Chitral Times

Dec 1, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

وادی شوغور چترال ۔ مہجور زیست ۔ تحریر: دلشاد پری چترال

شیئر کریں:

شوغور کا خوبصورت گاؤں ضلع چترال لوئر میں واقع ہے۔ یہ اپنے الگ تھلگ جائے وقوع اور قدرتی حسن کی وجہ سے ایک منفرد مقام رکھتا ہے۔یہ اونچے پہاڑوں اور دریاؤں سے گھیرا ایک ایسا علاقہ ہے جس کو قدرت نے اپنے لازوال نعمتوں ا ور قدرتی وسائل سے مالامال کر دیا ہے۔ایک طرف یہ جنت نظیر وادی قدرتی سبزیوں، پھلوں اور پھولوں سے بھرا پڑا ہے تو دوسری طرف اونچے پہاڑ اور نیلے دریا اس کو اپنی لپیٹ میں لے رکھے ہیں۔جب کوئی انسان بے حد اداس ہو اور ذہنی سکون حاصل کرنا چاہے تو وہ ان دریاؤں کے کنارے بیٹھ کر ان بیکراں بلند بالا پہاڑوں اور قدرتی مناظر سے محو گفتگوہو کر ہر غم سے ازاد ہو سکتے ہیں۔

chitraltimes shoghore chitral lower 1

گاؤں کا منظر عجیب دلفریب ہے ۔ریت ہو پتھریلا چٹان یا پہاڑ اس کے ذرے ذرے سے بنی نوع انسان مستفید ہو سکتا ہے۔دور دراز سے لوگ اسی علاقے میں روزگار کی تلاش میں آتے ہیں اور معدنیات سے مالامال ان پہاڑوں پہ بسیرا کرکے اپنی روٹی کمانے کا ذریعہ ڈھونڈتے ہیں۔اس کے پہاڑوں پہ جنگلی جانور اور پرندے جن کویہ اطمینان ہے کہ یہاں کے لوگ ان کی حفاظت کرنا جانتے ہیں اسلئے بلاخطر اور بلاخوف اچھل کود کرتے اور ٹہلتے رہتے ہیں۔

chitraltimes shoghore chitral lower 4

علاقے کے لوگوں کی سب سے بڑی خوبی یہ ہے کہ آ س پاس جو بھی غریب ہو اس کے گھر کا چولھا جلانے میں سب پیش پیش رہتے ہیں،اگر کوئی یتیم بچہ زیر تعلیم ہو تو اس کے تعلیمی اخراجات سب ملکر پوری کرتے ہیں اور فخر کی بات یہ ہے کہ آج کے اس نمائش کے دور میں بھی لینے والے کو پتہ ہی نہی چلتا کہ میرے یہ تمام اخراجات پورا کر کون رہاہے اور دینے والا بھی اپنا نام صیغۂ راز

میں رکھتا ہے۔اگر کسی بات پہ ان کا اختلاف پیدا ہو آپس میں کوئی مسئلہ پیدا ہو تو گاؤں کے لوگ تھانہ انے کی بجائے گھر کے اندر ہی اس کو مل بیٹھ کر حل کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔

chitraltimes shoghore chitral lower 6

اگرچہ اس علاقے کے لوگوں کو چیلنچ بھی بہت ہیں۔راستے کی دشواری،تنگی اور ویرانی بھی اس علاقے کے لوگوں کی ہمت اور جذبے کی راہ میں رکاوٹ نہی ڈال سکے یہی وجہ ہے کی یہاں کے لوگ تعلیمی میدان میں بھی بہت اگے نکل چکے ہیں۔ اس علاقے نے ملک کو بہت اہم شخصیات عنایت کئے ہیں۔ اس علاقے کی بیٹیاں بھی کسی سے کم نہیں۔نامور کھلاڑی کرشمہ علی ہو یا ڈاکٹرلاریب صادیقہ۔۔۔جو کہ غریبوں کی مدد کرنے میں مردوں کے شانہ بشانہ کام کر رہے ہیں۔اساقال بیگال کے نام سے کون واقف نہیں پولو کے اس نامور شخصیت کا تعلق بھی اسی علاقے سے تھا۔

chitraltimes shoghore chitral lower 2


اہم مذہبی پیر شاہ کوئی والی شاہ کی زیارت بھی حسن آباد شغور میں واقع ہے۔اس علاقے کے لوگ انٹرنیشنل بزنس میں بھی اپنی محنت کے بل بوتے پر نام کما چکے ہیں انور آمان جیسی شخصیت کو کون نہیں جانتا اس کا تعلق بھی بشگرام کریم اباد سے ہے جوکہ شغور کا ایک چھوٹا علاقہ ہے۔۔


سب سے ذیادہ سبزیاں اور پھل اس علاقے سے پاکستان کے دوسرے حصوں کو بیجا جاتا ہے۔ شاہ شاء کا گرم پانی جو ٹاؤن چترال کو مہیا کی گئی ہے وہ بھی شغور کے ایک علاقہ شاشاء کے مقام میں موجود گرم چشمہ کے پانی سے مہیا کی گئی ہے۔ چترالیوں کے چہرے پر ہمیشہ مسکراہٹ بکھرنے والی مزاحیہ شخصیت گل اکبر کا تعلق بھی اسی علاقے پرسان شغور سے ہے۔


سیاحوں کی توجہ کا مرکز اس علاقے کی سڑکوں کی مرمت اور تعمیر پر توجہ دیا جائے توجہ دیا جائے تو وہ دن دور نہی جب یہ علاقہ پاکستان کا پیرس بن جائے۔

chitraltimes shoghore chitral lower 3
chitraltimes shoghore chitral lower 7
chitraltimes shoghore chitral lower 5

شیئر کریں: