Chitral Times

Oct 4, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

خیبرپختونخوا میں ٹیکسوں کی آن لائن ادائیگی اور گاڑیوں کی آن لائن رجسٹریشن سسٹم کا اجراء

Posted on
شیئر کریں:

شہری اب گھر بیٹھے موبائل فون پر ٹیکسوں کی ادائیگی کے علاوہ گاڑیوں کی رجسٹریشن بھی کرواسکتے ہیں،
صوبائی حکومت عوام کو زیادہ سے زیادہ سہولیات کی فراہمی کے لئے ٹھوس اقدامات کر رہی ہے، وزیراعلیٰ
انفارمیشن ٹیکنالوجی کے موثر استعمال کے ذریعے محکموں کی استعداد کار کو بہتر بنانے کے علاوہ سرکاری امور میں شفافیت کو یقینی بنایا جارہا ہے، وزیراعلیٰ
سرکاری محکموں میں بد عنوانی کے تمام راستوں کو بند کررہے ہیں، محمود خان

پشاور ( چترال ٹایمز رپورٹ ) لوگوں کو بہتر خدمات اور سہولیات کی فراہمی کے لئے ایک اور اہم قدم کے طور پر خیبرپختونخوا حکومت نے محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کے تحت مختلف ٹیکسوں کی آن لائن ادائیگی کے نظام اور گاڑیوں کی آن لائن رجسٹریشن سسٹم کے علاوہ گاڑیوں کے یونیورسل نمبر پلیٹس کا اجراءکردیا ہے۔ ٹیکسوں کی آن لائن ادائیگی اور گاڑیوں کی آن لائن رجسٹریشن کے لئے “زما کے پی” کے نام سے ایک جدید موبائل ایپلیکیشن متعارف کرائی گئی ہے جس میں ابتدائی طور پر اربن پراپرٹی ٹیکس کی آن لائن ادائیگی کے علاوہ گاڑیوں کی آن لائن رجسٹریشن کی سہولت بھی موجود ہے۔ یاد رہے کہ زما کے پی ایپ کے ذریعے گاڑیوں کے ٹوکن ٹیکس کی آن لائن ادائیگی کی سہولت پہلے سے موجودہے۔ اس ایپ کے ذریعے لوگ اپنے گھر بیٹھے موبائل فون کے ذریعے گاڑیوں کی رجسٹریشن کے علاوہ ٹیکسوں کی ادائیگی کرسکتے ہیں اور اس طرح انہیں دفاتر کے چکر لگانے اور قطاروں میں انتظار کرنے سے چھٹکارا حاصل ہوگا۔اگلے مرحلے میں اس موبائل ایپ کو دیگر محکموں کے ٹیکسوں کی آن لائن ادائیگی کے لئے بھی استعمال کیا جا سکے گا۔ گاڑیوں کی یونیورسل نمبر پلیٹس اور سنٹرلائزڈ رجسٹریشن سسٹم کے تحت اب گاڑیوں کی رجسٹریشن اب الگ الگ اضلاع کی بجائے صرف صوبے کے نام پر ہوگی اور گاڑیوں کی نمبر پلیٹس پر اب ضلع کے نام کی بجائے صرف صوبے کانام درج ہوگا۔

ٹیکسوں کے آن لائن پیمنٹ سسٹم اور گاڑیوں کی آن لائن رجسٹریشن سسٹم اور یونیورسل نمبر پلیٹس کے اجراءکے سلسلے میں ایک تقریب منگل کے روز وزیراعلیٰ ہاو¿س میں منعقد ہوئی جس کے مہمان خصوصی وزیراعلیٰ محمود خان تھے۔ تقریب سے اپنے خطاب میں وزیر اعلیٰ نے ٹیکسوں کی ادائیگی کے آن لائن سسٹم اور سنٹرلائزڈ موٹر وہیکل رجسٹریشن سسٹم کے اجراءکوصوبائی حکومت کے اصلاحاتی اقدامات کی ایک کڑی اور ایک اہم اقدام قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ سسٹم صوبے کی عوام کو بہتر خدمات اور سہولیات کی فراہمی میں سنگ میل ثابت ہونگے۔ سرکاری محکموں میں اصلاحات اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کے مو¿ثر استعمال کو اپنی حکومت کی ای گورننس پالیسی اور اصلاحاتی ایجنڈے کا حصہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان اصلاحات کا مقصد سرکاری محکموں کی استعداد کار کو بہتر بنانا، لوگوں کو زیادہ سے زیادہ سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنانا اور محکموں کے جملہ امور میں شفافیت کو یقینی بناکر بدعنوانی کے راستوں کوبندکرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے وزیراعظم عمران خان کے وژن کے مطابق شروع دن ہی سے سرکاری محکموں میں اصلاحاتی اقدامات کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے جن میں پٹوار اصلاحات، لینڈریکارڈ کی کمپیوٹرائزیشن ، ای گورننس پالیسی کے تحت اقدامات، ایز آف ڈوئنگ بزنس پالیسی کے تحت اقدامات ، سٹیزن فسیلیٹیشن سنٹرز کا قیام، آسان انصاف مراکز کا قیام اور دیگر اقدامات شامل ہےں۔ محمود خان کا کہنا تھا کہ صوبائی حکومت سرکاری محکموں میں بدعنوانی کے تمام راستوں کو بند کرنے کے لئے پر عزم ہے جس کے لئے مڈل مین کے کردار کو ختم کرنا ضروری ہے اور صوبائی حکومت اس مقصد کے لئے تعمیراتی محکموں میں ای ٹینڈرنگ اور ای بڈنگ کا ایک یکساں نظام متعارف کروارہی ہے اور اگلے مالی سال سے صوبائی حکومت کے تمام محکموں میں خریداری اور ٹھیکوں کے معاملات ای ٹینڈرنگ ،ای بڈنگ اورای پروکیورمنٹ کے ایک مرکزی نظام کے تحت کئے جائیں گے۔ سنٹرلائزڈ موٹر وہیکل رجسٹریشن سسٹم کو لوگوں کی سہولیات کی فراہمی اور صوبے کی آمدن بڑھانے کے لئے ایک اہم قدم قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس سسٹم کے اجراءسے اب صوبے کے لوگ ملک کے دیگر علاقوں میں گاڑیوں کی رجسٹریشن کرنے کی بجائے صوبے ہی میں اپنی گاڑیوں کی رجسٹریشن کروائیں گے جس سے صوبائی حکومت کی آمدن میں خاطر خواہ اضافہ ہوگا۔ انہوں نے کہا صوبائی حکومت نے گاڑیوں کی رجسٹریشن فیس صرف ایک روپےہ مقرر کی ہے عوام کو چاہیئے کہ وہ حکومت کی اس سہولت سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھائیں اور صوبے میں اپنی گاڑیوں کی رجسٹریشن کروائیں۔
ٹیکسوں کی آن لائن رجسٹریشن سسٹم ، سنٹرلائزڈ موٹر وہیکل رجسٹریشن سسٹم اور گاڑیوں کے یونیورسل نمبر پلیٹس کے اجرا پر محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کی ٹیم کو مبارکباد دیتے ہوئے وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ ان سسٹم پر حقیقی معنوں میں عملدرآمد کو مقررہ ٹائم لائنز کے مطابق یقینی بنانے کے لئے اقدامات اٹھائے جائیں۔ ان سسٹم کے اجرا کے لئے ٹیکنیکل معاونت فراہم کرنے پر انہوں نے شراکت داروں سب نیشنل گورننس اور فارن کامن ویلتھ ڈیویلپمنٹ آفس کا شکریہ ادا کیا۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ کے مشیر خلیق الرحمن نے محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن میں اصلاحاتی اقدامات پر پیشرفت پر تفصیلی روشنی ڈالی۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سیکرٹری ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن سید حیدر اقبال نے ٹیکسوں کی ادائیگی اور گاڑیوں کی رجسٹریشن کے آن لائن نظام کے مختلف پہلوو¿ں سے آگاہ کیا۔ بعد ازاں وزیراعلیٰ نے کمپیوٹر کا بٹن دبا کر آن لائن پیمنٹ سسٹم اور آن لائن رجسٹریشن سسٹم کا اجراءکیا۔ اس موقع پر سابق صوبائی وزیر قانون امتیاز شاہدقریشی نے آن لائن موٹر وہیکل رجسٹریشن سسٹم کے تحت اپنی گاڑی کی رجسٹریشن کے لئے اپلائی کیا۔ صوبائی کابینہ اراکین محب اللہ خان اور بیرسٹر محمد علی سیف کے علاوہ ممبران صوبائی اسمبلی ضیا ءاللہ بنگش، غزن جمال، عائشہ بانو اور متعلقہ سرکاری حکام نے تقریب میں شر کت کی۔

خیبرپختونخوا  میں ٹیکسوں کی آن لائن ادائیگی اور گاڑیوں کی آن لائن رجسٹریشن سسٹم کا اجراء


شیئر کریں: