Chitral Times

Aug 23, 2019

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

  • گلگت چترال روڈ سی پیک میں‌شامل ہے. جس پر تین مہینوں‌کے اندر کام شروع ہوگا..وزیراعلیٰ

    July 7, 2019 at 11:58 pm

    وزیر اعلیٰ محمود خان نے شندور پولو فیسٹیول کا افتتاح کردیا

    شندور پولو فیسٹیول ہماری ثقافت کا حصہ بن چکا ہے ، تاریخی پولو کھیل کے فروغ کیلئے ترجیحی بنیادوں پر اقدامات کرینگے ،محمود خان

    شندور پولو فیسٹیول میں کثیر تعداد میں غیر ملکی سیاحوں کی آمد خو ش آئند ہے ، خیبرپختونخوا سیاحوں کیلئے بہترین صوبہ ہے ، عاطف خان

    پولو فیسٹیول کا فائنل 9 جولائی کو کھیلا جائے گا ، سیاحوں کیلئے شندور میں بہترین انتظامات کئے گئے ہیں ،ایم ڈی جنید خان

    شندور(نمائندہ چترال ٹائمز) وزیراعلی خیبرپختونخوا محمود خان نے آج اتوار کے روزشندور پولو فیسٹیول میں شرکت کی اور فیسٹیول کا باقاعدہ افتتاح کیا ہے ۔ یاد رہے کہ تین روزہ شندور پولو فیسٹیول کا آج پہلا دن تھا جبکہ شندو ر پولو فیسٹیول کی اختتامی تقریب 9 جولائی کو منعقد ہو گی۔ وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے میڈیا افتخار درانی،سینئر صوبائی وزیر برائے سیاحت وثقافت محمد عاطف خان، صوبائی وزیراطلاعات شوکت یوسفزئی، آئی جی ایف سی اور پولیس کے دیگر اعلیٰ حکام بھی وزیراعلیٰ کے ہمراہ تھے ۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ نے صحافیوں سے گفتگو بھی کی۔ اُنہوں نے تمام انتظامات اور سیاحوں کو مہیا کی جانے والی سہولیات کا جائزہ لیا اور اس پر اطمینان کا اظہار کیا ہے ۔ اُنہوں نے کہا ہے کہ ٹوارزم کارپوریشن خیبرپختونخو اکے تعاون اور ضلعی انتظامیہ چترال کے زیر اہتمام سطح سمند ر سے بلند ترین پولو گراﺅنڈ میں منعقد ہ شندور پولو فیسٹیول کا افتتاح اورسیاحوں کیلئے تمام سہولیات مہیا کرنا صوبائی حکومت کیلئے باعث فخر ہے ۔وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ تین روزہ پولو فیسٹیول میں کلچرل نائٹس سمیت علاقائی ہنر مندی اور علاقائی ثقافت کو فروغ دیا جائے گا۔ گفتگو کے دوران اُنہوں نے کہاکہ چترال سکاوٹس ، چترال اور گلگت بلتستان کی پولو ٹیموں کے کھلاڑیوں اور ملک بھر سے آئے ہوئے سیاحوں کے ساتھ ساتھ میڈیا اور صحافیوں کا بھی مشکور ہوں جنہوں نے شندور پولو فیسٹیول دیکھنے کیلئے طویل اور دشوار گزار سفر طے کئے ہیں ا ور فیسٹیول کی خوبصورتی کو دوگنا کیا ہے ۔ اُنہوں نے کہا ہے کہ شندوردُنیا کا بلند ترین پولو گراﺅنڈ ہے۔ یہ کھیل اپنی نوعیت کا ایک منفرد کھیل ہے ۔ اس وجہ سے ساری دُنیا سے کھیلوں کے بالعموم اور پولو کے بالخصوص دلدادہ افراد ان دلچسپ مقابلوں سے لطف اندوز ہونے کیلئے ہر سال شندور کا رخ کرتے ہیں جس کے باعث ان مقامات پر نہ صرف سیاحت ترقی پاتی ہے بلکہ مقامی آبادی کو مختلف طریقوں سے معاشی فائدہ بھی حاصل ہو تا ہے ۔ اُنہوں نے واضح کیا ہے کہ اس طرح کے فیسٹیولز سے دُنیا میں نہ صرف خیبر پختونخوا بلکہ پورے پاکستان کی مثبت تصویرکو فروغ ملتا ہے۔ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ پاکستان تحریک انصاف کی صوبائی حکومت نے گزشتہ دور میں صوبے میں حکومت قائم کرنے کے ساتھ سیاحت کی ترقی اور کھیلوں کے فروغ کیلئے ترجیحی بنیادوں پر کام کیا ہے جبکہ موجودہ صوبائی حکومت بھی سیاحت کے فروغ کیلئے بھر پور جدوجہد کر رہی ہے ۔ اُنہوں نے کہا ہے کہ سیاحت، ثقافت اور کھیلوں کے فروغ کیلئے ترجیحی بنیادوں پر اقدامات اُٹھا رہے ہیں کیونکہ وزیراعظم عمران خان کا وژن ہے کہ ملک میں سیاحت کو اولین ترجیح دی جائے ۔ اسی تناظر میں صوبائی حکومت نے تین روزہ شاندار پولو فیسٹیول کیلئے تمام ممکن وسائل فراہم کئے ہیں۔ وزیراعلیٰ کا مزید کہنا تھا کہ پولو کھیل تاریخی اہمیت کا حامل ہے جو کہ اب ہماری ثقافت کا حصہ بن چکا ہے جبکہ پولو فیسٹیول میں چترال اور گلگت بلتستان و دیگر مختلف ٹیمیں پولو کھیل میں حصہ لے رہی ہیں جس کی وجہ سے شندور پولو سیاحوں کی آمد کا مرکز بن رہا ہے۔ اُنہوں نے کہاکہ صوبائی حکومت اسی طرح ہر سال شندور پولو فیسٹیول کو جوش و خروش سے منائے گی اور بین الاقوامی سطح پر اس کو پذیرائی دلائے گی تاکہ زیادہ سے زیادہ سیاح شندور پولو فیسٹیول میں شرکت کریں ۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ نے جیتنے والی مختلف ٹیموں میں انعامات بھی تقسیم کئے ۔

    اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ‌نے کہا کہ 32آرب روپے سے گلگت چترال تک کا روڈ سی پیک میں‌شامل ہے . جس پر آئندہ تین مہینوں‌کے اندر کام شروع ہوگا.
    وزیراعلیٰ کا مزید کہنا تھا کہ ٹورازم کارپوریشن خیبرپختونخوا کے تعاون اور ضلعی انتظامیہ چترال کے زیراہتمام سطح سمندرسے بلند ترین پولو گراءونڈ پر منعقدہ شندور پولو فیسٹیول کا انعقاد اور سیاحوں کیلئے تمام سہولیات مہیا کرنا صوبائی حکومت کیلئے باعث فخر ہے ، انہوں نے کہاکہ تین روزہ فیسٹیول میں چترال اور گلگت بلتستان کی علاقائی ثقافت سمیت مقامی ہنر مندوں کے ہنر کو فروغ دیا جائے گا ، انہوں نے کہاکہ چترال اور گلگت بلتستان کے پولو کھلاڑیوں اور ملک بھر سے آئے ہوئے سیاحوں اور میڈیاکا مشکورہوں جنہوں نے شندو رپولو فیسٹیول دیکھنے کیلئے طویل اور دشوار گزار سفر طے کر کے فیسٹیول کی خوبصورتی کو دگنا کیا ہے ، اس موقع پر سینئر صوبائی وزیر عاطف خان کا کہنا تھا کہ امسال شندور پولو فیسٹیول کے انعقاد کیلئے بہترین اقدامات کئے گئے ہیں جبکہ غیر ملکی سیاحوں کی کثیر تعداد نے شندور کا رخ کیا ہے ، صوبے میں بڑھتے ہوئے سیاحوں کی آمد اور اس بات کا ثبوت ہے کہ یہاں سیاحت کو فروغ ملا ہے اور یہ ہماری کامیابی ہے ، منیجنگ ڈائریکٹر ٹورازم کاپورپشن جنید خان کا کہنا تھا کہ چترال میں پولو کھیل کو مکمل سپورٹ کیا جائے گا ، چترال میں گولین گول کو سیاحتی مقام کے طور پر اجاگر کرنے کے علاوہ دیگر نئے سیاحتی مقامات بھی اجاگر کئے جا رہے ہیں کیمپنگ پاڈز کی جلد چترال میں بھی تنصیب کی جائے گی ،


  • error: Content is protected !!