Chitral Times

Oct 15, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

وزیراعلی نے کنٹرولر ملاکنڈ بورڈ کے بیٹے کے نقل کرنے کے معاملہ کا نوٹس ، کاروائی شروع

شیئر کریں:

وزیراعلی نے کنٹرولر ملاکنڈ بورڈ کے بیٹے کے نقل کرنے کے معاملہ کا نوٹس ، کاروائی شروع

پشاور ( چترال ٹائمز رپورٹ ) وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے جاری سالانہ امتحانات میں کنٹرولر ملاکنڈ بورڈ کے بیٹے کے نقل کرنے کے معاملہ کا نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ امتحانی عملے کے خلاف کارروائی شروع کردی ہے۔ بحیثیت مجاز حاکم وزیر اعلیٰ نے مذکورہ اُمیدوار کو امتحانی ہال کے اندر نقل کرنے میں سہولت فراہم کرنے والے امتحانی عملے کو شو کاز نوٹس جاری کردیا۔ عملے میں ایگزامینیشن سنٹر کے سپرنٹنڈنٹ ہمایون خان اور نگران رحمت علی شامل ہیں۔ ہمایون خان گورنمنٹ مڈل سکول بارون لوئر دیر میں ایس ایس ٹی جبکہ رحمت علی گورنمنٹ ہائی سکول کوٹلئی سوات میں ہیڈ ماسٹر تعینات ہیں جن کی چکدرہ میں قائم ایک امتحانی مرکز میں ڈیوٹی لگی تھی۔

سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیو میں امتحانی ڈیوٹی پر مامور عملے کی طرف سے امیدوار کو نقل کروانے میں سہولت فراہم کرنے کے واضح شواہد موجود ہیں جس کی بنیاد پر متعلقہ عملے کے خلاف کارروائی عمل میں لائی گئی ہے۔ شوکاز نوٹس میں مذکورہ عملے کو اپنے فرائض سے غفلت اور سروس ڈسپلن کی خلاف ورزی کا مرتکب قرار دیا گیا ہے اور انہیں پندرہ دنوں کے اندر تسلی بخش جواب دینے کی ہدایت کی گئی ہے۔ تسلی بخش جواب نہ ملنے کی صورت میں ان کے خلاف ای اینڈ ڈی رولز کے تحت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔


واضح رہے کہ وزیر اعلیٰ کی ہدایت پر کنٹرولر ملاکنڈ بورڈ کو پہلے ہی سے عہدے سے ہٹا کر ایف آئی آر درج کرائی گئی ہے۔اس سلسلے میں اپنے ایک بیان میں وزیر اعلیٰ نے امتحانی ہال میں عملے کی سر پرستی میں امیدوار کو نقل کروانے کے معاملے کو انتہائی شرمناک قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس واقعے سے محکمہ تعلیم اور صوبائی حکومت کی بدنامی ہوئی ہے، معاملے میں ملوث تمام کرداروں کو قانون کے مطابق عبرتناک سزا دی جائے گی اور کسی سے بھی کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ موجودہ حکومت شفافیت اور میرٹ کی بالادستی پر مکمل یقین رکھتی ہے اور اس طرح کے واقعات کسی صورت برداشت نہیں کیے جائیں گے۔


شیئر کریں: