Chitral Times

Oct 16, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

معذرت ! …..آفگں رضا

شیئر کریں:

اس میں کوئ شک نہیں کہ بونی میں دو سابق ممبر پارلیمنٹ گزرے ہیں ۔۔
سردار حسین میکی نے کھونگیر دیرو بوخت سے لیکر شاگوڈ سیر تک راستوں کے درمیاں جن جگہوں پر سڑک خراب تھی ، تھوڑی مرمت کی تھی !!!


غلام محمد میکی نے بونی گول کیلے سڑک اور بونی ہائ سکول کے نزدیک پروٹیشن وال (لامبور) لگا یا تھا ، جو اس آردگرد علاقوں کے سیلابی ریلیوں سے بچا سکے ۔۔۔۔

زیر نظر تصویر بونی اڈہ کے بزدیک سڑک کی ہے۔۔۔
دو ہزار اٹھارہ کا الیکشن بہت ٹف اور سیاسی ماحول گرم تھا ، یہ بونی چوک ہر سیاسی لیڈر کا بھیٹک تھا ۔۔۔
عبدل اکبر چترالی صاحب ہمارے قابل فخر اور بڑے ہیں ۔۔۔وہ اس سے پہلے بھی ممبر پارلمنٹ رہیں چکے ہیں ۔۔ انہوں نے الیکشن کے دنوں میں اس چوک پر ایک اجتماع ، جلوس ، سیاسی جلسہ یا عوام سے مخاطب ہو کر کہا تھا کہ ” اگر میں ممبر پارلمنٹ بن گیا تو جگہ جگہ جاکر بھیک مانگ کر چترال ٹو بونی روٹ کیلے پیسے لاوں گا ، اور اس کی مکمل پختگی کیلے کام کروں گا“

افسوس عہد وفا نہ ہوا ۔۔۔
اس دن سے لیکر اج تک ، چترالی صاحب اپر چترال میں کہیں پہ بھی نہ ملے ، نہ کبھی اس حوالے سے اس نے پریس کانفرنس ہوی( کیونکہ چترالی صاحب ہر ایک نکتے پے پرس کانفرنس کرتے ہیں) اور نہ کبھی اپر چترال کا دورہ کیا ۔۔۔۔

بونی شاگوڈ پل سے لیکر ڈپٹی کمشنر صاحب کی دفتر تک کام ابھی آہستہ آہسته جاری ہیں ۔۔۔

میرے بہت سے دوست لکھتے ہے اور تنقید کرتے ہیں کہ راہ میں کیچڑ بہت زیادہ ہے چلنا محال ہیں ، بے شک بجا ، متفق ہوں
مگر یہ سب وقتی پیریشانیاں ہے اور ہماری یہاں برفباری کی وجہ سے کیچڑ ایک جگہ جمح ہوتا ہے ، یہ کوئ نئ بات نہی ، اس سے پہلے یہاں پر کونسا ” شابڑیکو گاز “ تھا !!

گزارش ہے کہ تھوڑی سی وقتی مشکلات برداشت کریں ، مستقبل میں خوشحالی ہی خوشحالی ہوگی ۔

اور وزیر زادہ صاحب پہ تنقید کرنے سے پہلے ہزار بار سوچنا ہوگا ، کیونکہ نہ وہ ہمارے ووٹوں سے ایم پی اے بنا، نہ اس نے ہم سے اس حوالے سے وعدہ کیا تھا اور اس سے بھی ضروری بات نہ وہ ” مسلمان “ ہیں۔۔۔۔

نوازش
آفگں رضا
آوی،اپر چترال

booni bazar road upper chitral headquarter

شیئر کریں: