Chitral Times

Sep 23, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

مختصر سی جھلک – تعلیم سے ہوچکی ہے تربیت جدا – فریدہ سلطانہ فّریّ

شیئر کریں:

مختصر سی جھلک – تعلیم سے ہوچکی ہے تربیت جدا – فریدہ سلطانہ فّریّ

انسانی معاشرے کی بقا کا درومدار اس معاشرےکےاصول قواعد وضوابط  اوران پرعمل درامد پرہے اگرہم غورو فکرکریں تونظآم قدرت کی ہرشے  ازل سے اب تک اپنے مقررہ وقت کےحساب سے قدرت کی فرمنبرداری میں کوشاں ہے اوراگردیکھآ جائےتورب کاِینات کے سارے ہی نظآرے انسان کے لیے اشارے اورعبرت کا منظر پیش کرتے ہیں مگرصرف سوچنے اورغورو فکر کرنے والوں کے لیے۔۔۔۔۔۔۔۔۔

جب بات سوچ سمجھ اور غوروفکر کی کرتے ہیں توفورا ہی یہ بات زہن میں اتی ہے کہ اللہ پاک نے تمام مخلوقات میں انسانوں کو اسی لیے ہی تو افضل رکھآ ہے کہ اسے اللہ پاک نے سوچنے سمجھنے کی صلاحیت اورعقل و شعور سے نوازا ہے۔ اور اس کے ساتھ ساتھ دنیا میں انسان کے لیے ہزاروں وسیلے بھی پیدا کیے ہیں کہ ان وسیلوں کو استعمال کرتے ہوئے انسان اپنےعقل و شعورکومزید قوت بخشے اور اپنے ساتھ ساتھ اپنے گردوپیش میں رہنے والوں کے لیے بھی زندگی کو سہل بنائے ۔۔۔۔۔۔

ان بہت سارے وسیلوں میں سے ایک بہت ہی اہم اورمستحکم وسیلہ جو انسانی عقل و شعورکو مظبوط و مستحکم کرنے کے لئے ریڑھ کے ہڈی کی حیثیت رکھتا ہےوہ تعلیم یا علم ہے جو انسان کومعتبر کرکےاسمان کی بلندیوں تک پہنچادیتا ہے۔۔۔۔۔۔

مگر اہم بات یہ ہے کہ تعلیم یا علم اس وقت سود مند ہوگی اورعقل وشعورکو قوت بخشنے کے قابل ہوگی۔ جب تعلیم کے ساتھ تربیت اورعلم کے ساتھ عمل پر بھی زور دیا جاَئے ورنہ تعلیم سے تربیت اورعلم سے عمل کو نکال کر زندگی بغیراصول و قاعدوں کے گزاری جائے تو یہی حالات پیدا ہوں گیں جو اج کل ہمارے معاشرے میں ہو رہَی ہیں اور ایسے معاشرے میں بیٹے بیٹیاں کیا جانور بھی محفوظ نہیں رہ سکتے اورایسے ماحول میں انسان خود سے بھی محفوظ نہیں رہ سکتا ۔۔۔۔

یہ خود کشیوں کے واقعات،یہ بچے اور بچیوں کے ساتھ جنسی، تشدد یہ لوٹ مار، والدین کے ساتھ بدسلوگی ،رشتوں کا تقدس پامال ہونا ۔۔۔۔۔۔

یہی تو جنم لیں گیں ایسے معاشرے میں جہا٘ ٘ن کے لوگوں میں عقل وشعور کی کمی ہوں جہاں تعلیم سے تربیت اورعلم  سےعمل  کو نکال کر زندگی گزاری جاَئے پھر ۔۔۔۔

مینارپاکستان کا پارک کیا ایسے صورت حال میں کوئی گھرکی چاردیواری میں بھی محفوظ نہیں رہ سکتا۔۔۔۔ کیونکہ حیوانوں کو کھلے میدان میں چھوڑ دو۔۔۔۔۔۔۔۔۔

یا گھروں کےانگن میں ان سے کہی بھی کچھ بھی توقع کی جاسکتی ہے ۔۔۔۔   


شیئر کریں: