Chitral Times

Feb 6, 2023

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

خیبرپختونخوا میں اگلے تین سال میں 65 ہزار اساتذہ بھرتی کئے جائیں گے، اکبر ایوب خان

Posted on
شیئر کریں:

ضم شدہ اضلاع کے بچوں کو تعلیم کی سہولیات مہیا کرنا اولین ترجیحات ہیں، وزیر تعلیم خیبر پختونخوا
.
پشاور(چترا ل ٹائمزرپورٹ )‌خیبر پختونخوا کے وزیر برائے ابتدائی و ثانوی تعلیم اکبر ایوب خان نے کہا کہ ضم شدہ اضلاع کے بچوں کو تعلیم کی سہولیات مہیا کرنا اولین ترجیحات ہیں۔ حکومت خیبر پختونخوا ملکی اور بین الاقوامی ترقیاتی اداروں کی معاونت سے ضم شدہ اضلاع میں اعلی تعلیم کی سہولیات مہیا کرنے کے حوالے سے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات اٹھا رہی ہے ان خیالات کا اظہار وزیر تعلیم اکبر ایوب خان نے خیبرپختونخوا ہاؤس اسلام آباد میں یوکے ایڈ کی بین الاقوامی ادارہ برائے ترقیاتی امور (DFID) کے وفد کے ساتھ ملاقات میں کیا۔ اس موقع پر وزیر تعلیم نے کہا کہ ہر یونین کونسل کی سطح پر کلاس ششم سے کلاس بارہویں تک جدید سکول بنائے جانے کی تجویز ہے جس میں تمام تر سہولیات مہیا کی جائیں گے انہوں نے اس موقع پر یہ بھی بتایا کہ پورے صوبے میں پرائمری لیول تک کو-ایجوکیشن نظام لانے کی بھی تجویز ہے جس میں تمام تر خواتین اساتذہ کی تقرری کو یقینی بنایا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ اس نظام سے صوبے کے زیادہ تر بچے بغیر کسی رکاوٹ کے سکول میں داخلہ حاصل کرسکیں گے۔ اس موقع پر وفد نے مکمل تعاون کی یقین دہانی دلائی اور صوبے میں خواتین اور بچیوں کی تعلیم کے لیے خصوصی پروگرام متعارف کرانے کے عزم کا بھی اظہار کیا۔


شیئر کریں: