Chitral Times

Dec 3, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

سوات موٹروے فیز ٹو کی تعمیر کیلئے پختونخوا ہائی ویز اتھارٹی اور نجی تعمیراتی کمپنی کے مابین معاہدے پر دستخط

شیئر کریں:

سوات موٹروے فیز ٹو کی تعمیر کیلئے پختونخوا ہائی ویز اتھارٹی اور نجی تعمیراتی کمپنی کے مابین معاہدے پر دستخط

پشاور ( چترال ٹائمز رپورٹ ) خیبرپختونخوا حکومت کے فلیگ شپ منصوبے سوات موٹروے فیز ٹو کی تعمیر کے سلسلے میں ایک اہم پیشرفت کے طور پر پختونخوا ہائی ویز اتھارٹی اور نجی تعمیراتی کمپنی کے مابین معاہدے پر دستخط کر دیئے گئے ہیں۔ معاہدے پر دستخط کی تقریب بدھ کے روز وزیراعلیٰ ہاﺅس میں منعقد ہوئی جس کے مہمان خصوصی وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان تھے۔ وزیراعلیٰ کے مشیر برائے مواصلات و تعمیرات ریاض خان، چیف سیکرٹری ڈاکٹر شہزاد بنگش کے علاوہ محکمہ منصوبہ بندی ، مواصلات اور پختونخوا ہائی ویز اتھارٹی کے متعلقہ حکا م نے بھی تقریب میں شرکت کی۔ 80 کلومیٹر طویل سوات موٹروے کی تعمیر پر 58 ارب کی تخمینہ لاگت آئے گی جس میں زمین کی خریداری کے لئے رقم بھی شامل ہے ۔

یہ موٹروے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت چکدرہ انٹرچینج سے مدین فتح پور تک تعمیر کیا جائے گا۔ یہ موٹروے ابتدائی طور پر چار لینز پر مشتمل ہو گا تاہم مستقبل میںاس کو چھ لینز تک توسیع دینے کی گنجائش موجود ہو گی ۔اس موٹروے پر 9 انٹرچینجز تعمیر کئے جائیں گے جن میں چکدرہ انٹر چینج ، شموزئی انٹر چینج ، بری کوٹ انٹر چینج ، مینگورہ انٹر چینج ، کانجو انٹر چینج ، مالم جبہ۔یونیورسٹی آف سوات انٹر چینج، شیر پالم انٹر چینج ، مٹہ خوازہ خیلہ انٹر چینج اور مدین فتح پور انٹر چینج شامل ہیں۔ اس کے علاوہ منصوبے کے تحت دریائے سوات پر مختلف مقامات پر آٹھ پل تعمیر کئے جائیں گے ۔ مختلف مقامات پر چار ریسٹ ایریاز کی تعمیر بھی منصوبے کا حصہ ہے جبکہ ضرو رت کی بنیاد پر لنک ہائی ویز بھی تعمیر کی جائیں گی۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے سوات موٹروے کو علاقے کی پائیدار بنیادوں پر ترقی کیلئے ایک سنگ میل قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ سوات موٹروے فیز ٹو کی تعمیر سے علاقے میں سیاحتی، تجارتی اور کاروباری سرگرمیوں کو فروغ ملنے کے علاوہ لوگوں کو آمدورفت کی معیاری سہولیات میسر ہوں گی اور مقامی لوگوں کو روزگار کے نئے مواقع میسر آئیں گے ۔ اُنہوںنے کہاکہ سوات موٹروے فیز ٹو پر عملی کام کا آغاز کرنے کیلئے زمین کی خریداری کا عمل جاری ہے اور بہت جلد اس منصوبے کا سنگ بنیاد رکھ دیا جائے گا۔ وزیراعلیٰ نے مزید کہا کہ موجودہ حکومت صوبے کے تمام اضلاع کو شاہراہوں کے ذریعے ایک دوسرے سے منسلک کرنے کرنے کیلئے موٹرویز کے کئی اہم منصوبوں پر کام کر رہی ہے اور ان موٹرویز کی تعمیر سے یہ صوبہ ملکی اور غیر ملکی تجارت کا مرکز بن جائے گا۔ وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ صوبے میں موٹرویز کی تعمیر کے سلسلے میں ایک اور اہم پیشرفت کے طور پر دیر موٹروے کی تعمیر کیلئے اشتہار جاری کر دیا گیا ہے ۔ اس موٹروے کی تعمیر سے دیر، چترال اور باجوڑ کے عوام کو بہتر سفری سہولیات دستیاب ہوں گی اور علاقے میں ترقی و خوشحالی کے ایک نئے دور کا آغاز ہو گا۔


شیئر کریں: