Chitral Times

Mar 5, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

اپرچترال میں‌ ناروا لوڈشیڈنگ کے خلاف 3فروری سے احتجاجی جلسے ہونگے.تحریک تحفظِ حقوقِ

Posted on
شیئر کریں:

بونی (نمائندہ چترال ٹائمز) تحریکِ تحفظِ حقوق اپر چترال کا ایک ہنگامی اجلاس زیرِ صدارت ذاکر محمد زخمیؔ جنرل سکرٹری تجار یونین بونی مقامی ہوٹل میں منعقد ہوا۔جس میں تحریک کے اراکین کے علاو بازار یونین اور ڈرئیور یونین کے نمائیندہ گان نے شرکت کی۔تلاوتِ کلامِ پاک سے میٹنگ کا آغاز ہوا۔ تحریک کے انفارمیشن سکرٹری اور نوجوان سیاسی قیادت پرویز لال نے نظامت کے فرائض انجام دی۔اجلاس میں شرکاء نے متفقہ طور پر ایک قرار داد منظور کی۔جس کے رو سے فروری کے پہلے ہفتے بونی میں اپر چترال کا مشترکہ احتجاجی جلسہ منعقد ہوگا۔
یہ کہ گزشتہ کئی دنوں سے اپر چترال میں بجلی کی شدید لوڈ شیڈنگ جاری ہے۔جو کہ سردی اور برف باری کے اس موسم میں لوگوں کے لیے عذاب سے کم نہیں۔ اس مسلے کو حل کرنے کے سلسلے تحریکِ حقوق اپر چترال ہر فوروم پر بھر پور انداز میں اواز اٹھائی جس میں ادارے،انتظامیہ اور منتخب نمائیندہ گان شامل ہیں۔ مگر نتیجہ بے سود رہااور عوام کی مشکلات میں روز بروز اضافہ ہوتا رہا۔ انجامَ کار تحریک باامرِ مجبوری اس فیصلہ پر مجبور ہوئی کہ اپنے جائز اور بنیادی حق کے لیے احتجاج کا راستہ اپنایا جائے۔ جب تک کہ مسلہ حل نہ ہو۔
اس سلسلے تحریک کے کارکناں کل تورکھو،موڑکھو،پرواک اور دوسرے علاقوں میں احتجاجی جلسہ منعقد کرینگے۔ اس کے بعد 3فروری 2020؁ کو بونی میں اپر چترال میں مشترکہ ایک بھر پور احتجاجی جلسہ منعقد ہوگا۔ اس جلسے تک اگر مسلہ حل نہیں ہوا تو اگلا لائحہ عمل مرتب کی جائیگی۔ اس میں دھرنے اور لانگ مارچ کا اپشن بھی زیر غور ائیگی۔
اس لیے تحریکِ حقوق اپر چترال متعلقہ ادارے، انتظامیہ اور منتخب نمائیندگاں سے عرض گزار ہے کہ مسلے کو اس مرحلے تک پہنچے سے قبل حل کریں بصورتِ دیگر عوام اپنے جائز اور بنیادی حق کے حصول کے خاطر سڑکوں پر انے پر مجبور ہوگی۔


شیئر کریں: