Chitral Times

Jul 3, 2020

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

چترال کے دواضلاع میں کورونا وائرس کی پھیلاو میں تیزی، کل تعداد 189ہوگئی۔۔محکمہ ہیلتھ

شیئر کریں:

چترال (نمائندہ چترال ٹائمز) چترال کے دونوں اضلاع میں کورونا وائرس کے پھیلاو میں دن بہ دن اضافہ ہورہا ہے یہی وجہ ہے کہ لوئر اوراپرچترال میں مذید پازیٹیوکیسز سامنے آئے ہیں۔ ہیلتھ ذرائع نے چترال ٹائمز ڈاٹ کام کو بتایا کہ اپر چترال میں کورونا پازیٹیو کیسز کی تعداد 72ہوگئی ہے جن میں سے 27افرادصحت یاب ہوکر فارع ہوچکے ہیں اور 45افراد فلحال آئسولیشن میں ہیں جبکہ 46افراد کے ٹیسٹ رپورٹ کا انتظار ہے۔ اپرچترال میں ابتک 543مشتبہ افراد کا ٹیسٹ کیا گیا۔جن میں 422کیسز نیگیٹو رپورٹ ہوئے۔ اورابتک مرنے والوں کی تعداد صفرہے۔

اسی طرح لوئر چترال میں ابتک ٹوٹل پازیٹیو کیسز کی تعداد 117ہوگئی ہے، جن میں 54افراد صحت یاب ہوکر فارع ہوگئے ہیں اور60افراد آئسولیشن میں ہیں۔ اپرچترال میں کل1045مشتبہ افراد کا ٹیسٹ کیا گیا جن میں سے852نیگیٹو رپورٹ ہوئے۔ جبکہ 72افراد کی ٹیسٹ رپورٹ کا انتظار ہے۔ اورلوئرچترال کی ریکارڈ کے مطابق کورونا کی وجہ سے صرف ایک شخص کا انتقال ہوگیا ہے۔ دریں اثنا ہیلتھ حکام کا کہنا ہے کہ لوگوں نے اختیاطی تدابیر نظرانداز کردیا ہے جس کیوجہ سے پازیٹیو کیسز میں روزبہ روز اضافہ ہوتا جارہاہے جوکہ تشویشناک ہے۔ اگر یہ سلسلہ جاری رہا تو اس میں مذید اضافے کا خدشہ ہے۔ لوگوں کو چاہیے کہ انتہائی ضروری کام کے سوا گھروں سے باہر نہ نکلیں اورگھرسے نکلتے وقت ایس او پیز کا ضرور خیال رکھیں۔ ماسک اوردستانے پہنیں واپسی پردستانوں کو گھروں سے باہر ہی تلف کریں اورہاتھوں کو کم از کم بیس سیکنڈ تک صابن سے دھوئیں۔

دریں اثنا خیبرپختونخوا کے وزیر صحت تیمور سیلم خان جھگڑا نے کہا ہے کہ صوبے میں کورونا سے صحت یاب ہونے والے مریضوں کی شرح بڑھ کر 46 فیصد ہو گئی ہے۔ صوبے میں اب تک کورونا کو شکست دے کر صحت یاب ہونے والوں کی تعداد 11 ہزار سے زائد ہیں۔ گزشتہ روز 1712 کورونا مریض صحت یاب ہوئے جبکہ اس سے ایک دن پہلے 2516 افراد کو صحت یاب قرار دیا گیا۔ محکمہ صحت کورونا مریضوں کے حوالے سے ڈبلیو ایچ او کی گائیڈ لائنز پر من وعن عمل درآمد کر رہا ہے۔ خیبرپختونخوا میں اب تک 23887 کورونا کے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جن میں سے ایکٹیو مریضو ں کی تعداد 11921 ہے۔ اب تک 869 افراد کورونا کی وجہ سے فوت ہو چکے ہیں جبکہ صحت یاب مریضوں کی تعداد 11097 ہے جو کہ 46 فیصد بنتی ہے۔ کورونا مریضوں کی صحت یابی کی شرح کے حساب سے خیبرپختونخوا اس وقت سندھ کے بعد دوسرے نمبر پر ہے۔ وزیر صحت نے بتایا کہ ڈبلیو ایچ او کی جانب سے 2 پولی میریز چین ریکشن مشینیں محکمہ صحت کو دی گئی ہیں جو کہ کورونا ٹیسٹنگ کے لیے سرکاری ہسپتالوں میں قائم ہونے والی نئی لیبارٹریوں کو دیں گے جس سے ہماری کورونا تشخیصی ٹیسٹوں کی تعداد میں خاطر خواہ اضافہ ہوگا۔ تیمور جھگڑا نے بتایا کہ کوہاٹ اور تیمرگرہ میں دو نئی لیبارٹریاں قائم ہو چکی ہیں جو کہ جلد کام شروع کر دیں گی۔ وزیر صحت نے کہا کہ اس وقت صوبے میں یومیہ اوسطاً 3500 ٹیسٹ ہو رہے ہیں۔ کورونا تشخیصی ٹیسٹوں کی یومیہ تعداد بہت جلد 5 ہزار سے زائد ہو جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ کورونا ٹیسٹوں کے لیے نجی شعبے کی لیبارٹریاں بھی محکمہ صحت کے ساتھ آن بورڈ ہیں۔


شیئر کریں: