Chitral Times

Jan 25, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

اپرچترال سے ڈینگی کا کوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا۔ ڈائریکٹوریٹ جنرل ہیلتھ سروسز خیبرپختونخوا

شیئر کریں:

پشاور (چترال ٹائمز رپورٹ) محکمہ صحت خیبر پختونخوا نے ڈینگی سے متعلق سالانہ رپورٹ جاری کردی۔ڈائریکٹوریٹ جنرل ہیلتھ سروسز خیبرپختونخوا نے ڈینگی سے متعلق سالانہ رپورٹ جاری کردی۔ ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ ڈاکٹر نیاز کے مطابق بروقت اقدامات اور عملے کی بھرپور کوششوں سے پچھلے سال کی نسبت امسال ڈینگی سے کم لوگ متاثر ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ صوبے میں ڈینگی کا ابھی تک کوئی ایکٹیو کیس موجود نہیں۔ اس سال دس ہزار سے زائد افراد ڈینگی کا شکار ہوئے۔جاری رپورٹ پر بات کرتے ہوئے ڈاکٹر نیاز نے کہ ڈینگی کے دوران پشاور، نوشہرہ، ہری پور اور صوابی ہائی رسک اضلاع رہے۔ ضلع پشاور میں ڈینگی کے سب سے زیادہ 5700 کیسز رپورٹ ہوئے جبکہ اپر چترال، اپر کوہستان اور شمالی وزیرستان سے ڈینگی کا کوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا۔ڈی جی ہیلتھ کے مطابق اب تک صرف دس افراد ڈینگی سے جاں بحق ہوئے ہیں۔ ڈینگی کے دوران خیبرٹیچنگ ہسپتال میں 3328 اور حیات آباد میڈیکل کمپلیکس میں 1206 مریضوں کا علاج ہوا۔ 98 فیصد ڈینگی کے مریض سرکاری ہسپتالوں میں زیر علاج ہونے کے بعد صحت یاب ہوئے۔


صحت کارڈ پلس میں ہسپتالوں کی رجسٹریشن سے متعلق شکایات کے ازالے کیلئے کمیٹی تشکیل


پشاور (چترال ٹائمز رپورٹ) محکمہ صحت خیبر پختونخوا نے صحت کارڈ پلس میں ہسپتالوں کی رجسٹریشن سے متعلق شکایات کے ازالے کیلئے ایک کمیٹی تشکیل دی ہے جس کے چئیرمین انڈیپنڈنٹ مانیٹرنگ یونٹ کے ڈائریکٹر ہونگے جبکہ کمیٹی کے اراکین میں محکمہ صحت کے ڈپٹی سیکرٹری ایڈمنسٹریشن، محکمہ صحت کے ڈپٹی سیکرٹری ڈرگز، ڈپٹی ڈائریکٹر مانیٹرنگ ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز اور ڈپٹی چیف ایچ ایس آر یو شامل ہیں۔کمیٹی کے فرائض و زمہ دار یوں میں، چوتھے فیز میں جولائی 2021 سے شامل ہسپتالوں سے متعلق مفصل رپورٹ مرتب کرنا، محکمے کی جانب سے بھیجے گئے انفرادی شکایات کا ازالہ کرنا اور شفافیت کو مزید بہتر بنانے سے متعلق تجاویز و آرا دینا شامل ہے


شیئر کریں: