Chitral Times

Jan 25, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

شندور روڈ کی منظوری کا کریڈٹ ایم این اے کوجاتا ہے، وزیرزادہ کریڈ ٹ لینے کی کوشش نہ کریں۔جماعت اسلامی چترال

شیئر کریں:

چترال ( چترال ٹائمز رپورت ) جماعت اسلامی ضلع لوئر چترال کے جنرل سیکریٹری وجیہ الدین نے کہا ہے کہ چترال شندور روڈ کیلئے خطیر رقم کی منظوری کا کریڈیٹ ایم این اے چترال اور مرکزی حکومت کو جاتا ہے۔ وزیر زادہ مفت میں کریڈٹ لینے کی کوشش نہ کریں تو اچھا ہے کیونکہ وہ صوبائی نمائندے کا نہیں یعنی مرکزی نمائندے کا منڈیٹ ہے اور ایم این اے چترال مولانا عبدالاکبر چترالی کی تگ و دو کے نتیجے میں یہ کام جلد یا بہ دیر ہورہے ہیں ۔ جماعت اسلامی کے مرکزی دفتر سے جاری ایک پریس ریلیز میں انہوں نے کہا کہ اس سے قبل بھی وزیر زادہ ایم این اے کے بجلی مسائل سے دئے گئے سکیموں کی منظوری کا کریڈٹ لینے کی کوشش کی اور اچانک وزیر اعلی کے پی سے ملاقات کا مژدہ سنایا حالانکہ اس حوالے سے الیکشن کے فوراً بعد ایم این اے نے کوشش شروع کی تھی۔ اور فیزیبلٹی رپورٹ سے لیکر پی سی ون اور منظوری تک کے مرحلے انہوں نے متعلقہ وزرا اور دوسرے زمہ داروں کے پیچھے پڑ کر مکمل کروائےلیکن ایک ہی ملاقات میں وزیر اعلیٰ سے سکیموں کی منظوری اور دو مہینوں کے بعد بجلی کا کام شروع ہونے کی بات مضحکہ خیز ہے۔
وجیہ الدین نے کہا کہ وزیر زادہ کے اپنے فنڈ جو انہوں نے صوبائی حکومت سے لیکر ضلع کے مختلف علاقوں میں استعمال کر رہے ہیں اس کو ہم قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں اور یہ بھی اس کو یاد دلا تے ہیں کہ اسکے اپنے گاوں بمبوریت کا روڈ سابقہ حکومت کی منظوری کے باوجود ناگفتہ بہہ حالت میں ہے۔ صوبائی حکومت یا کم از کم اپنے اقلیتی فنڈ سے اسے عا م استعمال کے قابل بنائیں تا کہ مقامی آبادی اور سیاحوں کو امدورفت میں دشواری اور وقت کا ضیاع نہ ہو۔


شیئر کریں: