Chitral Times

Oct 1, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

صحت کارڈ پروگرام بند ہونے کی افواہوں میں کوئی صداقت نہیں۔ وزیر صحت و خزانہ تیمور جھگڑا

شیئر کریں:

صحت کارڈ پروگرام بند ہونے کی افواہوں میں کوئی صداقت نہیں، کوئی مائی کا لال اسے ختم نہیں کرسکتا۔وزیر صحت و خزانہ تیمور جھگڑا

صحت کارڈ پروگرام وفاقی حکومت کے قطعی محتاج نہیں۔ صحت کارڈ کو ضروری قانونی تحفظ دینے کیلئے اگلے کابینہ اجلاس میں قانون سازی کی منظوری دیں گے، قانون سازی سے خیبر پختونخوا میں یونیورسل ہیلتھ کوریج لازمی ہوگی: وزیر صحت و خزانہ تیمور جھگڑا کا ٹوئیٹر پر اظہار خیال

پشاور (چترال ٹائمز رپورٹ) سوشل میڈیا اور عوامی حلقوں میں صحت کارڈ پروگرام کے اختتام سے متعلق افواہوں پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے خیبر پختونخوا کے وزیرصحت و خزانہ تیمور سلیم جھگڑا نے کہا ہے کہ صحت کارڈ پروگرام بند ہونے کی افواہوں میں کوئی صداقت نہیں، یہ صوبے کا اپنا پروگرام ہے، کوئی مائی کا لال اسے ختم نہیں کرسکتا۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار سماجی رابطوں کے ویب سائٹ ٹوئٹر اپنے ٹویٹس میں کیا۔ ان کے مطابق صحت کارڈ پروگرام وفاقی حکومت کے قطعی محتاج نہیں۔ صحت کارڈ کو ضروری قانونی تحفظ دینے کیلئے اگلے کابینہ اجلاس میں قانون سازی کی منظوری دی جائیگی۔ اس قانون سازی سے خیبر پختونخوا میں یونیورسل ہیلتھ کوریج لازمی ہوگی۔اپنے ٹویٹس میں وزیرصحت کا کہنا ہے کہ خیبر پختونخوا میں صحت کارڈ سے اب تک تقریباً 1.1 ملین افراد مستفید ہوچکے ہیں، انشاء اللہ اس پروگرام کو مزید مضبوط اور بہتر بنائینگے۔ صرف مارچ میں خیبر پختونخوا کے 80,000 سے زیادہ شہریوں نے صحت کارڈ سے استفادہ کیا۔وفاقی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے وزیر خزانہ نے اپنے ٹویٹ میں بتایا کہ و فاقی حکومت نے عمران خان کے اس اہم اقدام پر خاموشی اختیار کی ہے جو اب 150 ملین سے زیادہ پاکستانیوں کو مفت صحت سہولیات فراہم کررہاہے، پاکستان کے رہائشیوں اور صحت سہولیات فراہم کرنے والوں کو بھی یقین ہونا چاہئے کہ اس پروگرام کو واپس لینا اب ممکن نہیں۔


شیئر کریں: