Chitral Times

Oct 17, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

سیاحتی مقامات پر معیاری خوراک کی فراہمی یقینی بنانےکیلئے خصوصی ٹیمیں تعینات کردی گئی، وزیر خوراک

شیئر کریں:

سیاحتی مقامات میاندم، بحرین اور کالام میں خوراک سے وابستہ کاروباروں کا معائنہ، وارننگ نوٹسز جاری


پشاور (چترال ٹائمز رپورٹ) خیبر پختونخوا کے وزیر خوراک اور سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی عاطف خان نے کہا ہے کہ صوبے میں ٹورسٹ سیزن کے دوران سیاحوں کو معیاری خوراک کی فراہمی کے لئے مختلف مقامات پر خصوصی ٹیمیں تعینات کر دی گئی ہیں، تاکہ ان مقامات پر آنے والے سیاحوں کو معیاری و محفوظ خوراک کی فراہمی یقینی بنائی جاسکے۔ صوبائی وزیر کی ہدایت پر خیبرپختونخوا فوڈ سیفٹی اینڈ حلال فوڈ اتھارٹی نے سوات کے سیاحتی مقام میاندم میں کاروائی کرتے ہوئے خوراک سے وابستہ مختلف کاروباروں کے معائنے کئے۔ کاروائی کے دوران حفظان صحت کے اصولوں کی خلاف ورزی پر دو ہوٹلز پر جرمانہ عائد کیا گیا جبکہ ایک کباب شاپ سے 7 کلو سے زائد ملاوٹ شدہ قیمہ برآمد کرکے ضائع کر دیا گیا۔

میاندم میں انسپکشن کے دوران کئی دکانداروں کو بہتری اور لائسنس نوٹسزبھی جاری کئے گئے۔ ڈائریکٹر جنرل خیبرپختونخوا فوڈ سیفٹی اتھارٹی شاہ رخ علی خان کے مطابق سوات کے سیاحتی مقام بحرین اور کالام بازار میں بھی اشیاء خوردنوش سے منسلک کاروباروں کے معائنے کئے گئے۔ انسپکشن کے دوران مختلف ہوٹلز کے کچن کا جائزہ لیا گیا، اور مزید بہتری کے لئے نوٹسز جاری کئے گئے۔ وزیر خوراک عاطف خان کا کہنا تھا کہ سیاح حضرات خوراک کے معیار کے حوالے سے کسی بھی شکایت کی صورت میں اتھارٹی کے ٹال فری نمبر 37432-0800 پر اپنی شکایات درج کرائیں، جس پر فوری طور پر ایکشن لیا جائیگا۔

سیاحتی مقامات

شیئر کریں: