Chitral Times

Oct 17, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوامحمود خان کے زیرصدارت ماربل سٹی حوالے اجلاس

شیئر کریں:


پشاور (چترال ٹائمز رپورٹ ) خیبر پختونخوا حکومت نے ورسک روڈ پشاور اور شبقدر میں قائم ماربل فیکٹریوں کو نئے قائم ہونے والے مہمند اکنامک زون منتقل کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے رضا کارانہ طور پر اپنی فیکٹریاں منتقل کرنے والے فیکٹری مالکان کو مہمند اکنامک زون میں رعایتی نرخوں پر پلاٹس فراہم کرنے کے علاوہ امدادی گرانٹس دینے کا اعلان کیا ہے ۔ان فیکٹریوں کو مہمند اکنامک زون منتقل کرنے کا مقصد شہر میں ماحولیاتی آلودگی اور ٹریفک کے مسائل پر قابو پانے کے علاوہ ماربل کی ان فیکٹریوں کو ایک جگہ یکجا کرکے اُنہیں سہولیات فراہم کرنا ہے۔ اسی طرح صوبائی حکومت نے ماربل کی صنعتوں کو فروغ دینے کیلئے بونیر ماربل سٹی کے مجوزہ منصوبے پر عملی کام شروع کرنے کا بھی فیصلہ کیا ہے۔


یہ فیصلہ وزیر اعلیٰ محمود خان کی زیر صدارت بدھ کے روز مہمند اکنامک زون اور بونیر ماربل سٹی کے حوالے سے منعقدہ ایک اجلاس میں کیا گیا۔ وزیر اعلیٰ کے معاونین خصوصی عارف احمد زئی، ریاض خان کے علاو ہ سیکرٹری معدنیات، چیف ایگزیکٹیو آفیسر خیبر پختونخوا اکنامک زون ڈویلپمنٹ اینڈمینجمنٹ کمپنی جاوید خٹک سمیت دیگر متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔


وزیر اعلیٰ نے ورسک روڈ پر قائم ماربل فیکٹریوں کو مہمند اکنامک زون منتقل کرنے کے لئے ان ماربل فیکٹری مالکان کی مشاورت سے لائحہ عمل ترتیب دینے اور اس سلسلے میں 15 دنوں میں ہوم ورک مکمل کرکے ایکشن پلان پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔ اجلاس کو مہمند اکنامک زون کے بارے میں بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ مہمند اکنامک زون 350 ایکڑ رقبے پر مشتمل ہے اور اب تک اس اکنامک زون میں 106 پلاٹس الاٹ کئے گئے ہیں جبکہ باقی ماندہ 184 پلاٹس پر ورسک روڈ اور شبقدر میں قائم ماربل فیکٹریوں کو منتقل کیا جائے گا۔

مزید بتایا گیا کہ ورسک روڈ پر قائم ماربل فیکٹریوں میں سے 19 فیکٹریوں کے مالکان نے مہمند اکنامک زونز میں منتقل ہونے کے لئے درخواستیں دی ہیں۔اجلاس میں مہمند اکنامک زون کو اسپیشل اکنامک زون میں تبدیل کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔ بونیر ماربل سٹی کے مجوزہ منصوبے پر بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ یہ ماربل سٹی 126 ایکڑ اراضی پر مشتمل ہوگا جس میں 200 انڈسٹریل یونٹس لگائی جائیں گی جبکہ منصوبے میں 2.8 ارب روپے کی سرمایہ کاری بھی متوقع ہے۔ مزید بتایا گیا کہ منصوبے سے 12000 نئی ملازمتوں کے مواقع پیدا ہوں گے۔ وزیر اعلیٰ نے بونیر ماربل سٹی کے قیام کے لئے مجوزہ سائیٹ سے اتفاق کرتے ہوئے متعلقہ حکام کوزمین کی خریداری کا پی سی ون ایک ہفتے کے اندر متعلقہ فورم سے منظور کروانے کی ہدایت کی ہے۔۔۔۔۔۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

دریں اثنا وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے کرک کے علاقہ ٹیری میں مشتعل ہجوم کی طرف سے مندر/ سمادھی کو آگ لگانے اور مسمار کر نے کے واقعے کا سخت نوٹس لیتے ہوئے پولیس کو واقعے میں ملوث عناصر کے خلاف فوری کاروائی عمل میں لاکر رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔ واقعے کو انتہائی قابل مذمت اور افسوسناک قرار دیتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہاکہ واقعے میں ملوث عناصر قانون کی گرفت سے کسی صورت نہیں بچ سکتے ہیں اور اُنہیں جلد انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کیا جائے گا۔ اُنہوںنے کہاہے کہ اقلیتوں کے جان و مال اوراُن کے مقدس مقامات کے تحفظ کو ہر صورت یقینی بنایا جائے گا اورکسی کو بھی امن و امان کو سبوتاژ کرنے اور قانون کو اپنے ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جائے گی ۔



شیئر کریں: