Chitral Times

Oct 18, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

ٹی ایچ کیوہسپتال بونی سے لیڈی ڈاکٹرکاتبادلہ،عوام سراپااحتجاج…تحریک حقوق

Posted on
شیئر کریں:

بونی (چترال ٹائمزرپورٹ )‌ تحریک حقوق عوام اپر چترال کی طرف سے جاری ایک پریس ریلیز میں‌کہا گیا ہے کہ باخبر ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ٹی۔ایچ۔کیو ہسپتال بونی اپر چترال کے لیڈی ڈاکٹر ذہرہ اسیر کا تبادلہ دروش ہسپتال کردیا گیا ہے۔ جبکہ ٹی۔ایچ کیو ہسپتال بونی جسے اب ڈی۔ایچ۔کیو ہسپتال کا درجہ حاصل ہے میں پہلے سے ہی ڈاکٹروں کی شدید کمی ہے اور تحریک حقوق عوام اپر چترال نے اس سلسلے میں متعلقہ حکام سے بارہا ڈاکٹروں کی کمی کوپورا کرنے کیلئے گزارش کرچکی ہے اور قرارداد بھی متعلقہ اداروں تک پہنچ چکے ہیں جس میں میل ڈاکٹروں کے ساتھ ساتھ کم از کم ایک اور لیڈی ڈاکٹر کی تعیناتی شامل ہے۔ کیونکہ پورے اپر چترال کے مریضوں کیلئے اس ہسپتال میں ایک ہی لیڈی ڈاکٹرہے۔
.
متعلقہ حکام اپر چترال کے مسئلے کو مدنظر رکھتے ہوئے مذید لیڈی ڈاکٹر تعینات کرنے کے بجائے موجودہ لیڈی ڈاکٹر کا بھی تبادلہ کردیا ہے۔ عوام اپر چترال اس زیادتی کو کسی صورت قبول نہیں کریں گے۔ ڈاکٹروں کی کمی اور دوسرے مسائل کے ساتھ ساتھ اس شدید سردی کے موسم میں وارڈ میں سردی سے بچنے کیلئے ہیٹر یا آگ جلانے کی لکڑی کا تاحال کوئی انتظام نہیں ہے اور داخل مریضوں کو خود سے بندوبست کرنا پڑتاہے۔ اس سلسلے میں تحریک حقوق عوام اپر چترال نے ایک ہنگامی میٹنگ کا انعقاد کیا۔ میٹنگ میں لیڈی ڈاکٹر کے تبادلے کو شدید الفاظ میں مزمت کرتے ہوئے مسترد کیا گیا اور فیصلہ کیا گیا کہ موجودہ لیڈی ڈاکٹر کو کسی صورت یہاں سے نہیں جانے دیا جائیگا۔ لہذا لیڈی ڈاکٹر کے تبادلے کو فوراً منسوخ کیا جائے اورایک لیڈی ڈاکٹر مزید بھیجا جائے۔

پریس ریلیز میں‌ مزید کہا گیا ہے کہ چونکہ اپر چترال اب ایک الگ ضلع ہے اور ٹی۔ایچ۔کیو ہسپتال بونی کو ڈی۔ایچ۔کیو ہسپتال کا درجہ دیا جا چکا ہے لہذا مزید تاخیر کے بغیر ڈی۔ایچ۔او تعینات کیا جائے۔ اور ہسپتال میں ڈی۔ایچ۔کیو ہسپتال کے حساب سے ڈاکٹرز، پیرامیڈیکل اسٹاف اور دوسرے ضروری سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے بصورت دیگر پورے اپر چترال سے تحریک حقوق عوام اپر چترال کے پلیٹ فارم سے عنقریب شدید احتجاجی مظاہرے کئے جائیں گے اور کسی بھی ناخوشگوار واقعے کی زمہ داری متعلقہ اداروں پر عائد ہوگی۔


شیئر کریں: