Chitral Times

Sep 26, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

عید کے بعد چترال میں سیاحوں کا رش، کالاش ویلی کے  بند سڑکوں کو کھولنے میں مقامی پولیس نے مدد کی

شیئر کریں:

عیدالفطر کے بعد چترال میں ملکی سیاحوں کا رش ، کالاش ویلی کے  بند سڑکوں کو کھولنے میں مقامی پولیس نے مدد کی

چترال (نمائندہ چترال ٹایمز ) عیدالفطر کے بعد چترال میں ملکی سیاحوں کا رش دیکھنے میں آرہا ہے جوکہ ملک کے مختلف صوبوں اور شہروں سے یہاں خوشگوار موسم کا لطف اٹھانے پہنچ رہے ہیں جبکہ ان سیاحوں کا سوفیصد کالاش وادی بمبوریت ضرور جاتے ہیں۔ چترال شہر میں مختلف ہوٹل مالکان اور ٹیکسی ڈرائیور وں کا کہنا ہے کہ اس سال عید کے موقع پر چترال آنے والے سیاحوں کی تعداد پچھلے کئی سالوں کے مقابلے میں کہیں ذیادہ ہے اور انہوں نے یہ بات بھی خصوصی طور پر نوٹ کی ہے کہ ان سیاحوں میں سے 80فیصد سے ذیادہ کے پاس موٹر کار، جیپ یا موٹر سائیکل کی شکل میں اپنی ٹرانسپورٹ کا انتظام موجود ہے جبکہ اچھی خاصی تعداد کے پاس کیمپنگ کا سامان بھی دیکھے گئے ہیں۔ عید الفطر کے بعد وقفے وقفے سے بارش کی وجہ سے موسم میں خوشگوار تبدیلی آنے کی وجہ سے سیاح بہت ہی لطف اندوز ہورہے ہیں اور علاقے کی خوبصورتی کی تعریف کرتے ہوئے سنے جارہے ہیں۔ چترال شہر میں ہوٹلوں اور ریسٹورانوں کی اکثریت کی بندش سے سیاحوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا تھا جس کی وجہ سے ہوٹل اور ریسٹوران کھلنا شروع ہوگئے ہیں۔ کالاش وادی بمبوریت اور رمبور کو جانے والی سڑک پر ٹریفک کا زبردست رش دیکھنے میں آرہا ہے جبکہ وادیوں میں ہوٹلوں پر بھی رش بڑھ گئی ہے۔ تینوں کالاش وایوں میں 12مئی سے شروع ہونے والی چیلم جوشٹ فیسٹول کی وجہ سے ان وادیوں میں گہماگہمی پہلے سے زیادہ بتائی جا تی ہے۔

 

گذشتہ رات شدید بارش کے دوران بھی سیاحوں کے قافلوں کا کالاش ویلیز جانے کا سلسلہ جاری رہا ۔لیکن راستے میں برساتی نالوں میں سیلاب آنے کے سبب سیاحوں کی گاڑیاں پھنس گئیں ۔ تاہم پولیس اور مقامی لوگوں کے بھر پور تعاون کی بدولت روڈ جزوی طور پر روڈکھول دیے گئے ہیں ۔ رمبور ویلی کے ایک مقامی سوشل ورکر فتح اللہ نے میڈیا کو بتایا ۔ کہ رمبور ویلی میں کئی مقامات پر برساتی نالوں میں سیلاب آنے سے روڈ بند ہوئےتھے ۔ لیکن ایس ایچ او تھانہ رمبورمجیب الرحمن نے بارش کی پرواہ نہ کرتےہوئےاپنے جوانوں کو ساتھ لے کر مقامی لوگوں کے تعاون سے روڈ صاف کئے ۔ اور پھنسے ہوئے سیاحوں کو ہوٹلوں تک پہنچانے میں مدد دی ۔ جبکہ مقامی لوگوں نے کئی سیاحوں کو اپنے گھروں میں پناہ دے کر ان کی مہمان نوازی کی ۔ ذرائع کے مطابق کالاش ویلی بمبوریت میں بھی تنگ سڑک کی وجہ سے گاڑیاں پھنسی رہیں۔ اور قریب ہوٹل کی سہولت نہ ہونے کی بنا پر لشٹ بوخت ، ودوس اور پہلواناندہ گاوں کے باسی سیاحوں کو بارش سے بچانے کیلئے اپنے گھروں میں لے گئے ۔ اور مقامی روایت کے مطابق ان کی مہمان نوازی کی ۔ خصوصا سیاح فیملیوں کو ترجیحی طور پرگھروں میں پناہ دی گئی۔ اور ان کا مکمل خیال رکھا گیا ۔

حالیہ عید کے دوران ایون پولیس اور ٹریفک وارڈنز نے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا ۔ ڈی ایس پی ایون سرکل عتیق الرحمن کی سربراہی میں تھانہ ایون ، بمبوریت اور رمبور کے آفیسرز اور جوان الرٹ رہے ۔ اور سیاحوں کو رہنمائی اور بھر پورمدد فراہم کرکے ان کے سفر کو خوشگوار بنانے میں اہم کردار ادا کیا ۔ خصوصا ضلعی ٹریفک انچارج ادریس احمد بیگ کی قیادت میں ٹریفک کے جوانوں نے دن رات ایک کرکے اور بغیر آرام اور کھانےپینے کے خدمات انجام دیں۔ جس پر عوام نے انہیں خراج تحسین پیش کیا ہے ۔ عوامی حلقوں نے عید الفطر کے موقع پر کامیاب حکمت عملی ترتیب دینے پر ڈی پی او چترال سونیہ شمروزخان اور پولیس کے دیگر آفیسران و جوانوں کی تعریف کی ہے ۔ اور آئی جی خیبر پختوخوا، ڈی آئی جی ملاکنڈ ، ڈپٹی کمشنر لوئر چترال اور ڈی پی او چترال سے پر زور مطالبہ کیا ہے ۔ کہ جتنے بھی پولیس آفیسران اور جوان خصوصا ٹریفک وارڈنز عیدکی خوشیوں میں اپنے گھر والوں سے دور سڑکوں پر گردو غبار کے ماحول مںں کھانے پینےاور آرام سے محروم دن رات احسن طریقے سے سیاحوں اور مقامی لوگوں کیلئے خدمات انجام دی ہے۔ ان کو خصوصی ایوارڈز و انعامات سے نواز کر حوصلہ افزائی کی جائے ۔

chitraltimes bumburait road eid tourist

chitraltimes bumburait road police clearing2


شیئر کریں: