Chitral Times

Jan 23, 2022

ﺗﻔﺼﻴﻼﺕ

چترالی نوجوان کا مبینہ قتل،پشاور پریس کلب کے سامنےچترالی باشندوں کا زبردست احتجاجی مظاہرہ

شیئر کریں:

پشاور( چترال ٹائمز رپورٹ )چترال سے تعلق رکھنے والے سکول ٹیچر محراب نبی ولد غلام نبی ساکن کشم کے مبینہ قتل کیخلاف پشاور پریس کلب کے سامنے ممبر قومی اسمبلی مولانا عبد الاکبر چترالی، صادق امین صدر چترال یونین، پی ٹی آئی کے رحمت غازی ودیگر کے ہمراہ چترالی باشندوں نے پشاور میں زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا ۔واضح رہے کہ محراب نبی تقریباً چار سال سے مقامی پبلک سکول دلہ زاک روڈ پشاور میں بحیثیت ٹیچر تعینات تھے گزشتہ شب موبائل فون اٹینڈ نہ کرنے پر جب کمرہ کھولنے کی کوشش کی گئی تو اندر سے دروازہ بند تھا جب واش روم کے دروازے سے اندردیکھا گیا تو مذکورہ ٹیچر مردہ حالت میں پایا گیا میت کو پہلے تھانہ پہاڑی پورہ منتقل کیا گیا اس کے بعد پوسٹ مارٹم کرایا گیا پوسٹ مارٹم کے فوری بعد ان کے لواحقین اور رشتہ داروں نے میت کو پریس کلب پشاور کے سامنے سڑک پر رکھ کر شدید احتجاج کیا۔ زائع کے مطابق متوفی کے جسم پر تشدد کے نشان موجود تھے۔ مظاہرین سے ممبر قومی اسمبلی مولانا عبد الاکبر چترالی، صادق امین رحمت غازی ودیگر نے خطاب کیا اور صوبائی حکومت سے فوری غیر جانبدارانہ تحقیقات کرنے اور مجرموں کو کیفر کردار تک پہنچانے کا مطالبہ کیا بعد ازاں میت کو اس کے آبائی گاؤں کشم چترال روانہ کر دیا گیا۔

محراب نبی کی فائل فوٹو
chitrali killed in peshawar


شیئر کریں: