Chitral Times

Nov 26, 2020

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

صوبے کی مجموعی ترقی کیلئے دن رات خدمت کرنی ہے اور ہرصورت عوامی توقعات پر پورا اُترنا ہے

Posted on
شیئر کریں:

پشاور(چترال ٹائمزرپورٹ ) وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے کہا ہے کہ صوبے کی مجموعی ترقی کیلئے دن رات خدمت کرنی ہے اور ہر صورت عوامی توقعات پر پورا اُترنا ہے۔ اُنہوںنے کہا ہے کہ قبائلی اور پسماندہ اضلاع میں ترجیحی بنیادوں پر ترقی کے عمل کو آگے بڑھا رہے ہیں۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ قبائلی ضلع مہمند میں64 کلومیٹرطویل چوپان سے سرلڑا روڈ کی تعمیرجس پر تقریباً ایک ارب 18 کروڑ روپے لاگت آئے گی اور ضلع مہمند کے علاقہ غیبہ چوک سے گورسل بارڈرتک 40 کلومیٹر روڈ جس پر 68 کروڑ 71 لاکھ روپے لاگت آئے گی کا افتتاح اسی مہینے متوقع ہے ۔دونوں منصوبوں کی ٹینڈرنگ ہو چکی ہے ، جبکہ افتتاح کے بعد ان منصوبوں پر سول ورک کی شروعات جلد ازجلد ممکن بنائی جائے گی ۔ ان منصوبوں کی تکمیل سے ضلع مہمند کے عوام کو سفری سہولیات کی فراہمی میں ریلیف ملے گا۔ ضم شدہ قبائلی اضلاع میں مساجد کی سولرائزیشن ، سڑکوں کی تعمیر و بحالی و دیگر انفراسٹرکچر ، محکمہ تعلیم اور صحت کے اداروں میں انفراسٹرکچر اور سٹاف کی فراہمی ، یقینی بنائی جائے گی ۔ اُنہوںنے کہاکہ صوبے سمیت ضم شدہ قبائلی اضلاع میں سڑکوں کی تعمیر اور دیگر انفراسٹرکچر پر خصوصی توجہ دے رہے ہیں۔ان کا مزید کہنا تھا کہ اپر دیر کیلئے کئے گئے اعلانات کو عملی جامہ پہنایا جارہا ہے جبکہ تحصیل لرجم اور بے نظیر یونیورسٹی شرینگل کیلئے فائربریگیڈ ایمبولینسز کی فراہمی بھی یقینی بنائی جائے گی ۔ ان خیالا ت کا اظہار اُنہوںنے وزیراعلیٰ ہاﺅس میں صوبے کے ایم این اےز اور پارلیمانی سیکرٹریز سے ایک خصوصی ملاقات کے دوران کیا ہے ۔ ملاقات میں ایم این ملک انور تاج، قبائلی ضلع مہمند سے ایم این اے اور چیئرمین سٹینڈنگ کمیٹی سیفران ساجد خان مہمند ، ایم این اے خیال زمان ، ایم این اے صبغت اﷲ، ایم این اے صالح محمد، اقلیتی ایم این اے جمشید تھامس و دیگر موجود تھے ۔ ملاقات کے دوران صوبے کی دیر پا ترقی اور پارٹی اُمور پر تفصیلی گفتگو ہوئی ۔ وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کو پورے ملک میں عوام نے منتخب کیا ہے جبکہ صوبے کے عوام نے تحریک انصاف پر دوبارہ اعتماد کرکے صوبے کی تاریخ میںدوبارہ اس سیاسی جماعت کو منتخب کیا ہے ۔ ہم نے عوام کی توقعات کے مطابق آگے چلنا ہے اور صوبے بشمول قبائلی اضلاع کی تیز تر ترقی کیلئے ایک ٹیم کی شکل میں کام کرنا ہے ۔ وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ دیر اپر کے دورے کے موقع پر جتنے بھی اعلانا ت کئے ہیں اس کی تکمیل ہر صورت ممکن بنائی جائے گی ۔صوبے بھر میں ترقیاتی سکیموں کی تیز تر تکمیل کیلئے فنڈز کی فراہمی یقینی بنائی جارہی ہے ۔توانائی منصوبوں کے ساتھ ساتھ پورے صوبے میں صنعت کے منصوبوں کو فروغ دیا جارہا ہے تاکہ عوام کو روزگار کی فراہمی ممکن ہو سکے ۔ اُنہوں نے کہاکہ شڑمئی پاور پراجیکٹ دیر اپر پر متعلقہ حکام سے جلد پیشرفتی رپورٹ طلب کی جائے گی جس کے بعد اس منصوبے کی تکمیل کیلئے ممکن اقدامات اُٹھائے جائیں گے جبکہ براول کالج کو بھی جلد ازجلد فعال کیا جائے گا۔ اُنہوںنے واضح کیا کہ تمام ترقیاتی کام عوام اور منتخب نمائندوں کی مشاورت اور ترجیحات کے مطابق مکمل کئے جائیں گے ۔
…………………….
.
دریں‌اثنا وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے شمالی وزیرستان کی تحصیل شیوہ میں نادرا سنٹر کے قیام کیلئے بلڈنگ کی فراہمی یقینی بنانے کی ہدایت کی ہے جبکہ تحصیل شوال میں کُبل خیل قوم کے آئی ڈی پیز کی رجسٹریشن کا مسئلہ جلد حل کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ اُنہوںنے کہا ہے کہ تحصیل شیوہ میں سکولز، بی ایچ اوز اور دیگر سہولیات کی فراہمی کیلئے ترجیحی بنیادوں پر اقدامات اُٹھائے جائیں گے ۔ اُنہوں نے یقین دہانی کرائی ہے کہ شمالی وزیرستان بشمول تحصیل شیوہ کی محرومیوں کو دور کیا جائے گاجبکہ تمام دیرینہ مسائل قوم کی مشاورت اور توقعات کے مطابق حل کئے جائیں گے ۔ اُنہوںنے عندیہ دیا ہے کہ ٹل میرعلی روڈ پر تعمیراتی کام جلد شروع کیا جائے گا۔ وہ وزیراعلیٰ ہاﺅس پشاور میں وزیراعلیٰ کے مشیر برائے ضم شدہ اضلاع اجمل وزیر، صوبائی کابینہ میں نئے شامل شدہ صوبائی وزیر برائے ریلیف اینڈ ری ہبلٹیشن اقبال وزیر کی سربراہی میں شمالی وزیرستان کی تحصیل شیوہ سے آئے ہوئے ایک جرگے سے خطاب کررہے تھے ۔ جرگے کی قیادت تحصیل شیوہ کے روحانی پیشوا فقیر شیوہ کر رہے تھے ۔ جرگے کے رہنما نے اقبال وزیر کو کابینہ میں شامل کرنے پر وزیراعلیٰ کا شکریہ ادا کیا اور توقع کی کہ تحریک انصاف کی حکومت تحصیل شیوہ کے تمام دیرینہ مسائل کے حل کیلئے ممکن اقدامات اُٹھائے گی ۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ قبائلی اضلاع خصوصاً شمالی وزیرستان کے72 سالہ محرومیوں کا احساس ہے ، میں خود بھی جنگ زدہ علاقے سے ہوں اور آپ لوگوں کے دُکھ درد سے بخوبی واقف ہوں۔ ترقیاتی کاموں میں عوام اور منتخب نمائندوں کی رائے کو مقدم رکھا جائے گا۔ اُنہوںنے کہاکہ شمالی وزیرستان خصوصاً تحصیل شیوہ کی خوش قسمتی ہے کہ آپ کا منتخب نمائندہ کابینہ میں شامل ہو چکا ہے ۔ ہماری خواہش ہے کہ جتنے بھی پسماندہ اضلاع ترقی سے محروم رہے ہیں ان کو اُٹھایا جائے ۔ قبائلی اضلاع کے عوام کے تمام دیرینہ مسائل کو حل کریں گے ۔ نوجوانوں کو روزگار فراہم کریں گے جبکہ ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل کیلئے فنڈز ترجیحی بنیادوں پر فراہم کئے جائیں گے ۔ جرگے سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان کا ضم شدہ قبائلی اضلاع کے عوام کے ساتھ دلی ہمدردی ہے اور وزیراعظم خود ان پسماندہ اضلاع کی ترقی کیلئے خصوصی دلچسپی رکھتے ہیں۔ وزیراعظم پاکستان نے خصوصی طور پر کہا ہے کہ قبائلی اضلاع کی ترقی اور وہاں پر عوام کی محرومیوں کے ازالے کیلئے خصوصی اقدامات اُٹھائے جائیں ۔ عمران خان کا سپاہی ہوں، اُس کے وژن کے مطابق کام کروں گا۔ روحانی پیشوا فقیر شیوہ نے شمالی وزیرستان اور تحصیل شیوہ کے مسائل کے حل کیلئے صوبائی حکومت کے اقدامات پر وزیراعلیٰ کا شکریہ ادا کیا اور کہاکہ تحصیل شیوہ کے عوام حکومت کے ساتھ تمام تر تعاون کرے گی ۔بعدازاں وزیراعلیٰ نے تحفے کے طور پر روحانی پیشوا فقیر شیوہ کوروایتی رگ بھی پیش کی۔


شیئر کریں: