Chitral Times

Mar 3, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

صوبائی ترقیاتی ورکنگ پارٹی خیبرپختونخوا نے 38منصوبوں کی منظوری دیدی

شیئر کریں:

پشاور (چترال ٹائمز رپورٹ) صوبائی ترقیاتی ورکنگ پارٹی خیبر پختونخوا نے 16461.928ملینروپے لاگت کے 38منصوبوں کی منظوری دیدی ہے۔ یہ منظوری ایڈیشنل چیف سیکرٹری محکمہ ترقی و منصوبہ سازی خیبر پختونخوا شکیل قادر خان کی زیر صدارت بدھ کے روز ویڈیو لنک کے ذریعے منعقد ہ اجلاس میں دی گئی جس میں پی ڈی ڈبلیو پی کے اراکین اور متعلقہ محکموں کے افسران نے شرکت کی۔ اجلاس میں صوبے کی ترقی کیلئے مختلف شعبوں بشمول اعلیٰ تعلیم، اوقاف، حج، اقلتی امور، سماجی بہبود، سڑکوں، بلدیات، شہری ترقی، کھیل و سیاحت، کثیر شعبہ جاتی ترقی، صنعت، صحت اور قانون و انصاف کی40سکیموں پرتفصیلی غور و خوض کے بعد 38سکیموں کو منظور جبکہ 2سکیموں کو غیر موزوں ڈیزائن کی بناء پر موٗخر کر کے اصلاح کیلئے متعلقہ محکموں کو بھیج دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق اعلیٰ تعلیم کے شعبے میں منظور کردہ منصوبوں میں بونیر میں عبد الوالی خان کیمپس کی ایک مکمل یونیورسٹی تک اپ گریڈیشن اور چترال میں موجودہ یونیورسٹی کیمپسزکی مکمل یونیورسٹی کی سطح تک اپ گریڈیشن شامل ہے۔ اسی طرح اوقاف، حج اور اقلیتی امور کے شعبوں میں دارالعلوم اسلامیہ اضاخیل بالا نوشہرہ میں ہال اور لائبریری سمیت60عدد کلاس رومز کی تعمیر اور تحصیل بانڈہ داوٗد شاہ میں ہندو سمادھی کی بحالی کی منظوریاں دی گئیں۔ اسی طرح سماجی بہبود کے شعبے میں منظور کردہ منصوبوں میں ضلع مہمند اور خیبر میں بصارت سے محروم افراد اور اضلاع جنوبی وزیرستان، باجوڑ اور کرم میں قوت سماعت سے محروم افراد کیلئے سکولوں کا قیام، خیبر پختونخوا میں موجودہ 105دستکاری مراکز کو فعال بنانے اور وزیر اعظم احساس کفالت پروگرام کی ضم شدہ اضلاع تک توسیع کے منصوبے شامل ہیں۔

پی ڈی ڈبلیو پی کے اجلاس میں سڑکوں کے شعبے میں ڈی آئی خان میں مختلف سڑکوں اور2عدد فلائی اوورز کی تعمیر کیلئے فزیبلٹی سٹڈی اور ڈیزائن61کلومیٹر بنوں میران شاہ روڈ کو دو رویہ کرنے، سوات میں مختلف یونین کونسلوں میں سڑکوں کی بحالی، پختہ بنانے اور تعمیر اور تورغر میں مختلف سڑکوں کی تعمیر کے منصوبے شامل ہیں۔ اسی طرح بلدیات کے شعبے میں چارسدہ کی یونین کونسل شو ڈاگ، ہری چند، گنڈھیری حصارا اور بہرام ڈھیری وغیرہ کیلئے خصوصی ترقیاتی پیکج کی منظوری دی گئی۔ اسی طرح کھیل و سیاحت کے شعبے میں منظور کردہ منصوبوں میں ڈی آئی خان، بنوں، ہری پور اور مردان میں سپورٹس کمپکیکسز کی درجہ بلندی اورمعیار بنانے تہکال میں سپورٹس سٹیڈیم کا قیام، ارباب نیاز کرکٹ سٹیڈیم پشاور کی فزیبلٹی، بہتری /تعمیر، نوجوان مرد و خواتین کی اقتصادی ترقی کے منصوبے شامل ہیں۔

پی ڈی ڈبلیو پی کے اجلاس میں کثیر شعبہ جاتی ترقی کے دو سکیموں، پبلک پالیسی اینڈ سماجی تحفظ ریفارمز یونٹ اور ضلع تورغر کیلئے خصوصی ترقیاتی پیکج کی منظوریاں دی گئیں۔ اسی طرح صنعت کے شعبے میں ضم شدہ اضلاع کیلئے بغیر سود کے مائیکرو فنانس سکیم،SIEsپشاور اور مردان کیلئے انڈیپنڈنٹ الیکٹرک فیڈرز کی فراہمی کے منصوبوں کی منظوریاں دی گئیں۔جبکہ صحت کے شعبے میں منظور کردہ منصوبوں میں ڈی آئی خان میں زچہ و بچہ ہسپتال کی تعمیر کیلئے فزیبلٹی سٹڈی ڈی ایچ کیو ہسپتال، ہری پور کی کٹیگری اے ہسپتال تک درجہ بلندی کالام ہسپتال کی اپ گریڈیشن کیلئے فزیبلٹی سٹڈی،ہسپتال باچہ گئے خیبر پختونخوا پی کے 20بونیر کی کٹیگری۔ سی تک اپ گریڈیشن کیلئے فزیبلٹی سٹڈی کٹیگری سی ہسپتال چکدرہ اندیزئی کی کٹیگری بی سطح تک درجہ بلندی ڈی ایچ کیو ہسپتال بٹگرام کی کٹیگری بی تک اپ گریڈیشن کیلئے فزیبلٹی سٹڈی، نوشہرہ میں زچہ و بچہ ہسپتال کی تعمیر، درگئی ہسپتال کی کٹیگری سی سے بی تک درجہ بلندی، بی ایچ یو اولندر شانگلہ کی آر ایچ سی تک درجہ بلندی اور بی ایچ یو دوبیر بالا کوہستان پایان کی آر ایچ سی تک اپ گریڈیشن کیلئے فزیبلٹی سٹڈی کی سکیمیں شامل ہیں۔ اسی طرح قانون و انصاف کے شعبے میں سوات میں جوڈیشل کمپلیکسزکی تعمیر کی بھی منظوری دی گئی۔جبکہ شہری ترقی کے شعبے میں پشاور اپ لفٹ پروگرام کے تحت باچا خان انٹر نیشنل ائر پورٹ پشاور تک رابطہ سڑک کی درجہ بلندی و توسیع کی منظوری دی گئی۔


شیئر کریں: