Chitral Times

Nov 28, 2021

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

تجار یونین بونی کی تقریب حلف برداری، ایم این اے اورایم پی اے کی شرکت

Posted on
شیئر کریں:

بونی (چترال ٹائمزرپورٹ) تجار یونین بونی اپر چترال کے حلف برداری کی تقریب بونی میں منعقد ہوئی۔ایم۔این۔اے چترال مولانا عبدالاکبر چترالی اور ایم۔پی۔اے چترال ہدایت الرحمٰن تجار یونین بونی کی دعوت پر حلف برداری کی تقریب میں شرکت کی اور خصوصی طور پر تجار یونین چترال کے صدر شبیر احمد اپنے کابینہ سیمت شرکت کر کے حلف برداری کی تقریب کو رونق بخشی۔

تجار یونین بونی ایک مہینے پہلے انتخابات جیت کر منتخب ہوئی تھی۔ پروگرام میں ایم۔این۔اے اور ایم۔پی۔اے کے علاوہ تحصیل ناظم قاری محمد یوسف،تحصیل نائب ناظم فخرالدین، ضلع کونسلراور امیر جماعت اسلامی اپر چترال مولانا جاوید احمد، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر مستوج معظم خان، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر موڑکھو/ تورکھو مکرم خان، تحصیلدار مستوج رب نواز کے علاوہ علاقے کے معززین کثیر تعداد میں شرکت کی۔

تقریب کے ابتدائی نظامت کے فرائض سابق جنرل سکرٹری تجار یونین بونی نوروز علیشاہ نے انجام دی۔ تلاوت کلام مجید سے تقریب کا آغاز ہوا زید حجازی نے تلاوتِ کلام پاک پیش کرنے کی سعادت حاصل کی پھر نعت شریف پیش کیے گئے۔

عبوری صدر تجار یونین بونی ریٹائرڈ صوبیدار رحیم خان اپنے خطاب میں بازار یونین بونی اور اس کی اہمیت پرتفصیلی روشنی ڈالی اور دورانِ انتخابات پر سکون ماحول مہیا کرنے پر تجار برادری اور انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا اور تجار یونین بونی کو فغال کردار ادا کرنے کا مشوارہ دیا۔ نوروز علی شاہ ابتدائی کلمات ادا کرتے ہوئے تجار یونین بونی کی تین سالہ کارکردگی رپورٹ تفصیل سے پیش کی۔

اس کے بعد ایم۔این۔اے چترال مولانا عبد الاکبر چترالی نو منتخب کابینہ سے حلف لیا۔ کابینہ حلف اٹھانے کے بعد نو منتخب جنرل سکرٹری نظامت کے فرئض سنبھالتے ہوئے حاضرین کا اور تجار برادری کا شکریہ ادا کیا کہ وہ ان کے کابینہ پر اعتماد کرکے انہیں اس قابل سمجھا کہ وہ تجار برادری کی نمائیندگی کر سکے۔ اس کے بعد سپاسنامہ پیش کرتے ہوئے بازار بونی کے فوری حل طلب مسائل ایم۔پی۔اے چترال کے سامنے رکھدی۔ نو منتخب صدر بازار بونی محمد شفیع اپنے خطاب میں نہ صرف بازار کے مسائل بلکہ اپر چترال ہیڈ کوارٹر بونی میں درپیش عوامی مسائل سے بھی عوامی نمائیندوں کو باخبر کیے جس سے عوامی پریشان حال ہیں۔ ان میں خاص طور پر روڈوں کے مسلے اور تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال بونی میں ڈاکٹروں کی کمی اور دیگر مسائل کے بارے عوامی نمائیندوں کی توجہ مبذول کرائی۔

تقریب میں موجود نوجوان قیادت پرویز لال مختصراً نو منتخب کابینہ کو مبارکباد دی اور علاقے کو درپیش مختلف مسائل حل کرنے کے سلسلے ایم۔این۔اے اور ایم۔پی۔اے کو متوجہ کیا۔ مختار احمد سنگینؔ بازار میں ہوٹل،سبزی فروش،اور دیگر اشاء خور دونوش کے ساتھ متصل پولوٹری کے دوکانوں کے بارے انتہائی تحفظات کا ظہار کرتے ہوئے کہا کہ اشاء خوردونوش، ہوٹل، بیکری وغیرہ کے آس پاس پولڑی کی دوکان ہونا سمجھ سے بالاتر ہے اس سے صفائی کے نظام کو کس طرح برقرار رکھا جا سکتا ہے۔ اور یہ انسانی صحت کے لیے ضرر رسان عمل ہے۔ انتظامیہ اور بازار یونین کو چاہیے کہ ان کے لیے جگہ مختص کریں تا کہ اشاء خورد و نوش پر ان کی منفی اثرات مرتب نہ ہو۔یہ انسانی صحت کا مسلہ ہے اسے اسان نہ لیا جائے۔

تحصیل ناظم مولانا محمد یوسف اپنے خطاب میں اپنے دورِ اقتدار میں کیے ہوئے خدمات سے حا ضرین کو اگاہ کیا اور کہا کہ نا مساعد حالات اور علاقے میں قدرتی افات جیسے سیلاب اور زلزلہ کے باعث وہ خدمات سرانجام دینے سے قاصر رہا جو ان کے دل میں تھی پھر بھی محدود وسائل کے باوجود حتہ المقدور کوشش کی کہ عوام کی کچھ خدمت کرسکے۔ اس میں جو کوتاہیاں رہ گئے وہ دانستہ ہر گز نہیں البتہ مجبوریاں ان کے راہ میں وسائل کے شکل میں حائل ہوئے۔

صدر تجار یونین بازار چترال شبیر احمد اپنے خطاب میں نومتخب کابینہ کو مبارک باد پیش کرتے ہوئے یقین ظاہر کیا کہ نو منتخب کابینہ بونی بازار اپر چترال اپنے بہترین صلاحتیں بروئے کار لا کر نہ صرف بازار کے مسائل حل کرینگے بلکہ تجار یونین کو ایک فلاحی ادارہ بنانے میں بھر پور کردار ادا کرینگے۔انھوں نے اپنی طرف سے بونی بازار کے لیے دو پبلک واش روم کا اغلان کیااور بازار یونین اپر چترال کے بہتر مفاد میں چندتجاویز بھی دی۔۔

تقریب کے مہمانِ خصوصی ایم۔پی۔اے چترال مولانا ہدیت الرحمٰن نے اپنے خطاب میں بازار یونین بونی کو درپیش مسائل حل کرنے کی یقن دہانی کرائی۔ اور علاقے کے لیے اپنے جد جہد باتفصیل بیان کی۔انھوں نے کہا کہ ایسا نہیں کہ ہم صوبائی اسمبلی میں بیٹھ کر اپ کے حقوق سے غافل ہیں بلکہ ہم اپنی بھرپور صلاحیتیں بروئے کار لا کر جد و جہد میں مصروف ہیں حکومت کو اس وقت تک بہت سے چلینئجز درپیش تھے ا ب مسائل انشاء اللہ حل ہونگے اور بہت جلد چترال میں ترقیاتی کام زورو شور سے شروع ہونگے۔

صدرِ تقریب ایم۔این۔اے چترال مولانا عبد الاکبر چترالی اپنے ایک سالہ کارکردگی اور جدو جہد تفصیل سے بیان کی۔ بجلی کے سلسلے جد و جہد اور روڈوں کے سلسلے جو کچھ انھوں نے کی ہے وہ مفصل انداز میں بیان کی۔ انھوں نے کہا کہ مجھے کوئی درخواست دے یا نہ دے مجھے چترال اور اپر چترال کے مسائل کا بخوبی علم ہے۔ اور بتدریج ہم عوامی مسائل حل کرتے رہینگے۔عوام نے جو اعتماد ہمیں دی ہے ہم بھی آپ کے اعتماد پر پور اترینگے۔انھوں نے اپر چترال میں روڈوں کے سلسلے جو منصوبہ بندی کی ہے اس سے بھی حاضرین کو اگاہ کیا۔
Tujjar union Booni intikhabat half bardari 3

Tujjar union Booni intikhabat half bardari 4

Tujjar union Booni intikhabat half bardari 5

Tujjar union Booni intikhabat half bardari 6

Tujjar union Booni intikhabat half bardari 7

Tujjar union Booni intikhabat half bardari 8

Tujjar union Booni intikhabat half bardari 9


شیئر کریں: