Chitral Times

Sep 23, 2020

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

قاری فیض اللہ چترالی کی طرف سے یارخون لشٹ کے سیلاب متاثرین کیلئے امداد کا اعلان

شیئر کریں:

چترال (نمائندہ چترال ٹائمز) چترال کے معروف سماجی ومذہبی شخصیت قاری فیض اللہ چترالی جو چترال کے دورے پر تھے اپنی ٹیم کے ہمراہ موقع پر یارخون لشٹ پہنچ گئے ہیں اورسیلاب متاثرین کو محفوظ مقامات پر منتقل کرنے میں مدد کی ہے۔ انھوں نے موقع پر متاثرین کیلئے راشن پیکج کا بھی اعلان کیا ہے اور مستوج سے راشن روانہ کردی گئیں جو آج شام تک متاثرین تک پہنچ جائیں گے۔ اس کے علاوہ جان بحق بچی کی کفن دفن کا خرچہ بھی اپنے ذمہ لی ہے۔ قاری کے ساتھ امدادی ٹیم میں موجود اہلکاروں کے مطابق چوبیس گھر مکمل تباہ ہوچکے ہیں۔اورمکین کھلے آسمان تلے رہنے پر مجبور ہیں۔ اور ساتھ درجنوں مال مویشی بھی ملبے تلے دب گئے ہیں۔ علاقے کے لوگوں نے فوری طور پرمتاثریں تک پہنچنے اوردلجوئی کرنے پر قاری فیض اللہ چترالی کی کاوشوں کو سراہا ہے۔


یادرہے کہ اپر انتظامیہ کے مطابق آج صبح اپر چترال کے دوردراز گاؤں یارخون لشٹ میں گلیشیرکے ذیادہ تیزی سے پگھل جانے کے نتیجے میں سیلاب آیا جس کے نتیجے میں 10گھرمکمل طور پرتباہ اور 10 سے زیادہ گھرجزوی طور پر سیلاب برد ہوگئے جبکہ ایک بچی ملبہ تلے دب کر جان بحق ہوگئی ہے۔ جس کی لاش مقامی لوگوں نے ملبے سے نکال دیا۔ یارخون لشٹ سے آمدہ اطلاعات کے مطابق گرمی میں شدت کے ساتھ ندی نالوں میں گلیشیروں سے آنے والی پانی نے سیلابی ریلوں کی شکل اختیار کرنا شروع کیا تھاجوکہ جمعہ کے روز اپنی انتہا کو پہنچ گئی اور سیلاب کا رخ گاؤں کی طرف ہوگیا ہے۔کھڑی فصلیں اورباغات بھی سیلابی ملبے تلے دب گئے ہیں۔


شیئر کریں: