Chitral Times

Dec 3, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

گلگت،صوبے میں کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کی تعداد 30 ہوئی ہے۔…وزیراعلیٰ

Posted on
شیئر کریں:

182 افراد کے ٹیسٹ کا رزلٹ آنا اب بھی باقی ہے،وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن
.
گلگت(آئی آئی پی) وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے وزیر اعظم پاکستان کے زیر صدارت نیشنل کوآرڈینشن کمیٹی کے اجلاس کے موقع پر ویڈیو لنک کے ذریعے شرکت کی۔ اس موقع پر وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ گلگت بلتستان میں زائرین اور کورونا وائرس سے متاثرہ ممالک سے لوگوں کی بڑی تعداد آئی ہے۔ صوبے میں کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کی تعداد 30 ہوئی ہے۔182 افراد کے ٹیسٹ کا رزلٹ آنا اب بھی باقی ہے۔ گلگت بلتستان میں صرف کورونا وائرس کی ٹیسٹ کیلئے ایک لیبارٹری قائم ہے جس میں ایک دن میں صرف 10 افراد کا ٹیسٹ ممکن ہے۔ وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ وفاقی حکومت بلتستان ریجن میں بھی کورونا وائرس کے مریضوں کی ٹیسٹ کیلئے لیبارٹری کے قیام میں معاونت کرے۔ صوبائی حکومت نے 1330آئیسولیشن رومز ہوٹلوں میں مختص کئے ہیں جن میں سے 330 آئیسولیشن رومز میں زائرین کو رکھا گیا ہے۔ وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے نیشنل کورڈینشن کمیٹی کے اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بدقسمتی سے گلگت بلتستان میں پہلا لوکل ٹرانسمیشن کورونا کیس نگر میں سامنے آیا ہے۔ وفاقی حکومت صوبے کے تینوں ریجنز میں پی سی آر اور ریپٹ ٹیسٹنگ فیلسٹی فراہم کرے۔ وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے وزیر اعظم پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سکردو میں فلائٹس کی کمی کی وجہ سے شدید مشکلات درپیش ہیں۔ سکردو کیلئے ہفتے میں کم از کم چار روز فلائٹس کو یقینی بنایا جائے۔ وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ وفاقی حکومت اور این ڈی ایم اے گلگت بلتستان کے تینوں ریجنز میں کورونا کیلئے مختص تین پری فیب ہسپتالوں کے قیام کیلئے فوری طور پر اقدامات کرے۔حکومت گلگت بلتستان نے کورونا وائرس کے روک تھام اور بچاؤ کیلئے سنجیدہ اقدامات کئے ہیں۔ علمائے کرام کا کردار انتہائی قابل تحسین اور مثالی ہے۔ اہل تشیع اور اسماعیلی کمیونٹی نے مساجد اور جماعت خانے بند کردیئے ہیں اور اہل سنت نے بھی اپنے جمعے کے اجتماع کو انتہائی مختصرکردیا ہے۔ وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہاکہ مقامی سیاحوں پر مکمل پابندی عائد کی گئی ہے۔ 21 مارچ سے صوبے کے تجارتی مراکز کو بند کئے جارہے ہیں۔ صرف میڈیکل سٹورز اور اشیا خوردنوش کی دکانیں کھلی رہیں گی۔ وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہاکہ حکومت گلگت بلتستان نے کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے تقریبا 13 کروڑ روپے خرچ کئے ہیں۔ ضروری طبی آلات کی خریداری کی ہے اور وینٹی لیٹرز کی خریداری عمل میں لائی جارہی ہے۔ کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے صوبائی حکومت کی جانب سے وفاقی حکومت کو 60 کروڑ کے طبی آلات اور دیگر ضروری آلات کی خریداری کا ڈیمانڈ بھجوایا گیا ہے ابھی تک فراہمی نہیں کی گئی ہے۔
.
…………
گلگت، زیارات سے آنے والے زائرین، عمرے سے واپس آنے والے اور کورونا وائرس سے متاثرہ ممالک سے آنے والے تمام لوگ آئندہ48 گھنٹوں میں محکمہ صحت کے متعلقہ مراکز سے فوری رابطہ کریں۔رابطہ نہ کرنے کی صورت میں صوبائی حکومت کی جانب سے تشکیل کردہ سرولینس ٹیموں کی نشاندہی کی صورت میں متعلقہ افراد کیخلاف فوجداری قوانین کے تحت سزا اور جرمانے کئے جائیں گے،وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن
.
گلگت(چترال ٹائمز رپورٹ) وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے صوبے میں کورونا وائرس سے بچاؤ کے حوالے سے منعقدہ اعلی سطحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ زیارات سے آنے والے زائرین، عمرے سے واپس آنے والے اور کورونا وائرس سے متاثرہ ممالک سے آنے والے تمام لوگ آئندہ48 گھنٹوں میں محکمہ صحت کے متعلقہ مراکز سے فوری رابطہ کریں۔رابطہ نہ کرنے کی صورت میں صوبائی حکومت کی جانب سے تشکیل کردہ سرولینس ٹیموں کی نشاندہی کی صورت میں متعلقہ افراد کیخلاف فوجداری قوانین کے تحت سزا اور جرمانے کئے جائیں گے۔ وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ آئندہ48گھنٹوں میں بین الاضلاعی پبلک ٹرانسپورٹ پر بتدریج پابندی عائد کی جائے گی۔ بدقسمتی سے نگر میں پہلا لوکل ٹرانسمیشن کورونا کے مریض کی تشخیص ہوئی ہے۔ عوام ذمہ داری کا احساس کرے۔ غیر ضروری طور پر گھروں سے نکلنے سے اجتناب کرے۔ حکومت گلگت بلتستان کورونا وائرس سے بچاؤ اور روک تھام کیلئے سنجیدہ اقدامات کررہی ہے۔ عوام بھی سنجیدگی کا مظاہرہ کریں۔ وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے صوبائی وزیر قانون کو ہدایت کی ہے کہ 24 گھنٹوں میں چھوٹے مقدمات کے قیدیوں اور تین مہینے سے کم سزا باقی رہنے والے قیدیوں کے حوالے سے تفصیلات اور سفارشات تیار کرکے پیش کرے جس پر فیصلہ صوبائی ایمرجنسی کونسل کرے گی۔ وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے علمائے کرام کے کردار کو سراہتے ہوئے انہیں خراج تحسین پیش کیا جنہوں نے کورونا وائرس کی روک تھام اور اس سے بچاؤ کیلئے انتہائی مثبت کردار ادا کیا ہے۔ کورونا وائرس سے متعلق غیرمصدقہ اطلاعات اور خبروں کی اشاعت کی روک تھام کے حوالے سے صوبائی وزیر قانون اورنگزیب ایڈووکیٹ اور مشیر اطلاعات شمس میر کی سربراہی میں خصوصی کمیٹی تشکیل دی ہے کمیٹی میں سیکریٹری صحت، سیکریٹری اطلاعات اور کورونا وائرس سے متعلق فوکل پرسن ڈاکٹر شاہ زمان کو شامل کیا گیا ہے۔ صحافی حضرات کورونا وائرس سے متعلق اطلاعات او رخبروں کی تصدیق کیلئے متعلقہ کمیٹی کے سربراہ صوبائی وزیر قانون اورنگزیب ایڈووکیٹ اور مشیر اطلاعات شمس میر سے تصدیق کے بعد کورونا وائرس سے متعلق خبروں کی اشاعت کو یقینی بنائیں۔


شیئر کریں: