Chitral Times

Oct 23, 2020

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

موسمیاتی تبدیلی کی وجہ سے چترال سب سے زیادہ خطرے کی زد میں ہے۔۔ملک امین اسلم

شیئر کریں:

اپرچترال (نمائندہ چترال ٹائمز) وزیر اعظم کے مشیر برائے موسمیاتی تبدیلی ملک امین اسلم نے اپنے دورہ چترال کے دوسرے روز اپر چترال کا دورہ کیا جہاں ضلعی ہیڈ کوارٹرز بونی میں ڈی سی اپر چترال شاہ سعود نے انہیں اس نوزائیدہ ضلعے کے بارے میں بریفنگ دیتے ہوئے انہیں ضلعے کے مختلف علاقوں میں قدرتی آفات کے خطرات سے آگاہ کیا۔ ملک امین اسلم نے کہاکہ یہ ضلع جہاں قدرتی وسائل اور سیاحت کے لئے بے پناہ پوٹنشل کا حامل ہے، وہاں یہ قدرتی آفات کے لحاظ سے بھی سب سے ذیادہ خطرے کی زد میں ہے جوکہ حال ہی میں ایک اسسمنٹ کے نتیجے میں سامنے آئی ہے اور ان کا تعلق موسمیاتی تبدیلی سے ہے۔ انہوں نے کہاکہ قدرتی آفات کے بد اثرات سے انسانی آبادی اور انفراسٹرکچرز کو بچانے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہاکہ ضلعی انتظامیہ ایسے انفراسٹرکچرز کی نشاندہی کرے تاکہ ان کو بچانے کے لئے بروقت اقدامات کئے جاسکیں۔ امین اسلم نے کہاکہ یو این ڈی پی کے فنڈ سے گلوف پراجیکٹ کے زریعے سیلاب کے بروقت اطلاع دینے اور مناسب اقدامات کرنے کے لئے مانیٹرنگ اسٹیشن مختلف مقامات پر قائم کرنے اور خطرے سے دوچار کمیونٹیز کو تیار کرنے کا عمل شروع کردیا گیا ہے۔ انہوں نے شندور فیسٹول کے ساتھ بروغل فیسٹول کو بھی شایان شان انداز میں منانے کے لئے بھی ضلعی انتظامیہ کو مختلف تجاویز پیش کرنے کی ہدایت کردی۔ انہوں نے کہاکہ شندور کو ہندراپ نیشنل پارک میں شامل کرنا ایک غلط فہمی کا نتیجہ تھا جبکہ ریکارڈ کو درست کیاجارہا ہے۔ اس سے قبل انہوں نے گلوف سے متاثرہ گولین گول وادی اور ریشن کے گاؤں میں سڑکوں اور پلوں کے انفراسٹرکچروں کا معائنہ کیا۔


شیئر کریں: