Chitral Times

Sep 20, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

وزیر اعلیٰ نے کورونا سے شہید ہونے والے نو فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز کے ورثاءمیں امدادی چیکس تقسیم کی

شیئر کریں:


پشاور ( چترال ٹائمز رپورٹ ) وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے منگل کے روز شہداءپیکج کے تحت کورونا سے شہید ہونے والے نو فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز کے ورثاءمیں امدادی چیکس تقسیم کئے ہیں۔ اب تک صوبے کے دس شہید ہیلتھ ورکرز کے ورثاءکو امدادی چیکس دیئے جا چکے ہیں۔ ان شہداءمیں ڈاکٹر شاہ عالم، ڈاکٹر فیصل قریشی، ڈاکٹر سلطان زیب کے علاوہ پیرا میڈک گل وسیم، پیرا میڈک منیر خان، پیرا میڈک وحید خان ، پیرا میڈک عمر جلال، کلاس فور ممتاز خان اور ٹیکنیشن گل علیم شامل ہیں۔ کورونا کے دوران فرنٹ لائن پر خدمات انجام دیتے ہوئے صوبے کے پہلے شہید ڈاکٹر محمد جاوید کے ورثاءکو پہلے ہی امدادی چیک دیاجا چکا ہے ۔


شہداءپیکج کے تحت ،شہید ہونے والے نوفرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز کے ورثاءکو 70 لاکھ روپے فی کس کے حساب سے امدادی چیکس دیئے گئے ۔ان شہداءکے ورثاءمیں چیکس تقسیم کرنے کی تقریب وزیراعلیٰ ہاﺅس میں منعقد ہوئی جس میں وزیراعلیٰ نے ان تمام شہداءکے ورثا کو چیک دیئے ۔ صوبائی وزیر صحت تیمور سلیم جھگڑا، سیکرٹری صحت امتیاز حسین اور محکمہ صحت کے دیگر متعلقہ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے ۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہاکہ اب تک صوبے کے دس شہید طبی عملے کے ورثا کو امدادی چیکس دیئے گئے ہیں ۔ مزید چھ شہداءکے ورثاءکو عنقریب چیکس دیئے جائیں گے اور اسی طرح کورونا سے شہید ہونے والے تمام فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز کے ورثا ءکو بھی شہداءپیکج کے تحت چیکس دیئے جائیں گے ۔

وزیر اعلیٰ نے کورونا وباءکے دوران ڈاکٹرز ودیگر طبی عملے کی خدمات اور قربانیوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ کورونا صورتحال میں فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز نے دوسروں کی جانیں بچانے کے لئے اپنی جانیں قربان کیں جو انسانیت کی خدمت کی ایک عمدہ مثال ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس وباءکے دوران فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز کی خدمات اور قربانیوں کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔ وزیر اعلیٰ کا کہنا تھا کہ صوبائی حکومت طبی عملے کی خدمات اور قربانیوں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے اور انہیں تمام سہولیات فراہم کر نے کے لیے ترجیحی بنیادوں پر اقدامات اٹھا رہی ہے۔ صوبے میں تمام ہیلتھ ورکرز کی ویکسینیشن کا عمل تقریباً مکمل ہوچکا ہے اور صوبائی حکومت طبی عملے کو اس وباءسے محفوظ بنانے کیلئے دیگر تمام ضروری اقدامات اُٹھا رہی ہے ۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ان شہداءکے بچے قوم کے بچے ہیں اورصوبائی حکومت ان شہداءکے بچوں اور ورثاءکو کبھی تنہا نہیں چھوڑے گی اور ہر ممکن مدد فراہم کرے گی۔
<><><><><><>

کورونا وائرس سے اسسٹنٹ کمشنر پشاور انتقال کرگئے ، وزیراعلیٰ کی لواحقین سے اظہار تعزیت


پشاور ( چترال ٹائمز رپورٹ ) وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان نے کورونا سے اسسٹنٹ کمشنر پشاور شمس الاسلام کے انتقال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے لواحقین تعزیت کی ہے۔یہاں سے جاری اپنے تعزیتی بیان میں وزیراعلی نے اہل خانہ سے دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے مرحوم کی مغفرت اور پسماندگان کے لئے صبر جمیل کی دعا کی ہے۔ وزیر اعلی نے مرحوم شمس الاسلام کی خدمات کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم ایک قابل اور محنتی آفیسر تھے، وہ صحیح معنوں میں صوبائی حکومت کا ایک اثاثہ تھے جس نے کورونا کی صورتحال میں گرانقدر خدمات انجام دیں اور ان کے انتقال سے صوبائی حکومت ایک ایماندار اور فرض شناس آفیسر سے محروم ہوگئی۔ انہوں نے یقین دلایا کہ صوبائی حکومت ان کے اہل خانہ کو تنہا نہیں چھوڑے گی اور ان کی ہر ممکن مدد کرے گی۔
کورونا وبا کی صورتحال میں انتظامیہ کے افسران، اہلکاروں، پولیس اور دیگر فرنٹ لائن ورکز کے کردار سراہتے ہوئے وزیر اعلی نے کہا کہ صوبائی حکومت فرنٹ لائن پر خدمات انجام دینے والے تمام عملے کی خدمات اور قربانیوں کو انتہائی قدر کی نگاہ سے دیکھتی جو اپنی جانوں کی پرواہ کئے بغیر دوسروں کی جانیں بچانے کے لئے دن رات کوششوں میں مصروف ہیں جو انسانیت کی بے لوث خدمت کی ایک عمدہ مثال ہے، حکومت اور پوری قوم ان فرنٹ لائن ورکرز کی خدمات اور قربانیوں پر فخر محسوس کرتے ہیں۔


شیئر کریں: