئر چترال رقبے کے لحاظ سے صوبہ خیبر پختونخوا کے سب سے بڑے اضلاع ہیں۔جہاں پر حکومتی انفراسٹرکچر اور سہولیات انتہائی ناکافی ہیں۔اس وقت چترال کے دونوں اضلاع کے عوام حکومتی اداروں پیسکو اور پیڈو کی آپس کے چپقلش کے ہاتھوں شدید گرمی کے اس موسم میں 12سے 16گھنٹے کی طویل لوڈ شیڈنگ سے دوچار ہیں۔توجہ دلاونوثس کے متن میں کہا گیا ھے کہ چترال میں بجلی پیدا کرنے کا بڑا منصوبہ گولن گول 2018 ء میں مکمل ہونے کے بعد عوام کے شدید احتجاج پر حکومت نے اپر چترال کو بجلی کی سپلائی توکردی لیکن چونکہ چترال میں پیڈو کے زریعے بجلی فراہم کی جاتی ہے جو کہ صوبائی حکومت کا ادارہ ہے اور پیسکو کا پیڈو کے ذمہ بقایاجات بڑھ کر 11کروڑ یونٹ تک پہنچ گئے ہیں چونکہ پیڈو کا فی یونٹ سستا اور پیسکو کا یونٹ مہنگا ہے اس لئے مذکورہ دونوں اداروں کے مابین جاری چپقلش میں چترال کے عوام پس رہے ہیں کیونکہ پیسکو نے اس وقت چترال میں لائن لاسز کی آڑ میں 12سے 16گھنٹے کی طویل لوڈ شیڈنگ کے زریعے عوام کا جینا دوبھر کردیا ہے۔
یہ ایک انتہائی اہم اورعوامی نوعیت کا معاملہ ہے لہذا حکومت اس انتہائی اہم مسلے کا فوری نوٹس لیں اور ضلع چترال میں 12سے 16گھنٹے ناروالوڈ شیڈنگ سے چترال کے دونوں اضلاع کے عوام کو درپیش شدید مشکلات اور تکالیف کا فوری ازالہ کریں۔

chitraltimes chitral loadsheeding ji inayatullah pa


شیئر کریں: