Chitral Times

Jan 27, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

رواں سال اساتذہ کی کمی کو پورا کرنے کیلئے7000 2 نئے اساتذہ بھرتی کررہے ہیں۔شہرام ترکئی

شیئر کریں:

پشاور (چترال ٹائمز رپورٹ) خیبر پختونخوا کے وزیر تعلیم شہرام خان ترکئی نے کہا ہے کہ اسی سال 5لاکھ سے زیادہ طلباء وطالبات کیلئے فرنیچر فراہم کیا جائے گا۔ جس کے لئے تمام تر تیاریاں مکمل کر لی گئی ہے جبکہ سکولوں میں اساتذہ کی کمی کو پورا کرنے کیلئے میر ٹ پر7000 2 نئے اساتذہ بھرتی کر رہیں ہے۔ تمام پراسیس چند مہینوں میں مکمل کر لیا جائے گا۔ اور نئے تعلیمی سال سے سکولوں میں فرنیچر اور اساتذہ دستیاب ہونگے جبکہ طلباء و طالبات کو سکول بیگز کے اضافی وزن سے چھٹکارا دلانے کیلئے اسمبلی سے سکول بیگز وزن کا قانون پاس کروایا گیاہے جس کے مطابق ہر کلاس کیلئے مخصوص وزن کا بیگ استعما ل ہوگا جس سے طلبا ء و طالبات کی بہترین ذہنی و جسمانی نشوونما ہو گی اور ان کو صحت کے مسائل سے بھی چھٹکارہ ملے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ابلاغ عامہ کے نمائندوں سے بات چیت کے دوران کیا۔

شہرام خان ترکئی نے کہا کہ سہولیات کی فراہمی کیساتھ ساتھ ہم سکولوں میں معیاری تعلیم کی فراہمی کیلئے بھی اقدامات کر رہے ہیں۔سکولوں میں کوالٹی ایجوکیشن کیلئے عنقریب تین ہزار سکول ٹیچرز بھرتی کئے جائیں گے جن کا بنیادی کام سکولوں میں کوالٹی ایجوکیشن کو یقینی بنانا ہو گا اوران کو تحصیل کی سطح پر تعینات کیا جائے گا انہوں نے کہا کہ آئی ٹی کی تعلیم کی افادیت کو مدنظر رکھتے ہوئے صوبے میں سمارٹ سکول سسٹم کو متعارف کروا رہے ہیں جہاں پر آئی ٹی لیبز موجو د ہو ان سکولوں میں ڈیجیٹل مواد کی فراہمی کیساتھ ساتھ آئی ٹی کورسسزبھی شروع کئے جا ئیں گے۔

امتحانی نظام کے حوالے سے وزیر تعلیم نے کہا کہ اب سرکاری اور پرائیویٹ ہر امتحانی ہال پر لازم ہے کہ وہاں سی سی ٹی وی کیمر ے نصب ہوں گے جس کے ذریعے تمام امتحانی ہالوں کی مانیٹرنگ ہو نگی جس سے نقل پر مکمل طور پر قابو پایا جائے گا اور شفافیت اور میرٹ بھی برقرار رہے گی۔ انہوں نے کہا کہ تمام تعلیمی بورڈز میں اب ای ٹینڈرنگ اور ای آکشن کا نظام ہو گااور ہر قسم کی مداخلت کی مکمل روک تھام کر دی جائے گی اور تمام ٹینڈر نظام میرٹ پر ہوگا۔ طلباء کی سہولت کے لئے تمام تعلیمی بورڈز میں پشاور بورڈ کی طرز پر سٹوڈنٹس فیسلیٹشن سنٹرز قائم کر رہے ہیں تاکہ طلباء و طالبات کا قیمتی وقت بچ سکے۔اور ان کو تمام تر سہولیات ایک چھت تلے مل سکیں۔ انہوں نے کہا کہ طلباء و طالبات کا وقت بڑا قیمتی ہے انکے مسائل تمام بورڈز میں اسی وقت حل کئے جائیں گے۔ شہرام خان ترکئی نے کہا کہ یکساں نظام تعلیم پر کام جاری ہے جو کہ نئے تعلیمی سال سے نافذ العمل ہو گا اب ہر بچہ ایک جیسا کورس پڑے گا اور ان کو مقابلے کے امتحانات میں آسانی ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ تعلیم میں نئے تعلیمی سال میں کئی اہم منصوبے شروع کئے جا رہے ہیں۔ جبکہ نئے ضم شدہ اضلاع میں تعلیمی نظا م کی بہتری پر بھی خصوصی توجہ دی جا رہی ہے۔


شیئر کریں: